اپن انگڈی میں سیریل ایکسیڈنٹ۔ جیپ کی زد میں آنے والی ماں اور بچہ محفوظ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 11th February 2019, 11:57 PM | ساحلی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

اپن انگڈی 11؍فروری (ایس او نیوز) یہاں پرانے بس اسٹانڈ کے قریب ایک سیریل ایکسیڈنٹ پیش آیا جس میں کئی گاڑیوں کو نقصان پہنچا مگر سب سے حیرت انگیز بات یہ ہوگئی کہ بے قابو جیپ کی زد میں آنے والی ایک خاتون اور اس کا چھوٹا سا بیٹابالکل زند ہ اور صحیح سلامت بچ گئے۔

بتایا جاتا ہے کہ ہوٹل کے سامنے کھڑی ہوئی جیپ کو ہوٹل کے ایک ملازم نے چلانے کی کوشش تو جیپ اس کے قابو سے باہر ہوگئی۔اس کی وجہ سے اسکوٹی اور موٹر بائکس ایک طرف بری طرح ٹوٹ پھوٹ گئے تو دوسری طرف جیپ کی ٹکر سے گیٹ کا کھمبا ٹوٹ کر گر گیا۔

سی سی ٹی وی میں قید منظر سے ظاہرہوتا ہے کہ موٹر بائکس کو روندتے ہوئے جب بے قابو جیپ چندر لتا نامی خاتون سے ٹکراتی ہے تو اس کا ڈھائی سالہ بیٹا ریتھیز اچھل کر سڑک گر جاتا ہے اور چندر کلا جیپ کے نیچے پھنس جاتی ہے اور جیپ اسے ذرا دور گھسیٹنے کے بعد اس کے اوپر سے گزر جاتی ہے۔لیکن معجزاتی طور پر چندرکلا کے صرف سر پر معمولی چوٹ آئی اور پتور کے اسپتال میں مرہم پٹی کے بعد اسے گھر جانے دیا گیا جبکہ بچے کو کسی قسم کی چوٹ نہیں آئی۔

بتایاجاتا ہے کہ ہوٹل میں جلانے کی لکڑیاں بھر کر لائی گئی تھیں۔ جیپ کا ڈرائیورجگدیپ گاڑی میں ہی چابی چھوڑکر ہوٹل میں چائے پینے کے لئے چلا گیا۔ جیپ سے لکڑیاں خالی کرنے کے بعدشنکر نامی ہوٹل کے دوسرے ملازم نے جیپ چلانے کی کوشش کی تھی اور وہ گاڑی اس کے قابو سے باہر ہوگئی اور پل بھر میں ایک بھیانک حادثہ پیش آیا جس کی زد میں آنے والے خوش قسمتی سے صحیح سلامت بچ نکلے۔

مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ اس حادثے سے ایک روز قبل یعنی سنیچر کے دن بھی ہوٹل کے لایا گیا سامان جیپ سے خالی کرنے کے بعد ڈرائیور نے چابی گاڑی میں ہی چھوڑی تھی اور ہوٹل کے کسی اور ملازم نے گاڑی چلانے کی کوشش کی تھی اور گاڑی دیوار سے ٹکرادی تھی جس سے اس کا بمپر ٹوٹ گیا تھا۔ اس کے باوجود اتوار کے دن بھی غیر ذمہ دارانہ حرکت کرتے ہوئے ڈرائیور نے چابی گاڑی میں چھوڑ دی ، جس سے ایک بڑا حادثہ ہوا۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل میں موسلادھار بارش؛ بندر روڈ پر کمپاونڈ کی دیوار گر گئی؛ بائک کو نقصان؛ بارش سے دو بجلی کے کھمبوں پر بھی درخت گرگئے

شہر میں گذشتہ کچھ دنوں سے بارش  کا سلسلہ جاری ہے، البتہ  پیر اور منگل کی درمیانی شب سے  آج منگل شام تک کافی اچھی بارش ریکارڈ کی گئی ہے، ایسے میں  شام کو  ایک مکان کے کمپاونڈ کی دیوار گرنے کی واردات بھی پیش آئی ہے۔

کاروار میں کرناٹکا جرنالسٹ یونین اترکنڑا کے زیراہتمام یکم جولانی کو ہوگا یوم صحافت کا ضلعی پروگرام

کرناٹکا جرنالسٹ یونین اترکنڑا ضلعی شاخ کے زیر اہتمام یکم جولائی کو ضلع پتریکابھون میں ’’یوم صحافت ‘‘ کا پروگرام منعقد کیا جائے گا جس میں سورنا نیوز کے کرنٹ آفیرس ایڈیٹر جئے پرکاش شٹی کو ہرسال دئیے جانے والا ’ہرمن موگلنگ ‘ریاستی ایوارڈ سے نوازا جائے گا۔

بھٹکل اور اطراف کے عوام توجہ دیں: دبئی اور امارات میں حادثات کے بڑھتے واقعات؛ ہندوستانی قونصل خانہ نے جاری کی سفری انشورنس کی ایڈوائزری

دبئی سمیت متحدہ عرب امارات کے مختلف شہروں اور قصبوں  میں  مختلف حادثات میں شدید  طور پر زخمی ہوکر اسپتالوں میں ایڈمٹ ہونے کی  تعداد میں  اضافہ کو دیکھتے ہوئے  اور اسپتالوں  میں اُن کا کوئی پرسان حال نہ ہونے  کے واقعات کا مشاہدہ کرنے کے بعد  ہندوستانی سفارت خانہ کی طرف سے  عرب ...

جانوروں پر حکومت کی مہربانی۔اب دوپہر 12تا3بجے کے دوران رہے گی کھیتی باڑی کی مشقت پر پابندی

کھیتی باڑی اور دیگر محنت و مشقت کے کاموں میں استعمال ہونے والے مویشیوں پر ریاستی حکومت نے بڑے مہربانی دکھاتے ہوئے ایک سرکیولر جاری کیا ہے کہ گرمی کے موسم میں تپتی دھوپ کے دوران دوپہر 12سے 3بجے تک کسان اپنے جانوروں کو کھیت جوتنے یا دوسرے مشقت کے کاموں میں استعمال نہیں کرسکیں گے۔

جانوروں پر حکومت کی مہربانی۔اب دوپہر 12تا3بجے کے دوران رہے گی کھیتی باڑی کی مشقت پر پابندی

کھیتی باڑی اور دیگر محنت و مشقت کے کاموں میں استعمال ہونے والے مویشیوں پر ریاستی حکومت نے بڑے مہربانی دکھاتے ہوئے ایک سرکیولر جاری کیا ہے کہ گرمی کے موسم میں تپتی دھوپ کے دوران دوپہر 12سے 3بجے تک کسان اپنے جانوروں کو کھیت جوتنے یا دوسرے مشقت کے کاموں میں استعمال نہیں کرسکیں گے۔

دُبئی میں 18 برس سے کم عمر بچوں کی ویزہ مفت؛ 15 جولائی سے 15 ستمبر تک رہے گی سہولیت

 متحدہ عرب امارات میں سیاحتی سیزن کے دوران غیر مُلکی سیاحوں کے 18 برس سے کم عمر بچوں کے لیے مفت ویزے کی سہولت فراہم کی جا رہی ہے۔ یہ اعلان فیڈرل اتھارٹی فار آئیڈینٹٹی اینڈ سٹیزن شپ کی جانب سے کیا گیا ہے۔ دُبئی میں ہر سال سیاحتی سیزن کا آغاز 15 جولائی سے ہوتا ہے جو 15 ستمبر تک جاری ...