اُترپردیش کے وزیراعلیٰ یوگی کی ڈیڈ لائن ختم، صرف 19وزراء نے دی جائیداد کی تفصیلات

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 20th April 2017, 6:19 AM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

نئی دہلی،19؍اپریل (ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا ) 19؍مارچ کو حلف لیتے ہی وزیراعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ نے اپنے تمام وزراء کو اپنے آفس میں چائے پر مدعوکیا تھا۔اسی بہانے انہوں نے تمام وزراء سے ملاقات کی اور ان کے ساتھ چائے پر چرچا کی تھی۔اسی ملاقات کے دوران یوگی نے تمام وزراء کو پندرہ دنوں میں اپنی جائیداد کی تفصیلات دینے کو کہا تھا، لیکن یہ میعاد 5 ؍اپریل کو ختم ہو گئی۔آپ کو جان کر تعجب ہوگا ، کہ 5/اپریل تک صرف 13 وزراء نے ہی اپنی جائیداد کی معلومات دی ۔

یوپی کے وزیر خزانہ راجیش اگروال کے پاس سب کو اپنی جائیداد کی تفصیلات جمع کرانی تھی ۔یوگی کے وزراء کس طرح اپنی جائیداد کی تفصیلات دیں؟ اس کے لیے وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ نے ایک فارم بھی بنوایا تھا، جس میں سب کو یہ بتانا ہے کہ وزیر بننے سے پہلے ان کی کمائی کا ذریعہ کیا تھا۔کسی کمپنی سے ان کا کوئی لینادینا تو نہیں ہے؟ کس سال میں وزیر موصوف نے کون سی جائیداد خریدی؟میعاد ختم ہونے کے بعد جب صرف 13وزراء نے ہی یوگی کی بات مانی، تو پھر وزیر اعلی نے پھر سے 13 ؍اپریل کو ایک اور خط لکھا اور یوگی نے اس بار 16 ؍اپریل تک کی ڈیڈلائن دی ۔

مگر افسوس دوسرے خط کے بعد اب صرف6 مزید  وزراء نے ہی اپنی جائیداد کی تفصیلات فراہم کیہے، یعنی مجموعی طورپر ابھی تک صرف 19وزراء نے ہی اپنی جائیداد کی تفصیلات مہیاکرائی ہے۔ دیکھنا یہ ہے کہ دوسری بار دی گئی مدت ختم ہونے کے بعد اب وزیراعلیٰ یوگی جائیداد کی تفصیلات مہیا نہ کرانے والے وزراء کے ساتھ کس طرح پیش آتے ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

اگرپاکستانی الیکشن میں مداخلت کررہاہے تواین آئی اے کیاکررہی ہے، اسدالدین اویسی کاسوال ،بنکاک میں پاکستان کے ساتھ مجوزہ میٹنگ کی تفصیلات بتائیں مودی

حیدرآبادکے رکن پارلیمنٹ و صدر کل ہند مجلس اتحاد المسلمین بیرسڑاسد الدین اویسی نے کہا ہے کہ گجرات کے انتخابی جلسوں میں جس طرح کی زبان وزیراعظم نریندر مودی استعمال کر رہے ہیں، اس پر ان کو کوئی تعجب نہیں ہوا ہے۔

خبطی ’ وکاس‘ کا تازہ ترین سروے ، مہنگائی آسمان پر ،اشیاء خوردنی کی قیمتوں میں اضافہ ، نومبر میں شرح 15 ماہ بلند سطح پر

سبزیاں، پھل او ر انڈوں کی قیمتوں میں بے تحاشہ اضافہ کی بری خبر ہے ۔ دن رات ٹی وی ڈیبیٹ نے عوام کو اس قدر غافل اور نکما کر دیا ہے کہ آج ہونے والے ہندو۔ مسلم موضوع پر پارٹی کے بکواس ترجمان کی ہنگامہ آرائی کو تو یاد رکھتے ہیں ؛

منی شنکر ایر کا بیان غلط:لیکن مودی جی نے جو منموہن سنگھ کے بارے میں کہا وہ بھی ٹھیک نہیں:راہل گاندھی

گجرات اسمبلی انتخابی مہم کے آخری دن پریس کانفرنس کرکے کانگریس صدر راہل گاندھی نے ایک بار پھر پی ایم مودی کو نشانے پر لیا ہے۔انہوں نے صاف کہا کہ مودی جی پر منی شنکر ایر کا تبصرہ بالکل غلط تھا آخر وہ ہمارے وزیر اعظم ہیں۔

جموں و کشمیر میں برفانی تودے میں دفن ہوئے پانچ فوجی جوان، تلاشی مہم شروع 

جموں اور کشمیر میں ہوئی سموار کی شب ہوئی تازہ برفباری میں گریج خطہ سے دو جوان اور کپواڑہ ،12؍دسمبر (ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا )کے نیل گاؤں سے تین فوجی جوان کے لا پتہ ہونے کی دردناک خبر مل رہی ہے ۔

’’بھگوا غنڈہ گردی ملک کی سلامتی کے لیے سب سے بڑا خطرہ ‘‘: آل انڈیا امامس کونسل

ہندوتواوادی اور فسطائی غنڈے نے پھر سے ملک کو شرمسار کر دیا۔ ایک نہتے اور بے قصور مزدور افراز الاسلام کو مزدوری دینے کے بہانے بلاکر پھاوڑے سے قتل کر دینا اور پھر پٹرول چھڑک کر آگ لگا کر جلا دینا ملک کے لیے ایک انتہائی شرمناک معاملہ ہے۔