ایران کے خلاف امریکی پابندیوں پر عمل درامد نہیں کریں گے: ترکی

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 26th July 2018, 12:05 AM | عالمی خبریں |

انقرہ25جولائی ( ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا ) ترکی کے وزیر خارجہ مولود چاوش اوگلو نے اعلان کیا ہے کہ اْن کے ملک نے امریکی عہدے داران کو آگاہ کر دیا ہے کہ وہ ایران پر امریکی پابندیوں کی مخالفت کرتا ہے اور ترکی ان پابندیوں کو لاگو کرنے کا پابند نہیں ہے۔منگل کے روز آذربائیجان میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے اوگلو کا کہنا تھا کہ "ہم کسی ایک ملک کی جانب سے دوسرے ملک پر مسلط کی جانے والی پابندیوں کو پورا کرنے پر مجبور نہیں اور ہم ان پابندیوں کو درست بھی نہیں سمجھتے"۔انہوں نے مزید کہا کہ "ہم نے انقرہ میں امریکا کے ساتھ کئی اجلاس منعقد کیے اور ان کو صاف طور پر آگاہ کر دیا کہ ہم آذربائیجان، ایران، روس اور عراق سے تیل اور گیس حاصل کرتے ہیں۔ اگر ہم اب ایران سے یہ نہیں خریدیں تو پھر ہماری ضرورت کس طرح پوری ہو گی۔گزشتہ ہفتے ایک امریکی وفد نے ترکی کا دورہ کیا تھا۔ دورے کا مقصد ایران پر پابندیوں اور خطّے میں ایران کی دہشت گردی کے حوالے سے انقرہ کے ساتھ بات چیت کرنا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

شمالی کوریا جوہری ہتھیار تلف کرنے پر سنجیدہ لگتا ہے : امریکی خفیہ ادارہ

امریکی ذرائع ابلاغ سے موصولہ ا طلاع کے مطابق امریکہ کے خفیہ ادارے سینٹرل انٹیلی جنس ایجنسی (سی آئی اے) نے کہا ہے کہ اسے ایسے اشارے ملے ہیں جن سے لگتا ہے کہ شمالی کوریا اپنے جوہری ہتھیار تلف کرنے پر واقعی آمادہ ہے

یہودی شرپسندوں کے طرف سے قبلہ اول پر مجرمانہ حملے جاری

فلسطین کے مقبوضہ بیت المقدس میں مسجد اقصیٰ میں یہودی آبادکاروں کے دھاوے اور مقدس مقام کی مجرمانہ بے حرمتی کا سلسلہ جاری ہے۔ کل سوموار کو90 یہودی آباد کار اور اسرائیلی فوجی پولیس کی فول پروف سیکیورٹی میں مسجد اقصیٰ میں داخل ہوئے اور قبلہ اول میں گھس کرنام نہاد مذہبی رسومات کی ...

چین پر امریکی محصولات کا سب سے بڑا پیکج نافذ العمل

امریکا میں چین سے درآمد کی جانے والی 200 ارب ڈالر کی اشیا پر 10% ٹیکس لاگو ہو گیا ہے۔ اس کے نتیجے میں عالمی نمو کے لیے خطرات میں اضافہ ہو گا۔ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی انتظامیہ نے اس ٹیکس کو پیر کے روز عائد کیا۔ توقع ہے کہ چین فوری جواب کے طور پر امریکا سے ہر سال درآمد کی جانے والی 60 ...

ایران نواز ملیشیائیں اسرائیل کی سرحد سے محفوظ مسافت پر ہیں: روس

روس کی وزارت دفاع نے انکشاف کیا ہے کہ ایران کی ہمنوا فورسز اپنے بھاری ہتھیاروں کے ساتھ گولان کے پہاڑی علاقے سے اْتر کر شام کے اندر مشرق میں 140 کلومیٹر کی دْوری پر چلی گئی ہیں۔وزارت دفاع کا کہنا ہے کہ تقریبا 1050 عسکری اہل کار مذکورہ علاقے سے انخلا کے بعد اتنی مسافت پر چلے گئے ہیں ...