یو پی پبلک سروس کمیشن کے امتحانات :عدالت عظمی نے کیا فیصلہ محفوظ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 13th June 2018, 12:03 AM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،12جون ( ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا ) سپریم کورٹ نے جمعرات تک کیلئے اس عرضی پر اپنا فیصلہ محفوظ کرلیا جس میں مطالبہ کیا گیا ہے کہ اترپردیش پبلک سروس کمیشن کے مینس اگزامینیشن کو روک دیا جائے۔جسٹس ادے امیش للت کی سربراہی میں عدالت کی تعطیلی بنچ نے جسٹس دیپک گپتا بھی شامل تھے۔ بنچ نے مختلف فریقوں کی باتیں سنیں اسکیبعد اپنے فیصلیمیں کہاکہ جو فریق جوابی حلف نامہ داخل کرنا چاہتا ہے وہ داخل کرسکتا ہے فیصلہ پرسوں سنایا جائے گا۔واضح رہے کہ کئی طلبانے عدالت عظمی میں عرضیاں داخل کرکے کہا تھا کہ بے ضابطگی سے کام لیا گیا ہے ۔ان طلبا نے یہ بھی مطالبہ کیا کہ یو پی پی ایس سی کے مینس امتحانات بھی روکے جائیں جو 18 جون کو ہونے والے ہیں۔سپریم کورٹ نے عرضی گذاروں ، مدعاعلیہان بشمول یو پی پی ایس سی کی باتیں تفصیل سے سنیں۔

ایک نظر اس پر بھی

ملک کے مفادمیں متحد رہنے کانگریس جے ڈی ایس قائدین کا فیصلہ،14سال بعد دیوے گوڈا اور سدرامیا کی ایک ساتھ اخباری کانفرنس

آنے والے لوک سبھا انتخابات میں سیکولر سیاسی طاقتوں کو مضبوط کرنے کی غیر معمولی پہل کرتے ہوئے آج کانگریس اور جے ڈی ایس قیادت نے اتحاد کا غیر معمولی پیغام دیا۔

حکومت یونیورسیٹیوں میں اساتذہ کی اظہاررائے کی آزادی پربندش نہیں لگائے گی

فروغ انسانی وسائل کے مرکزی وزیرپرکاش جاویڈیکر نے دہلی یونیورسٹی میں لازمی خدمات فراہمی ایکٹ ( ا یسما) لگانے کے الزامات پر صفائی دیتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت کا ارادہ اساتذہ کے اظہار رائے کی آزادی کو روکنے کا نہیں ہے۔