بلدی انتخابات میں جے ڈی ایس کو زیادہ نشستیں ٹمکورسٹی کارپوریشن کیلئے 8مسلم کونسلرس منتخب

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 4th September 2018, 1:28 PM | ریاستی خبریں |

ٹمکور4؍ستمبر (ایس او نیوز) ٹمکور ضلع کے مقامی بلدی اداروں کے جملہ 155 کونسلروں کیلئے ہوئے انتخابات میں جے ڈی ایس پارٹی کو 52 وارڈوں میں کانگریس پارٹی کو 31اور بی جے پی کے 24امیدواروں کو کامیابی حاصل ہوئی ہے۔ اس کے علاوہ 8حلقوں میں آزاد امیدواروں نے جیت درج کرائی ہے اور کونسلر منتخب ہوئے ہیں۔ ٹمکور سٹی کارپوریشن کے جملہ 35وارڈوں میں بی جے پی کو 12 وارڈوں میں کامیابی ملی ہے۔جبکہ گزشتہ سال صرف 6کارپوریٹرس شامل تھے۔

کانگریس کے اس مرتبہ 10کونسلرس منتخب ہوئے ہیں جبکہ گزشتہ سال کانگریس پارٹی کے 14 کارپوریٹر تھے۔ جے ڈی ایس پارٹی کے بھی 10 امیدواروں کو جیت ملی ہے جبکہ اس سے قبل جے ڈی ایس کو 13 وارڈوں میں کامیابی ملی تھی۔ ان کے علاوہ ٹمکور بلدیہ میں 3آزاد کارپوریٹروں نے بھی جیت درج کرائی ہے۔

ٹمکور بلدیہ میں جملہ 8مسلمانوں نے کامیابی درج کرائی ہے، جن میں 6کانگریس اور ایک جے ڈی ایس اور ایک آزاد کونسلر شامل ہے۔ سابق رکن اسمبلی ایس نے اخباری نمائندوں کو بتایا کہ انہیں 15 سیٹوں پر کامیابی کی امید تھی۔ کئی وارڈوں میں 5تا 7 آزاد امیدواروں نے انتخاب لڑا۔ جس سے کانگریس کو نقصان پہنچا، اب ٹمکور بلدیہ پر کانگریس اور جے ڈی ایس اتحاد کا قبضہ ہوگا جملہ 20 کونسلروں کے ساتھ ایک ایم پی اور ایک ایم ایل سی کی حمایت کے ساتھ اکثریت حاصل ہوگی۔

بی جے پی کے رکن اسمبلی نے بتایا کہ انہیں کم سے کم 16 وارڈوں میں کامیابی کا یقین تھا مگر یہ ممکن نہیں ہوسکا۔ مدھوگری ٹاون منپسل کونسل میں کانگریس کو اکثریت حاصل ہوئی ہے اور جملہ 23سیٹوں میں سے 13 پر کانگریس امیدوار کامیاب رہے ہیں۔جبکہ جے ڈی ایس کو 9 وارڈوں میں کامیابی حاصل ہوئی ہے۔ اور 2آزاد امیدواروں نے کامیابی حاصل کی ہے۔ اس حلقہ میں جے ڈی ایس کے رکن اسمبلی نے کامیابی حاصل کی ہے۔دوسری طرف نائب وزیر اعلیٰ ڈاکٹر جی پرمیشور کے انتخابی حلقہ کورٹ گیرہ میں 5سیٹوں پر کانگریس، 8 میں جے ڈی ایس اور بی جے پی اور آزاد امیدوار کو ایک سیٹ پر کامیابی ملی ہے۔ گبی منسپل کونسل میں جے ڈی ایس کے 10،کانگریس کے 9 ، بی جے پی 6 اور ایک آزاد کونسلر کامیاب ہوئے ہیں۔چک نائکناہلی میں جے ڈی ایس کے 14، کانگریس کے 2اور بی جے پی کے 5 اور 2آزاد امیدوار کامیاب ہوئے ہیں۔ یہاں بی جے پی کے رکن اسمبلی مادھو سوامی کو منہ کی کھانی پڑی۔ ٹمکور کے مسلم امیدوار جنہوں نے کامیابی حاصل کی ہے ان کے نام اس طرح ہیں۔ عنایت اللہ خان، سید نیاز، مجیدہ خانم، شکیل احمد، نور النساء بانو، ناصرہ بانو، اسماعیل اور فریدہ شامل ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

منگلورو: شہریت ترمیمی قانون مخالف احتجاج کے دوران ہوئے لاٹھی چارج اور فائرنگ معاملے میں ایف آئی آر درج ہونا چاہیے؛ ہائی کورٹ کا تیکھاتبصرہ

منگلورو میں شہریت ترمیمی قانون کے خلاف19دسمبر2019 کو ہوئے پرتشدد احتجاج کے دوران پولیس کی طرف سے کیے گئے لاٹھی چارج اور فائرنگ کے سلسلے میں کرناٹکا ہائی کورٹ کی ڈیویزن بنیچ کے رکن جسٹس جان مائیکل نے تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ پولیس کوا س معاملے میں ایف آئی درج کرنا چاہیے۔

بنگلور وسٹی پولیس وائٹ فیلڈ کو محفوظ بنانے کیلئے سی سی ٹی وی کی نگرانی

اگر آپ وائٹ فیلڈکے علاقہ میں رہتے ہیں تو جلد ہی آپ بنگلور سٹی پولیس کی نگرانی میں ہوں گے، دراصل ٹیکنالوجی کے مرکز اور علاقہ کو جرائم سے محفوظ بنانے، شرارتوں کو ختم کرنے، عوامی اعلانات کو ممکن بنانے اور مجرموں کو پکڑنے کی کارروائی کو آسان بنانے کے لئے پولیس نے اب خانگی اداروں کا ...

بنگلورو سلک بورڈ جنکشن راہگیروں کے لئے خطرناک

الیکٹرانک سٹی اور شرجاپور میں واقع اپنے دفاتر کو جانے کے لئے بسوں کو پکڑنے کے لئے فٹ پاتھوں پر پیدل چلنے اور سلک بورڈ جنکشن کا استعمال کرنے والے ٹیکیوں کا کہنا ہے کہ، یہاں کی سڑکوں پر سے پیدل چل کر جانا ایک خطر ناک معاملہ ہوتا ہے۔

این آرسی بد عنوانیوں میں اضافہ کا سبب بنے گا

شہر بنگلور میں مزدوروں تنظیموں کے رضاکاروں نے تنبیہ کی ہے کہ مرکزی حکومت کی طرف سے قومی رجسٹر برائے شہریت کے نفاذ کی کوئی بھی کوشش بد عنوانیوں کو ہوا دے سکتی ہے اور ملک بھر میں رشوت ستانی کا ماحول پیدا ہو جائے گا جبکہ غیرب لوگوں کو اپنے دستاویزات بنانے یا انہیں درست کرانے کے لئے ...

بی بی ایم پی صفائی کرمچاریوں کیلئے رہائشی اسکیم بی ڈی اے سے تعمیر شدہ فلیٹ کے حق پترا تقسیم

بروہت بنگلور مہانگر پالیکے (بی بی ایم پی) کے صفائی کرمچاریوں کو رہائش کی سہولت فراہم کرنے بنگلور ڈیولپمنٹ اتھارٹی (جی ڈی اے) کی طرف سے فلیٹ تعمیر کئے جارہے ہیں، ان میں سے چند فلیٹ کے حق پترا آج منتخب صفائی کرمچاریوں میں تقسیم کئے گئے۔

کنڑا میں بات کرنے پر طلباء پر جرمانہ عائد کرنے والے اسکول کی منظوری رد کرنے وزیر تعلیم سے کنڑا اتھارٹی کا مطالبہ

کنڑا ڈیولپمنٹ اتھارٹی کے چیرمین ٹی ایس ناگ بھرنا نے وزیر برائے پرائمری وسکینڈری تعلیم سریش کمار کو مکتوب روانہ کرکے اسکول میں کنڑا میں بات کرنے پر جرمانہ لگانے والے چنسندرا کے ایس ایل ایس انٹرنیشنل گروکل اسکول کی منظوری منسوخ کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔