وجئے ملیا اصل قرض ادا کرنے تیار پیشکش قبول کرنے بینکوں سے مفرور،اقتصادی مجرم کی درخواست

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 6th December 2018, 11:41 AM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،6؍دسمبر (ایس او نیوز؍یو این آئی) ملک کے مفرور اقتصادی مجرم اور شراب کے کاروباری وجئے ملیا نے کہا ہے کہ وہ بینکوں کا سو فیصد قرض ادا کرنے کیلئے تیار ہیں۔ملیا نے ٹوئٹ کرکے آج کہا کہ وہ بینکوں سے لئے گئے قرض کی سو فیصد اصل رقم لوٹانے کے لئے تیار ہیں، لیکن وہ سود نہیں چکا سکتے ہیں۔

ملیا نے کہا کہ سیاستدان اور میڈیا مجھے مسلسل پبلک سیکٹرکے بینکوں سے پیسہ لے کر بھاگنے والے مجرم کے طور پر پیش کر رہے ہیں۔ یہ پوری طرح جھوٹ ہے ۔ مجھے نہیں پتہ کہ کرناٹک ہائی کورٹ کے سامنے قرض کے تصفیہ کی تجویز پر منصفانہ طور پر کارروائی کیوں نہیں کی گئی؟ملیا نے کہاکہ کنگ فشر ایئر لائنز کے اقتصادی بحران کا بڑا سبب ہوا بازی ایندھن ( ایویئیشن فیول ۔اے ٹی ایف) کی زیادہ قیمتیں ہیں۔ کنگ فشر ایک شاندار ایئر لائنز تھی جس نے سب سے زیادہ140ڈالر فی بیرل کے حساب سے خام تیل کی خریداری کی تھی۔ اسی وجہ سے خسارہ بڑھ گیا اور بینکوں کا پیسہ ایئر لائنز میں لگ گیا۔ میں نے انہیں اصل رقم کا سو فیصد ادا کرنے کی پیشکش کی ہے۔

انہوں نے کہاکہ گزشتہ تین دہائی سے ہندوستان کے سب سے زیادہ شراب تیار کرنے والے گروپ کے آپریٹر کے طور پر ہم نے ملک کی ریونیو میں ہزاروں کروڑ کا تعاون کیا ہے ۔ کنگ فشر ایئر لائنز نے بھی آمدنی میں بڑا کردار ادا کیا ہے ۔ سب سے اچھے ایئر لائنز کو کھونے کا دکھ ہے ، لیکن اب بھی بینکوں کا پیسہ لوٹانے کیلئے میں نے تجویز پیش کی ہے ، تاکہ بینکوں کو نقصان نہ اٹھانا پڑے۔ انہوں نے کہا کہ انہوں نے اپنی حوالگی کے فیصلہ کے بارے میں میڈیا کے فوری تجزیے دیکھے ہیں۔ وہ ایک الگ مسئلہ ہے اور اس بارے میں قانونی کارروائی کی جائے گی۔ اہم مسئلہ عوام کا پیسہ ہے اور وہ سو فیصد پیسہ لوٹانے کی پیشکش کر رہے ہیں۔ انہوں نے بینکوں اور حکومت سے خاکسارانہ درخواست کی ہے کہ اس پیسے کو لے لیں۔قابل ذکر ہے کہ وجئے ملیاپر بینکوں کے9 ہزار کروڑ روپے سے زیادہ کا قرض ہے اور وہ ملک چھوڑ کر لندن میں قیام پذیر ہیں ۔ دہلی کی ایک عدالت نے ملیا کو بھگوڑا اقتصادی مجرم قرار دیا ہوا ہے ۔

غور طلب ہے کہ وجئے ملیا کا یہ ٹوئٹ کہ وہ اصل قرض ادا کردیں گے ۔اگستا ویسٹ لینڈ معاملے میں مبینہ بچولیے کرسچین مشیل کے دوبئی سے ہندوستان حوالے کئے جانے کے کچھ ہی گھنٹے بعد آیا ہے ۔مرکزی حکومت وجئے ملیا، نیرومودی اور مہیل چوکسی جیسے اقتصادی مجرموں کو بھی ہندوستانی حکومت واپس لانے کی باقاعدہ کوشش میں ہے ۔ ارون جیٹلی کا کہنا ہے کہ مشیل کی طرح ان تینوں کو بھی جلد ہندوستان لایا جائے گا۔ وجئے ملیا نے بینکوں سے ان کی پیشکش قبول کرنے کی درخواست کرتے ہوئے دہرایا ہے کہ بینکوں سے اتنا زیادہ قرض کنگ فشر ایرلائنس کو چلانے کے لئے لیا گیا حالانکہ یہ کمپنی اب بند ہوچکی ہے ۔

ایک نظر اس پر بھی

مودی کا زوال یا راہل کا عروج ؟ فیصلہ منگل کو

ومبر اور دسمبر میں کئی مرحلوں میں5 ریاستوں کے اسمبلی انتخابات کے لئے ووٹ ڈالنے کا عمل پورا ہو چکا ہے۔ ان میں سے مدھیہ پردیش، راجستھان اور چھتیس گڑھ میں بی جے پی اقتدار میں ہے۔

ہندوستان کو آگ میں جھونکنے کی کوششیں تیز رام لیلا میدان میں دھرم سبھا کا انعقاد،مندر بنانے کا کیا عزم، بھگوا کپڑوں میں ملبوس رام بھکتوں کا جم غفیر

ایودھیا میں دھرم سبھا کے بعد دہلی کے رام لیلا میدان میں دھرم سبھا کے انعقاد سے سنگھ اور اس کی ذیلی تنظیموں نے واضح کر دیا ہے کہ آئندہ سال ہونے والے عام انتخابات سے پہلے رام مندر تعمیر کے مدے کو اتنا بڑا کر کے پیش کیا جائے کہ رافیل، نوٹ بندی، جی ایس ٹی، بے روزگاری، کسانوں کے مسائل ...

ڈی ایم کے سربراہ اسٹالن سونیا اور راہل سے ملے

دہلی میں اپوزیشن پارٹیوں کے اجلاس سے ایک دن پہلے ڈی ایم صدر ایم کے اسٹالن نے کانگریس صدر راہل گاندھی اور یو پی اے کی صدر سونیا گاندھی سے اتوار کو ملاقات کی اور کئی مسائل پر تبادلہ خیال کیا۔