اڈپی:اسپتال سے بچی کو چرانے والی خاتون پولیس کی گرفت میں

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 17th May 2017, 1:23 PM | ساحلی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

اڈپی 17؍مئی (ایس او نیوز)اڈپی ضلع سرکاری اسپتال میں ایک چھ سالہ بچی کو اغوا کرنے کے الزام میں خاتون کوعوام نے دھر لیا اور پھر اسے پولیس کے حوالے کیا ہے۔

واقعہ کی تفصیل یہ بتائی جاتی ہے کہ ہوندگند باگلکوٹ کی رہنے والی آشا کا شوہر سرکای اسپتال میں داخل تھا۔ وہ اپنی چھ سالہ بچی کے ساتھ شوہر سے ملنے اسپتال پہنچی۔ دوسری طرف اُپندا کی ایک خاتون گیتا کا شوہر بھی اسی اسپتال میں داخل تھا اور وہ بھی اپنے شوہر سے ملنے اسپتال آئی ہوئی تھی۔ اس دوران آشا کی چھ سالہ بچی جب وارڈ سے باہر کھیل رہی تھی تو مبینہ طورپر گیتا نے اسے چاکلیٹ کا لالچ دے کر اغوا کرلیا اور سیدھے اپنے گھر پہنچ گئی۔ پھر نہ جانے کیا بات ہوئی کہ اس نے گھر کے اندر بچی کی پیٹائی کردی، جس پر بچی بہت زیادہ چیخنے اور رونے لگی۔ بچی کے چیخنے پر آس پڑوس کے لوگ جمع ہوئے تو گیتا بچی کو لے کر واپس اسپتال چھوڑنے پہنچی۔ تب تک آشا اور اس کے شوہرنے اپنی بچی گُم ہوجانے کے سلسلے میں اسپتال میں سب کو بتادیا تھا اور بچی کی تلاش جاری تھی۔جب گیتا بچی کو لے اسپتال کی طرف آئی تو وہاں پر موجود عوام نے اسے دھر لیا اور بچی کو اغوا کرنے کے الزام میں پولیس کے حوالے کردیا۔ کہتے ہیں کہ اسپتال میں موجود سی سی ٹی وی کیمرے کی فوٹیج سے بھی گیتا کے ذریعے بچی کو اغوا کرنے کی بات ثابت ہوگئی ہے۔

مقامی پولیس نے بچی کو اغوا اور مار پیٹ کرنے کا معاملہ درج کرلیا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

اُترکنڑا کے مختلف علاقوں میں سنگھ پریوار کے کارکنوں کے ہنگاموں سے بھٹکل میں بھی تشویش کی لہر؛ کل بدھ کو بھٹکل بندکا اعلان؛ مرڈیشورکے ایک مکان پر پتھرائو

گذشتہ کچھ دنوں سے ضلع اُترکنڑا کے مختلف شہروں میں ہورہے سنگھ پریوار کے کارکنوں کے احتجاج کے نام پر  ہنگاموں کو دیکھتے ہوئے  شہر بھٹکل کے عوام میں بھی تشویش پائی جارہی ہے، ایسے میں وہاٹس ایپ پر کنڑا کا ایک مسیج تیزی کے ساتھ وائرل ہورہا ہے جس میں بتایا گیا ہے کہ کل بدھ کو بھٹکل، ...

ہوناور میں لاپتہ ہونے والا سرسی کا نوجوان زندہ سلامت مل گیا؛ چار روز تک پاگلوں کی طرح جنگل کی خاک چھانتا رہا

چار روز قبل جمعہ کے دن ہوناور کے ہاڈین بال میں شرپسندوں کے حملوں کے بعد لاپتہ ہونے والا سرسی کا نوجوان آج ہوناور کے جنگل میں زندہ سلامت مل گیا، جس کے ساتھ ہی اُن کے گھر پر رونق لوٹ آئی اور گھروالوں سمیت مقامی لوگوں نے اللہ کا شکر بجالیا۔

کیا ہوناور،کمٹہ اور کاروار کے وُکلا نے مسلم گرفتارشدگان کے معاملات کی پیروی نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے ؟

ہوناورمیں گذشتہ روز ایک نوجوان کی لاش قریبی تالاب سے برآمد ہونے کے بعدمسلمانوں کو اُس کے قتل کا ذمہ دار ٹہراتے ہوئے  نہ صرف ہوناور بلکہ کمٹہ اور ضلع کے دیگر علاقوں میں بھی مسلمانوں کے خلاف منظم سازش کے تحت فضا تیار کی جارہی ہے اور  غیر مسلمانوں کو مسلمانوں پر حملہ کرنے کے لئے ...

ہوناور اور کمٹہ کے بعد اب سرسی میں بی جے پی اور سنگھ پریوار کے کارکنوں کا ہنگامہ؛ مسجد اور دکانوں پر پتھرائو کے بعد پولس لاٹھی چارج

  بی جے پی اور سنگھ پریوار کے کارکنوں کی جانب سے ہوناور اور کمٹہ میں پریش میستا کی موت کو لے کر ہنگامہ کھڑا کرنے کے بعد آج سرسی میں بھی ان کارکنوں نے  توڑپھوڑ مچانے کی کوشش کی، جس کے دوران پولس نے لاٹھی چارج کرتے ہوئے  اُن کی کوششوں کو ناکام بنادیا۔

جموں و کشمیر میں برفانی تودے میں دفن ہوئے پانچ فوجی جوان، تلاشی مہم شروع 

جموں اور کشمیر میں ہوئی سموار کی شب ہوئی تازہ برفباری میں گریج خطہ سے دو جوان اور کپواڑہ ،12؍دسمبر (ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا )کے نیل گاؤں سے تین فوجی جوان کے لا پتہ ہونے کی دردناک خبر مل رہی ہے ۔

’’بھگوا غنڈہ گردی ملک کی سلامتی کے لیے سب سے بڑا خطرہ ‘‘: آل انڈیا امامس کونسل

ہندوتواوادی اور فسطائی غنڈے نے پھر سے ملک کو شرمسار کر دیا۔ ایک نہتے اور بے قصور مزدور افراز الاسلام کو مزدوری دینے کے بہانے بلاکر پھاوڑے سے قتل کر دینا اور پھر پٹرول چھڑک کر آگ لگا کر جلا دینا ملک کے لیے ایک انتہائی شرمناک معاملہ ہے۔