اتر پردیش:وارانسی میں یوگی اورامت شاہ کے پروگرام میں لگی سیاہ کپڑے پرپابندی 

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 20th January 2018, 9:31 PM | ملکی خبریں |

کالی جیکٹ پہنے صحافیوں کوبھی کونہیں ملی انٹری، مظاہرین کوروکنے کے لیے اقدام،30طلبہ گرفتار
وارانسی،20؍جنوری (ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا)اتر پردیش کے وزیراعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ اور بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی)کے قومی صدر امت شاہ کے پروگرام میں آج کالا کپڑے پہنے ہوئے لوگوں کو اندر نہیں جانے دینے کا معاملہ سامنے آیا ہے۔سوشل میڈیا پر ایک ویڈیو بھی تیزی سے وائرل ہورہی ہے۔ کہا جا رہا ہے کہ احتجاجی مظاہرہ کے ڈر کے سبب یہ فیصلہ لیا گیا ہے۔حالانکہ چونکانے والی بات یہ ہے کہ پروگرام میں کالا کپڑے پہنے صحافیوں کو بھی جانے سے روک دیا گیا، جس کا ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہو رہا ہے۔اس معاملے میں ایک پولیس افسر نے کہا کہ یہ پروگرام میں مظاہرین کو روکنے کے لئے کیا گیا ہے لیکن وہ صحافیوں کوبھی پروگرام کے مقام پر جانے کی اجازت نہیں دینے کے سوال پر خاموش رہے۔دراصل ہفتہ کو امت شاہ اور یوگی آدتیہ ناتھ وارانسی میں ’’یوا ادگھوش‘‘پروگرام میں حصہ لینے پہنچے تھے۔پروگرام میں سیاہ کپڑے پہن کر جانے پر روک لگا دی تھی اور اسی وجہ سے کالا کپڑے پہنے صحافیوں کو بھی تکلیف کا سامنا کرنا پڑا۔رپورٹ کے مطابق پروگرام سے پہلے ہی امن خراب ہونے کے خدشہ کے سبب مہاتما گاندھی کاشی ودیاپیٹھ کے تقریباََ30طالب علموں کو حراست میں لیا گیا۔ان طالب علموں کو کینٹ تھانے میں رکھا گیا۔اس پروگرام میں امت شاہ کے ساتھ آدتیہ ناتھ، نائب وزیر اعلی کیشو پرساد موریہ، ریاستی وزیرانوپما جیسوال، بی جے پی ریاستی صدر مہندر ناتھ پانڈے، صوبہ تنظیم وزیر سنیل بنسل، یوپی حکومت میں وزیر انل راج بھر اور نیل کنٹھ تیواری بھی موجود تھے۔

ایک نظر اس پر بھی