بلدی انتخابات میں جے ڈی ایس کو زیادہ نشستیں ٹمکورسٹی کارپوریشن کیلئے 8مسلم کونسلرس منتخب

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 4th September 2018, 1:28 PM | ریاستی خبریں |

ٹمکور4؍ستمبر (ایس او نیوز) ٹمکور ضلع کے مقامی بلدی اداروں کے جملہ 155 کونسلروں کیلئے ہوئے انتخابات میں جے ڈی ایس پارٹی کو 52 وارڈوں میں کانگریس پارٹی کو 31اور بی جے پی کے 24امیدواروں کو کامیابی حاصل ہوئی ہے۔ اس کے علاوہ 8حلقوں میں آزاد امیدواروں نے جیت درج کرائی ہے اور کونسلر منتخب ہوئے ہیں۔ ٹمکور سٹی کارپوریشن کے جملہ 35وارڈوں میں بی جے پی کو 12 وارڈوں میں کامیابی ملی ہے۔جبکہ گزشتہ سال صرف 6کارپوریٹرس شامل تھے۔

کانگریس کے اس مرتبہ 10کونسلرس منتخب ہوئے ہیں جبکہ گزشتہ سال کانگریس پارٹی کے 14 کارپوریٹر تھے۔ جے ڈی ایس پارٹی کے بھی 10 امیدواروں کو جیت ملی ہے جبکہ اس سے قبل جے ڈی ایس کو 13 وارڈوں میں کامیابی ملی تھی۔ ان کے علاوہ ٹمکور بلدیہ میں 3آزاد کارپوریٹروں نے بھی جیت درج کرائی ہے۔

ٹمکور بلدیہ میں جملہ 8مسلمانوں نے کامیابی درج کرائی ہے، جن میں 6کانگریس اور ایک جے ڈی ایس اور ایک آزاد کونسلر شامل ہے۔ سابق رکن اسمبلی ایس نے اخباری نمائندوں کو بتایا کہ انہیں 15 سیٹوں پر کامیابی کی امید تھی۔ کئی وارڈوں میں 5تا 7 آزاد امیدواروں نے انتخاب لڑا۔ جس سے کانگریس کو نقصان پہنچا، اب ٹمکور بلدیہ پر کانگریس اور جے ڈی ایس اتحاد کا قبضہ ہوگا جملہ 20 کونسلروں کے ساتھ ایک ایم پی اور ایک ایم ایل سی کی حمایت کے ساتھ اکثریت حاصل ہوگی۔

بی جے پی کے رکن اسمبلی نے بتایا کہ انہیں کم سے کم 16 وارڈوں میں کامیابی کا یقین تھا مگر یہ ممکن نہیں ہوسکا۔ مدھوگری ٹاون منپسل کونسل میں کانگریس کو اکثریت حاصل ہوئی ہے اور جملہ 23سیٹوں میں سے 13 پر کانگریس امیدوار کامیاب رہے ہیں۔جبکہ جے ڈی ایس کو 9 وارڈوں میں کامیابی حاصل ہوئی ہے۔ اور 2آزاد امیدواروں نے کامیابی حاصل کی ہے۔ اس حلقہ میں جے ڈی ایس کے رکن اسمبلی نے کامیابی حاصل کی ہے۔دوسری طرف نائب وزیر اعلیٰ ڈاکٹر جی پرمیشور کے انتخابی حلقہ کورٹ گیرہ میں 5سیٹوں پر کانگریس، 8 میں جے ڈی ایس اور بی جے پی اور آزاد امیدوار کو ایک سیٹ پر کامیابی ملی ہے۔ گبی منسپل کونسل میں جے ڈی ایس کے 10،کانگریس کے 9 ، بی جے پی 6 اور ایک آزاد کونسلر کامیاب ہوئے ہیں۔چک نائکناہلی میں جے ڈی ایس کے 14، کانگریس کے 2اور بی جے پی کے 5 اور 2آزاد امیدوار کامیاب ہوئے ہیں۔ یہاں بی جے پی کے رکن اسمبلی مادھو سوامی کو منہ کی کھانی پڑی۔ ٹمکور کے مسلم امیدوار جنہوں نے کامیابی حاصل کی ہے ان کے نام اس طرح ہیں۔ عنایت اللہ خان، سید نیاز، مجیدہ خانم، شکیل احمد، نور النساء بانو، ناصرہ بانو، اسماعیل اور فریدہ شامل ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

مشاعروں کو با مقصد بنا کر نفرت کے ماحول کو پیار اور محبت میں بدلا جاسکتا ہے : سید شفیع اللہ

مشاعرے اردو زبان اور ادب کی تہذیب کے ساتھ ساتھ امن اور اتحاد کو فروغ دینے کا ذریعہ بھی ہیں۔ ملک اور سماج کے موجودہ حالات کو بہتر بنانے کیلئے زیادہ سے زیادہ مشاعروں کا انعقاد کیا جائے۔ بنگلورو میں بزم شاہین کے کل ہند مشاعرے میں ان خیالات کا اظہار کیا گیا۔

ٹیپوجینتی منسوخ کرنے کی کوئی تجویز نہیں ہے جواہر لال نہروکی جنم دن تقریب سے وزیراعلیٰ کااظہار خیال

کسانوں کی طرف سے حاصل کردہ زرعی قرضہ معاف کئے جانے کے سلسلہ میں شکوک وشبہات کا شکار نہ ہوں۔ قرضہ وصولی کیلئے کسانو ں کوغیر ضروری طور پر اذیت دی گئی تو بینک منیجرکو بھی گرفتار کیا جاسکتا ہے ۔

جمہوریت اوردستورکے تحفظ کے لیے ووٹر فہرست میں ناموں کا اندراج لازمی سی آر ڈی ڈی پی کی ملک گیر جدوجہد

مسلمانوں کے لیے ایوان میں کم ہورہی مسلم نمائندگی سے زیادہ تشویشناک صورتحال یہ ہے کہ ملک بھر میں ووٹرس فہرست سے کروڑوں مسلمانوں کے نام غائب ہیں۔ ایک سروے کے مطابق ملک میں تقریباً 25 فیصد سے زائد اہل ووٹروں کے نام فہرست سے غائب ہیں۔ اس اہم مسئلے پر ماہر معاشیات و سچر کمیٹی کے ممبر ...