یو پی پبلک سروس کمیشن کے امتحانات :عدالت عظمی نے کیا فیصلہ محفوظ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 13th June 2018, 12:03 AM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،12جون ( ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا ) سپریم کورٹ نے جمعرات تک کیلئے اس عرضی پر اپنا فیصلہ محفوظ کرلیا جس میں مطالبہ کیا گیا ہے کہ اترپردیش پبلک سروس کمیشن کے مینس اگزامینیشن کو روک دیا جائے۔جسٹس ادے امیش للت کی سربراہی میں عدالت کی تعطیلی بنچ نے جسٹس دیپک گپتا بھی شامل تھے۔ بنچ نے مختلف فریقوں کی باتیں سنیں اسکیبعد اپنے فیصلیمیں کہاکہ جو فریق جوابی حلف نامہ داخل کرنا چاہتا ہے وہ داخل کرسکتا ہے فیصلہ پرسوں سنایا جائے گا۔واضح رہے کہ کئی طلبانے عدالت عظمی میں عرضیاں داخل کرکے کہا تھا کہ بے ضابطگی سے کام لیا گیا ہے ۔ان طلبا نے یہ بھی مطالبہ کیا کہ یو پی پی ایس سی کے مینس امتحانات بھی روکے جائیں جو 18 جون کو ہونے والے ہیں۔سپریم کورٹ نے عرضی گذاروں ، مدعاعلیہان بشمول یو پی پی ایس سی کی باتیں تفصیل سے سنیں۔

ایک نظر اس پر بھی

عام آدمی پارٹی اور مرکزی سرکار کی کھینچا تانی۔اپوزیشن کا تیسرامحاذ ہورہاہے مستحکم

دہلی میں حکومت چلانے کے لئے آئی اے ایس افسران کی طرف سے عدم تعاون کو مسئلہ بناکر دہلی کے وزیر اعلیٰ اروند کیجریوال نے لیفٹننٹ گورنرانیل بیجال کے دفتر میں جو دھرنا دے رکھا ہے اس کی حمایت میں چار غیر بی جے پی ریاستوں کے وزرائے اعلیٰ نے حمایت کا مظاہرہ کیا ہے۔

جموں کشمیر میں رمضان کے مقدس مہینے میں دہشت گردوں نے کیا اورنگ زیب کو شہید

رمضان کےمقدس مہینے میں جموں وکشمیر میں دہشت گردوں نے اغوا کرنے کے بعد فوج کے جوان اورنگ زیب کا قتل کردیا ۔ ہفتہ کو اورنگ زیب کی موت سے پہلے کا ایک مبینہ ویڈیو سوشل میڈیا پر جاری کیا گیا ، جس ویڈیو میں فوجی جوان سے پوچھ گچھ کی جارہی ہے۔

مدھیہ پردیش میں بی جے پی کی حالت خراب، شیوراج نہیں ہوں گے چہرہ

مدھیہ پردیش میں بی جے پی کی حالت خراب ہے، اقتدار مخالف لہر ہر طرف نظر آرہی ہے، لہذا اب انتخابی چہرہ شیوراج نہیں ہوں گے اور کم از کم 130 موجودہ بی جے پی ممبران اسمبلی کے ٹکٹ کاٹے جائیں گے، اتنا ہی نہیں کانگریس کو کمزور سمجھنے کی بھول کرنے والوں کو منہ کی کھانی پڑے گی، یہ پیغام کسی ...

ممبئی میں عیدالفطر مذہبی جوش وخروش سے منائی گئی ، عروس البلاد میں جشن کا ماحول

 ممبئی میں چاند کی عام رویت ہونے کے بعد سے عروس البلاد میں جشن کا سماں بندھ گیا اورسنیچر کی صبح شہر بھر کی مساجد میں فرزندان توحید نے نماز دوگانہ اداکی اور اپنے رب کے حضور سجدہ شکر اداکیا کہ ماہ صیام کے دوران اُس نے روزہ رکھنے اور مختلف عبادات کی توفیق عطا کی ۔