امن کے لئے یو این ایلچی ریاض سے علاقائی دورے کا آغاز کریں گے

Source: S.O. News Service | Published on 7th May 2017, 11:18 PM | خلیجی خبریں |

ریاض7مئی(ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا)یمن کے لئے اقوام متحدہ کے خصوصی ایلچی اسماعیل ولد الشیخ احمد خطے کے ملکوں کا از سر نو دورہ کر رہے ہیں جس کا مقصد یمن کے حوالے سے معطل شدہ امن مذاکرات کے عمل کو دوبارہ شروع کرنا ہے۔ یہ امن عمل گذشتہ برس کے اواخر سے تعطل کا شکار ہے۔یمنی ذرائع کے مطابق اس سلسلے میں ولدالشیخ احمدسعودی عرب کے صدرمقام ریاض میں یمنی اور سعودی حکام سے ملاقاتیں کریں گے۔یو این ایلچی کے قریبی ذرائع نے بتایا کہ رمضان المبارک کے دوران مشاورت کا نیا سلسلہ شروع کرانے کی انتہائی سنجیدہ کوششیں کی جا رہی ہیں۔ متعلقہ فریق اس مشاورتی عمل سے یہ امید لگائے بیٹھے ہیں کہ یہ سارا عمل امن معاہدہ پر دستخط کا پیش خیمہ ثابت ہوگا۔ایک ملتی جلتی پیش رفت میں یمنی حکومت کے سربراہ احمد عبید بن دغر نے روس سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ باغی ملیشیا پر دباؤ بڑھائیں جبکہ دوسری جانب یو این ایلچی اسماعیل ولد الشیخ احمد نے معطل شدہ یمن امن مذکرات کا سلسلہ دوبارہ شروع کرانے کی غرض سے خطے کے ملکوں سے رابطے کا نیا دور شروع کرنے والے ہیں۔اس سلسلے میں بن دغر نے سعودی عرب میں روسی سفیر سے ملاقات کی تاکہ یمنی بحران کا حل تلاش کیا جا سکے۔ انہوں نے ماسکو پر زور دیا کہ وہ باغی ملیشیا کو یمنی شہریوں کا خون بہانے سے جیسے اقدامات سے روکنے کے لئے اپنا رسوخ استعمال کریں۔درایں اثنا روسی سفیر نے یمن کی آئینی حکومت کے صدر عبد منصور ربہ کو بتایا کہ ان ملک انہیں ہر طرح کی حمایت فراہم کرے گا۔ انہوں نے وزیر اعظم بن دغر کو روس کی اس خواہش سے آگاہ کیا ہے کہ ماسکو یمنی مذاکرات کے سلسلے کو پرامن ماحول میں طے شدہ اصولوں کے مطابق جاری رکھنے کاخواہاں ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

شارجہ میں ابناء علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کی خوبصورت تقریب؛ یونیورسٹی میں میڈیکل تعلیم صرف 60 ہزار میں ممکن!

علی گڈھ مسلم یونیورسٹی جسے بابائے قوم مرحوم سر سید احمد خان نے دو سو سال قبل قائم کیا تھا آج تناور درخت کی شکل میں ملک میں تعلیم کی روشنی عام کررہا ہے۔اس یونیورسٹی میں میڈیکل کے طلبا کے لئے پانچ سال کی تعلیمی فیس صرف 60,000 روپئے ہے، حالانکہ دوسری یونیورسیٹیوں میں میڈیکل کے طلبا ...

متحدہ عرب امارات میں حفظ قرآن جرم، حکومت کی منظوری کے بغیر کوئی شخص قرآن حفظ نہیں کرسکتا، مساجد میں مذہبی تعلیم اور اجتماع پر بھی پابندی

مشرقی وسطیٰ کے مختلف ممالک میں داخل اندازی اور عرب کی اسلامی تنظیموں کو دہشت گرد قرار دینے کے بعد متحدہ عرب امارات قانون کے ایسے مسودہ پر کام کررہا ہے جس کی رو سے حکومت کی منظوری کے بغیر قرآن شریف کا حفظ بھی غیرقانونی ہوگا۔

سعودیہ میں مقیم غیر قانونی تارکین وطن میں سب سے زیادہ تعداد پاکستانیوں کی نکلی

سعودی عرب کی وزارت داخلہ کے ترجمان میجر جنرل منصور الترکی نے واضح کیا ہے کہ اقامہ و محنت قوانین اور سرحدی سلامتی کے ضوابط کی خلاف ورزی کرنے والے 140 مما لک کے 758570 غیر ملکیوں نے شاہی مہلت سے فائدہ اٹھایا۔