کانگریس حکومت نے تفصیلات نہ دے کر کیا کسانوں کا نقصان: گجیندر سنگھ شیخاوت

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 14th March 2019, 11:52 PM | ملکی خبریں |

جے پور، 14 مارچ(ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا) مرکزی زراعت وزیر مملکت گجیندر سنگھ شیخاوت نے جمعرات کو الزام لگایا کہ راجستھان حکومت نے پردھان منتری احترام فنڈ اسکیم کے لئے کسانوں کی تفصیلات دستیاب نہیں کروائی جس سے ریاست کے کسانوں کو نقصان ہوا ہے۔وزیر نے کہا کہ اگر اشوک گہلوت حکومت کسانوں کی تفصیلات سے متعلق عمل مکمل کر دیتی تو انہیں منصوبہ کے تحت پہلی قسط مل چکی ہوتی۔یہاں ریاستی بی جے پی کے دفتر میں صحافیوں سے بات چیت میں شیخاوت نے کہا کہ یہ بدقسمتی کی بات ہے کہ کسانوں کی حمایت کرنے والی حکومت بننے کا دعوی کر اقتدار میں آئی اشوک گہلوت حکومت نے راجستھان کے کسانوں کا نقصان کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس منصوبہ کے تحت ریاست کی حکومتوں کو اپنے اپنے ریاست کے چھوٹے اور معمولی کسانوں کی تفصیلات مرکزی حکومت کو دستیاب کروانا تھا۔اس منصوبہ کے تحت کسان کو سالانہ 6000 روپے دیے جانے ہیں۔شیخاوت نے دعوی کیا کہ منصوبے کے تحت پہلی قسط پونے تین کروڑ کسانوں کے اکاؤنٹس میں پہنچ چکی ہے۔وزیر نے کہا کہ راجستھان میں 50 لاکھ سے زیادہ ایسے چھوٹے اور معمولی کسان ہیں جنکو اس منصوبہ کے ذریعے براہ راست فائدہ ملنا طے تھا۔چونکہ اس کی منصوبہ بندی میں پیسہ مرکزی حکومت دے رہی ہے، اس لئے ریاستی حکومت پر اس کا ایک روپے کا بوجھ نہیں آنا تھا۔ریاستی حکومت کو صرف اپنے یہاں کے کسانوں کی فہرست دینی تھی۔لیکن بدقسمتی کی بات ہے کہ گہلوت حکومت نے ان کسانوں کو ان کے حق سے محروم رکھا۔

ایک نظر اس پر بھی

گذشتہ دس سالوں سے جیل میں مقید مسلم نوجوان کو قانونی کی تعلیم جاری رکھنے کی اجازت، جمعیۃ علماء نے قانونی امداد کے ساتھ ساتھ تعلیمی وظیفہ بھی دیا، پہلے مرحلہ کا نتیجہ اطمنان بخش: گلزار اعظمی

ممبئی کی خصوصی مکوکا(این آئی اے) عدالت نے جھوٹے دہشت گردانہ معاملے کا سامنا کررہے ایک مسلم نوجوان کو قانون کی تعلیم جاری رکھنے اور اسے امتحان میں شرکت کرنے کی مشروط اجازت دی۔13-7 ممبئی سلسلہ وار بم دھماکہ معاملے کا سامنا کررہے ملزم ندیم اختر کو ایل ایل بی پہلے سال کے دوسرے مرحلہ ...

مرکز نے سپریم کورٹ سے کہا، رافیل معاہدہ میں پی ایم اوکادخل نہیں، تمام عرضیاں ہوں مسترد

لوک سبھا انتخابات میں اپوزیشن نے رافیل لڑاکا طیارے معاہدے میں بے ضابطگیوں کا الزام لگاتے ہوئے اسے سب سے بڑا مسئلہ بنایا۔کانگریس صدر راہل گاندھی نے اس معاہدے کے لئے براہ راست طور پر وزیر اعظم نریندر مودی کو ذمہ دار بتایا۔

جب تک کجریوال ہیں، دہلی کو مکمل ریاست کا درجہ دینے کی نہیں سوچ سکتے:ہرش وردھن

دہلی کی چاندنی چوک سیٹ سے تقریباََ228000 ووٹوں سے جیت کر دوبارہ ایم پی بنے مرکزی وزیر ڈاکٹر ہرش وردھن نے بات کی۔دہلی کو مکمل ریاست کا درجہ دینے کے معاملے پر انہوں نے کہا کہ جب تک اروند کجریوال وزیر اعلی ہیں، اس وقت تک اس کے بارے میں سوچا بھی نہیں جا سکتا۔