صدر ٹرمپ کا شام سے متعلق فیصلے کے لیے لاطینی امریکا کا پہلا دورہ منسوخ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 11th April 2018, 5:01 PM | عالمی خبریں |

واشنگٹن11اپریل (ایس او نیوز؍ آئی این ایس انڈیا) وائٹ ہاؤس نے منگل کے روز اچانک صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا لاطینی امریکا کا پہلا دورہ منسوخ کرنے کا اعلان کردیا ہے۔ امریکی صدر اسی ہفتے اس دورے پر روانہ ہونے والے تھے۔وائٹ ہاؤس کا کہنا ہے کہ صدر ٹرمپ شام کے بارے میں امریکی ردعمل اور فیصلے کی نگرانی چاہتے ہیں۔اس لیے وہ ملک ہی میں قیام کریں گے۔وائٹ ہاؤس نے یہ بیان ایسے وقت میں جاری کیا ہے جب صدر ٹرمپ جنگ زدہ شام کے خلاف فضائی کارروائی پر غور کررہے ہیں اور اس سے چندے قبل ہی وفاقی ادارہ تحقیقات (ایف بی آئی) کے ایجنٹوں نے ان کے ذاتی وکیل مائیکل کوہن کے دفاتر میں چھاپا مار کارروائی کی ہے۔وائٹ ہاؤس کی پریس سیکریٹری سارہ سینڈرس کے اعلان کے مطابق اب صدر ٹرمپ کی جگہ نائب صدر مائیک پینس پیرو جائیں گے جہاں وہ دارالحکومت لیما میں امریکی سربراہ کانفرنس میں شرکت کریں گے۔انھوں نے کہا کہ صدر پہلے سے طے شدہ شیڈول کے مطابق لیما میں ہونے والی آٹھویں امریکی سربراہ کانفرنس میں شرکت کریں گے اور نہ وہ بوگوٹا ، کولمبیا جائیں گے۔وہ شام کے بارے میں امریکی ردعمل اور دنیا بھر میں ہونے والی تازہ پیش رفت کی نگرانی کے لیے ملک ہی میں رہیں گے۔انھوں نے مزید بتایا ہے کہ نائب صدر مائیک پینس صدر کے دورے کے شیڈول کے مطابق کولمبیا بھی جائیں گے۔واضح رہے کہ صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے سوموار کو ایک بیان میں کہا تھا کہ شام کے بارے میں آیندہ دو ایک روز ( 24 سے 48 گھنٹے ) میں بڑے فیصلے کیے جارہے ہیں۔اس سے پہلے انھوں نے شام کو خبردار کیا تھا کہ اس کو باغیوں کے زیر قبضہ شہر دوما پر کیمیائی حملے کی بھاری قیمت چکانا پڑے گی۔

ایک نظر اس پر بھی

نیویارک کے مرکزی علاقے میں زیر زمین بھاپ پائپ لائن پھٹنے سے دھماکے

نیویارک شہر کے فائر ڈپارٹمنٹ نے کہا ہے کہ مین ہیٹن کی گلیوں میں زیر زمین گزرنے والا ایک ہائی پریشر بھاپ کا پائپ پھٹ گیا جس کے نتیجے میں ففتھ ایونیو کے مرکز میں واقع ایک سوراخ سے بھاپ نکل کر ہوا میں پھیلنا شروع ہو گئی۔

ترک بچوں اور خواتین کا جنسی استحصال کرنے والا خود ساختہ مذہبی رہنما گرفتار

استنبول کی ایک عدالت نے بزعم خود ایک اسلامی فرقے کے رہنما اور ٹی وی پر تبلیغ کرنے والی شخصیت عدنان اوکتار کو 115 دیگر پیروکاروں سمیت مختلف الزامات کی مزید تفتیش کے لئے پولیس کے حوالے کر دیا ہے۔ عدنان اوکتار پر جرائم پیشہ گینگ قائم کرنے، دھوکادہی اور جنسی استحصال کے الزامات ہیں۔

مقتدیٰ الصدر نے مظاہرین کی حمایت کردی ،نئی حکومت کی تشکیل مُوَخَّر کرنے کا مطالبہ

عراق کے سرکردہ شیعہ لیڈر مقتدیٰ الصدر نے ملک کے جنوبی صوبوں میں احتجاج کرنے والے مظاہرین کی حمایت کردی ہے او ر تمام متعلقہ سیاست دانوں پر زور دیا ہے کہ وہ مظاہرین کے بہتری شہری خدما ت کی فراہمی کے مطالبات پورے ہونے تک نئی حکومت کی تشکیل کے لیے مذاکرات کا سلسلہ معطل کردیں ۔