امریکی صدر ٹرمپ اپنے مسودے سے ہٹ گئے، خفیہ معلومات کا تبادلہ کیا

Source: S.O. News Service | By Sheikh Zabih | Published on 16th May 2017, 7:29 PM | عالمی خبریں |

نیویارک،16مئی(ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا)امریکی حکام نے امریکی میڈیا کو بتایا ہے کہ صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے روس سے شدت پسند تنظیم دولتِ اسلامیہ کے بارے میں انتہائی خفیہ معلومات کا تبادلہ کیا ہے۔اخبار واشنگٹن پوسٹ نے لکھا ہے کہ یہ معلومات ایک ایسے اتحادی کی جانب سے آئی تھیں جس نے امریکہ کو انھیں روس تک پہنچانے کی اجازت نہیں دی تھی۔قومی سلامتی کے مشیر ایچ آر میک ماسٹر نے وائٹ ہاؤس کے باہر نامہ نگاروں کو بتایا: 'یہ خبر جیسے بیان ہوئی ہے، وہ غلط ہے۔ صدر اور (روسی) وزیرِ خارجہ نے دونوں ملکوں کو لاحق خطرات کا جائزہ لیا، جن میں شہری ہوابازی کو درپیش خطرے شامل ہیں۔اس دوران کسی بھی وقت خفیہ معلومات کے ذرائع یا طریقوں پر بات نہیں ہوئی، اور صدر نے ایسی کسی فوجی کارروائی کا ذکر نہیں کیا جو پہلے ہی سے لوگوں کو معلوم نہ ہو۔امریکہ میں ٹرمپ انتظامیہ کے روس کے ساتھ تعلقات کا معاملہ خاصا گرم ہے، اور اس بارے میں متعدد تحقیقات جاری ہیں۔تاہم امریکی صدر ان الزامات کو 'جعلی خبر' کہہ کر مسترد کرتے آئے ہیں۔
حکام نے واشنگٹن پوسٹ اور نیویارک ٹائمز کو بتایا ہے کہ اوول آفس میں روسی سفیر سرگے کسلی ایک کے ساتھ بات چیت کے دوران امریکی صدر نے کچھ ایسی معلومات کا تبادلہ کیا جن کے نتیجے میں ان کا ماخذ ظاہر ہو سکتا ہے۔یہ گفتگو دولتِ اسلامیہ کے ایک منصوبے کے بارے میں ہو رہی تھی جس کے دوران امریکی صدر اپنے 'مسودے سے ہٹ گئے۔' اخباروں نے لکھا ہے کہ یہ خفیہ معلومات ایک امریکی اتحادی کی جانب سے آئی تھیں اور اس قدر حساس تھیں کہ انھیں دوسری امریکی اتحادیوں کو نہیں بتایا جا سکتا تھا۔وہاں موجود دوسرے لوگوں کو اس غلطی کا اندازہ ہو گیا اور انھوں نے اس کا ازالہ کرنے کے لیے سی آئی اے اور نیشنل سکیورٹی ایجنسی کو مطلع کر دیا۔
یہ ملاقات اس کے ایک روز بعد ہوئی تھی جب صدر ٹرمپ نے ایف بی آئی کے ڈائریکٹر جیمز کومی کو برطرف کیا تھا۔ اس پر ایک تنازع اٹھ کھڑا ہوا تھا کہ اس برطرفی کی اصل وجہ یہ تھی کہ کومی امریکی صدر کے روس کے ساتھ تعلقات کی تفتیش کر رہے تھے۔اس ملاقات کی ایک اور خاص بات یہ تھی کہ اس میں روسی فوٹوگرافر موجود تھے تاہم امریکی میڈیا کو اس کی رپورٹنگ کی اجازت نہیں دی گئی تھی۔سینیٹ میں دوسرے سب سے اعلیٰ عہدے دار ڈک ڈبرن نے کہا کہ ٹرمپ کا اقدامات 'خطرناک اور اندھا دھند ہیں۔سینیٹ کی خارجہ تعلقات کی کمیٹی کے رپبلکن سربراہ باب کورکر نے کہا کہ اگر یہ خبر درست ہے تو انتہائی تشویش ناک ہے۔امریکی وزیرِ خارجہ ریکس ٹلرسن نے بھی ایک بیان میں کہا کہ اس ملاقات میں 'درپیش خطرات کی نوعیت پر بات ہوئی، نہ کہ ذرائع، طریقہ کار یا فوجی آپریشن کے بارے میں۔تاہم واشنگٹن پوسٹ نے، جس نے سب سے پہلے یہ خبر دی تھی، کہا کہ اس سے ان کی خبر کی تردید نہیں ہوتی۔

ایک نظر اس پر بھی

کشنز نے روس کے ساتھ خفیہ رابطہ لائن قائم کرنے کی تجویز دی، رپورٹ

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی انتظامیہ کے روس کے ساتھ تعلقات کا اسکینڈل دن بدن شدت اختیار کرتا جا رہا ہے۔ امریکی صدر کے چھتیس سالہ داماد جیرڈ کْشنرڈونلڈ ٹرمپ کے انتہائی قریبی مشیر ہیں۔ واشنگٹن پوسٹ کی تازہ رپورٹ کے مطابق وہ ایک ملاقات میں یہاں تک چلے گئے کہ انہوں نے امریکا میں قائم ...

افغانستان: خودکش کار بم حملے میں 18 افراد ہلاک

افغانستان کے مشرقی صوبے میں ہفتہ کو ہونے والے ایک خودکش کار بم حملے میں کم ازکم 18 افراد ہلاک ہو گئے۔وزارت داخلہ کے نائب ترجمان نجیب دانش کے مطابق خودکش کار بم حملے کا نشانہ مقامی فورسز کا ایک قافلہ تھا لیکن مرنے والوں میں اکثریت عام شہریوں کی ہے۔

شام میں ایرانی فوجی اڈے کے قیام پر امریکی انتباہ ارکان کانگریس کا وزیرخارجہ و دفاع کو مکتوب

امریکی کانگریس کے دو سرکردہ ارکان نے اپنی حکومت کو خبردار کیا ہے کہ ایران شام میں فوجی اڈہ قائم کرنے کے لیے کوشاں ہے۔ انہوں نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ وہ شام میں ایرانی فوجی اڈے کے قیام کی کوششوں کو ناکام بنانے کے لیے ضروری اقدامات کرے۔

انٹیلی جنس کمیٹی نے ٹرمپ مہم کی دستاویزات طلب کر لیں: رپورٹ

امریکہ میں 2016 کے صدارتی انتخاب میں مبینہ روسی مداخلت کی تحقیقات کرنے والی سینیٹ کی انٹیلی جنس کمیٹی نے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی مہم سے کہا ہے کہ وہ جون 2015 میں اس کے آغاز سے لے کر اپنی تمام دستاویزات اس کے حوالے کرے۔یہ بات امریکہ کے موقر اخبار واشنگٹن پوسٹ میں ان دو افراد کے حوالے سے ...

سری لنکا: مٹی کے تودے گرنے سے ہلاکتوں کی تعداد 100 ہوگئی

سری لنکا کی حکومت نے کہا ہے کہ جمعہ کو وسطی صوبے کے علاقے اگالاوتے میں سیلابوں اور مٹی کے تودے گرنے سے ہونے والی ہلاکتوں کی تعداد 100 تک پہنچ گئی ہے جب کہ 99 افراد اب بھی لاپتہ ہیں۔سکیورٹی فورسز اور دیگر امدادی کارکنان ہفتہ کو بھی لاپتا افراد کی تلاش اور متاثرہ لوگوں کی امداد کی ...

موصل میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کی سرکاری تحقیقات داعش کے زیرتسلط شہریوں کو محفوظ راہ داریوں سے گذرنے کی اجازت

عراقی وزارت داخلہ نے دہشت گرد تنظیم ’داعش‘ کے خلاف جاری لڑائی کے دوران انسانی حوق کی خلاف ورزیوں کے واقعات کی سرکاری سطح پر تحقیقات کا فیصلہ کیا ہے۔جرمن اخبار ’دیر اسپیگل‘ کی رپورٹ کے مطابق عراقی سیکیورٹی فورسز اور اس کی مدد گار شیعہ ملیشیا پر موصل میں داعش کے خلاف لڑائی کے ...