ٹرمپ کے خیال میں شمالی کوریا امن کے لیے تیار ہے

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 11th March 2018, 8:23 PM | عالمی خبریں |

واشنگٹن 11مارچ (ایس او نیوز؍ آئی این ایس انڈیا )شمالی کوریا کے راہنما کم جونگ اْن کی طرف سے امریکی صدر سے ملاقات پر رضامندی کے اظہار کے بعد صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے خیال ظاہر کیا ہے کہ شمالی کوریا "امن قائم کرنے" کے لیے تیار ہے۔ہفتہ کو پنسلوینیا کے علاقے مون ٹاون شپ میں ایک سیاسی ریلی سے خطاب کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ ایسے میں جب شمالی کوریا اور امریکہ کے راہنماوں میں غیر معمولی روبرو ملاقات کی منصوبہ بندی جاری ہے، جوہری ہتھیار استعمال کرنے کے لیے ہر وقت تیار رہنے والے کم اب اپنے "میزائل نہیں چلائیں گے"۔انھوں نے مزید کہا کہ جب وہ کم سے ملیں گے تو "ہو سکتا ہے میں جلد ہی اٹھ جاوں یا شاید ہم بیٹھیں اور دنیا کا عظیم ترین معاہدہ کریں۔"ٹرمپ نے حال ہی میں جنوبی کوریا میں ہونے والے سرمائی اولمپکس کے کامیاب انعقاد کا تذکرہ کرتے ہوئے کہا کہ ان کی کوششوں کے بغیر یہ ممکن نہیں تھا کیونکہ انھوں نے جوہری حملے کے خطرے کو کم کرنے کے لیے کردار ادا کیا۔اپنی 75 منٹ کی تقریر میں ٹرمپ نے مختلف امور پر بات کی لیکن زیادہ وقت شمالی کوریا کے راہنما کی طرف سے ملاقات کی پیشکش بارے گفتگو میں صرف کیا۔ان کے بقول سابق امریکی صدور بھی یہ کر سکتے تھے لیکن ایسا نہیں ہوا۔پنسلوینیا سے وائٹ ہاوس روانگی کے وقت جب صحافیوں نے ان سے پوچھا کہ اس موقع پر ہی کیوں انھوں نے یہ پیشکش قبول کی تو صدر ٹرمپ کا کہنا تھا کہ "میرے خیال میں یہ بہت ہی کامیاب رہے گی، ہمیں بہت سی حمایت حاصل ہے۔"گزشتہ جمعرات کو جنوبی کوریا کے قومی سلامتی کے مشیر نے اعلان کیا تھا کہ شمالی کوریا کے راہنما امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ سے "جتنا جلد ممکن ہو" ملنے اور بات چیت کرنے کی خواہش رکھتے ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

انیس عامری ایک ’دہشت گرد سیل‘ کا حصہ تھا: جرمن میڈیا

برلن میں دو برس قبل ایک کرسمس مارکیٹ پر ٹرک کے ذریعے حملہ کرنے والا انیس عامری’تنہا بھیڑیا‘ نہیں تھا بلکہ ممکنہ طور پر اس کا تعلق ایک سلفی سیل سے تھا، جس نے اسے اس حملے میں مدد دی تھی۔جرمن میڈیا پر ہفتے کے روز سامنے آنے والی رپورٹوں کے مطابق برلن کرسمس مارکیٹ حملے کے فقط دو ...

فرانسیسی شہروں میں زرد جیکٹوں والے مظاہرین کا احتجاج

فرانس کے مختلف شہروں میں زرد جیکٹوں والے حکومت مخالف مظاہرین مسلسل پانچویں ویک اینڈ پر احتجاج کے لیے جمع ہیں۔ صدر ایمانوئل ماکروں کی حکومت کے خلاف مظاہروں کا یہ سلسلہ ایندھن کی قیمتوں میں اضافے پر شروع ہوا تھا۔ فرانسیسی دارالحکومت پیرس میں مظاہرین کی پرتشدد کارروائیوں کو ...

سری لنکا کے برخاست وزیراعظم پر پارلیمان کا اعتماد

رواں برس اکتوبر میں برخاست کیے جانے والے سری لنکن وزیراعظم رانیل وکرمے سنگھے نے پارلیمنٹ میں اعتماد کا ووٹ حاصل کر لیا ہے۔ آج بدھ کو ہونے والی رائے شماری میں 225 رکنی ایوان میں وکرمے سنگھے کی حمایت میں 117 اراکین نے ووٹ ڈالا

امریکی فوج نے شمالی شام میں مبصر چوکیاں قائم کر دیں

امریکی وزارت دفاع نے اعلان کیا ہے کہ اْس کی افواج نے شمالی شام میں مبصر چوکیاں قائم کر دیں ہیں۔ اس اعلان میں ان چوکیوں کی تعداد اور مقامات کی وضاحت نہیں کی گئی ہے۔ اسی علاقے میں شامی کردوں کی ملیشیا وائی پی جی ایک بڑے علاقے پر قابض ہے

برطانوی وزیر اعظم کو درپیش قیادت کا چیلنج: کیوں اور کیسے؟

برطانوی پارلیمان کے ارکان نے قدامت پسند وزیر اعظم ٹریزا مے کے خلاف عدم اعتماد کی تحریک پیش کر دی ہے، جس پر رائے شماری آج بدھ بارہ دسمبر کو ہو رہی ہے۔ سوال یہ ہے کہ یہ تحریک پیش کیے جانے کے بعد اب ہو گا کیا ۔برطانوی وزیر اعظم ٹریزا مے نے اسی ہفتے پیر کا دن یورپ کے مختلف ممالک کے ...