ٹیوٹر پر گمراہ کن خبر، آر ایس ایس کے حملے کو سی پی ایم حملہ قرار دینے کی کوشش مہنگی پڑی

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 19th May 2017, 2:51 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو:18/مئی(ایس او نیوز) ریاست سے منتخب رکن راجیہ سبھا اور کیرلا کے ایشیا نیٹ چینل کے مالک راجو چندرشیکھر مصیبت میں پھنس گئے ہیں۔کنور میں آر ایس ایس کارکنوں کی طرف سے ایک ایمبولنس پر حملہ کی خبر کو توڑمروڑ کر ٹیوٹر پر انہوں نے ایمبولنس پر سی پی ایم کا رکنوں کا حملہ قرار دیاتھا۔ اسی خبر کو نئے نیوز چینل ریپلک ٹی وی نے بھی دکھایا۔اسی بنیاد پر ایشیا نیٹ اور ریپبلک ٹی وی کے خلاف تعذرات ہند کی دفعہ 153Aکے تحت فوجداری مقدمہ دائر کرنے کیلئے ایف آئی آر درج کیاگیا ہے۔ آر ایس ایس کے اس حملے کو کمیونسٹ پارٹی کارکنوں کا حملہ قرار دیتے ہوئے راجو چندر شیکھر نے جو ٹیوئٹ کیاتھا اسی کی بنیاد پر پولیس نے یہ کارروائی شروع کی ہے۔ حملہ میں ایک مریض کو ایمبولنس کے ذریعہ یہاں کے پریارم میڈیکل کالج میں داخل کیاجارہاتھاکہ آر ایس ایس کارکنوں کے ایک بڑے گروپ نے اس ایمبولنس پر حملہ کیا اور ڈرائیور کو زخمی کردیا۔ کنور میں ایمبولنس ڈرائیوروں نے اس حملہ کے خلاف احتجاجی مظاہرہ بھی کیا۔ سی سی ٹی وی مناظر کی بنیاد پر پولیس نے یہ نتیجہ اخذ کیا کہ یہ حملہ آر ایس ایس کارکنوں نے کیا ہے، لیکن راجو چندر شیکھر نے اپنے چینلوں پر یہ خبر اڑائی کہ یہ حملہ سی پی ایم کارکنوں نے کیا ہے۔ اس سلسلے میں کیرلا ریاستی بی جے پی صدر راج شیکھرن کے خلاف بھی اس سلسلے میں مقدمہ درج کیاگیا ہے۔دفعہ153A کے تحت ان پر سماج میں منافرت پھیلانے کا مقدمہ درج کیاگیا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

اسکولی بچوں کے سوشیل میڈیا استعمال کرنے پر پابندی،پابندی پامال کرنے والوں کو اسکول سے نکال دینے کی تاکید

ریاستی محکمۂ تعلیمات نے کمسن ذہنوں پر سوشیل میڈیا کے اثرات کو دیکھتے ہوئے سختی سے یہ فرمان جاری کیا ہے کہ 13سال کی عمر تک کے بچوں کو سوشیل میڈیا کا استعمال کرنے کی اجازت قطعاً نہ دی جائے۔

مودی حکومت کے انسداد گؤ کشی قانون کو کمار سوامی نے قرار دیا خوش آئند: گائیوں کی دیکھ بھال کیلئے مراکز قائم کرنے کا بھی مشورہ

مرکزی حکومت کی طرف سے کل ملک بھر میں لاگو کئے گئے انسداد گؤ کشی قانون کا سابق وزیراعلیٰ اور ریاستی جنتادل(ایس) صدر ایچ ڈی کمار سوامی نے خیر مقدم کیااور کہاکہ مرکزی حکومت کو چاہئے کہ اس قانون کو نافذ کرنے کے ساتھ ملک بھر میں گائیوں کی دیکھ بھال کیلئے مراکز قائم کرے۔

موسلادھار بارش کی وجہ سے شہر میں عام زندگی متاثر،نشیبی علاقے زیر آب ، دوسو سے زائد درخت اور متعدد بجلی کے کھمبے زمین بوس

شہر میں کل رات ہوئی زبردست بارش کے سبب 200 سے زائد مقامات پر درخت اور بجلی کے کھمبے اکھڑگئے اور ساتھ ہی نہ صرف نشیبی علاقے بلکہ چند مشہور ومعروف سرکاری اور دیگر عمارتوں میں بھی بارش کا پانی گھس آیا۔