گوگل سے ناراض ہیں امریکی صدر،پوچھا:ایڈیٹ لکھتے ہی کیوں کھل جاتی ہے میری تصویر؟

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 30th August 2018, 11:52 AM | عالمی خبریں |

واشنگٹن،30؍اگست(ایجنسی) امریکی صدر ڈونالڈٹرمپ ان دنوں گوگل سے ناراض ہیں۔ ان کی شکایت ہے کہ گوگل ان کی شخصیت پر کیچڑ اچھالنے کی کوشش کررہا ہے۔ جس کے سبب وہ دنیا کے سب سے بڑے سرچ انجن کے خلاف کارروائی کی تیاری میں ہے۔

ٹرمپ کا کہنا ہے جب سے وہ صدر بنے ہیں میڈیا ان کے خلاف خبریں چلارہے ہیں۔ ایسے میں گوگل ان کے خلاف منفی خبریں سرچ کرنے میں اہم رول ادا کررہا ہے۔ امریکی میڈیا سی این این ویسے ہی ٹرمپ کے نشانے پر ہیں تو اب گوگل پر بھی ان کی ناراضگی ظاہر ہونے لگی ہے۔

آپ کو بتادیں کہ امریکہ کے صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے گوگل، فیس بک اور ٹوئٹر سمیت دوسری سوشل میڈیا کمپنیوں پر سیاسی تعصب کا الزام لگاتے ہوئے انہیں خبردار کیا ہے۔

مسٹر ٹرمپ نے منگل کو وائٹ ہاؤس میں کہا کہ گوگل ان صاف ستھرے میڈیا کوریج کو جگہ نہیں دیتا جبکہ ان کے خلاف منفی مضامین اور خیالات کی تشہیر کرتا ہے۔ اس طرح سے کام کرنا غیر قانونی ہے۔ گوگل اور دوسرے سوشل میڈیاکے ذریعے کیا کر رہے ہیں اس کا اندازہ آسانی سے لگایا جا سکتا ہے۔ ٹوئٹر، فیس بک پر کس طرح جانبدارانہ طریقے سے کام ہو رہا ہے.ان کو محتاط رہنے کی ضرورت ہے کیونکہ آپ اس طرح سے کام نہیں کر سکتے ہیں۔

مسٹر ٹرمپ کے اس الزام کے بعد گوگل نے بیان جاری کرکے کسی بھی طرح کے سیاسی تعصب کے الزام کو مسترد کر دیا ہے۔ گوگل نے کہا کہ اس کا سرچ انجن کسی بھی سیاسی ایجنڈے کے لئے استعمال نہیں ہوتا۔ ہم کسی بھی سیاسی نظریے کے تئیں جانبدار نہیں ہیں۔تاہم فیس بک اور ٹوئٹر کی جانب سے ابھی تک اس پر کوئی ردعمل نہیں آیا ہے۔مسٹر ٹرمپ کے اقتصادی مشیر لیری كڈلو نے صحافیوں کو بتایا کہ وائٹ ہاؤس گوگل کی انتظامی سطح پر جانچ کرنے پر غور کر رہا ہے۔انتظامیہ گوگل کی کچھ تحقیقات اور تجزیہ کرے گا۔تاہم انہوں نے اس بارے میں کوئی تفصیلات نہیں بتائیں ۔

ایک نظر اس پر بھی

فتح تحریک کا حماس پر اسرائیل کے ساتھ سازباز کا الزام

فلسطینی تحریک ’فتح‘ نے ’حماس‘کی قیادت پر الزام لگایا ہے کہ اس نے اسرائیل کے ساتھ سازباز کی ہے اور وہ پناہ گزینوں کی واپسی کے حق سے دست بردار ہو گئی ہے۔ جمعے کی شام جاری ایک بیان میں فتح تحرتیک کا کہنا ہے کہ حماس تنظیم ٹرمپ انتظامیہ اور نیتین یاہو کی حکومت کو پیغامات بھیج رہی ...

اسلام مخالف اے ایف ڈی دوسری سب سے بڑی جماعت، جائزہ رپورٹ

ایک تازہ عوامی جائزے کے مطابق اسلام اور مہاجرین مخالف دائیں بازوں کی سیاسی جماعت آلٹرنیٹیو فار ڈوئچ لینڈ یا اے ایف ڈی، جرمنی کی دوسری سب سے بڑی جماعت بن گئی ہے۔ اس جائزے کے مطابق حکومتی اتحاد اپنی حمایت کھو رہا ہے۔ جرمن براڈ کاسٹر ARD کی طرف سے کرائے جانے والے عوامی جائزے کے ...

رافیل معاملے میں فرانس کے سابق صدر نے کیا مودی کے جھوٹ کا پردہ فاش ’’حکومت ہند نے دیا تھا ریلائنس کا نام‘‘

رافیل جنگی طیارہ سودے کے تعلق سے حکومت اور اہم اپوزیشن پارٹی کانگریس میں جاری جنگ کے بیچ فرانس کے سابق صدر فرانسوااولاند نے نیاانکشاف کرتے ہوئے کہاہے کہ ہندوستان کی طرف سے ہی سودے کے لئے انل امبانی کی کمپنی ریلائنس ڈیفنس انڈسٹریز کے نام کی تجویز پیش کی گئی تھی ۔