بچوں کی سلامتی کے لئے اسکول بسوں میں تمام اصولوں پر عمل کیا جائے: اڈوپی کی ڈپٹی کمشنر کی ہدایت

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 18th May 2017, 1:11 AM | ریاستی خبریں |

اڈوپی,کرناٹک:17/مئی (یواین آئی) بچوں کو لانے والی اسکول کی گاڑیوں کو چاہئے کہ وہ لازمی طور پر حکومت کے اصولوں پر عمل کریں تاکہ بچوں کی سلامتی اور سکیورٹی کو یقینی بنایا جاسکے۔ گاڑی مالکین ' ڈرائیورس اور تعلیمی اداروں کے لئے یہ لازمی ہے۔ڈپٹی کمشنر اڈوپی ضلع پرینکا میری فرانسیس نے یہ بات بتائی۔ انہوں نے گاڑی مالکین ' ڈرائیورس ' تعلیمی اداروں کے سربراہوں ' ریجنل ٹرانسپورٹ آفیسر' محکمہ تعلیم کے افسروں ' پولیس کے افسروں کے ساتھ ایک میٹنگ سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اسکول کی گاڑیوں کی انشورنس پالیسی ' فٹنس ریکارڈ ' ابتدائی طبی امداد کی دواوں کے ڈبے ' ایمرجنسی دروازے ' حادثات کی صورت میں سلامتی کے اصول ہونے چاہئے۔ ان گاڑیوں کا رنگ زرد ہونا چاہئے اور اس پر 4مقامات پر اسکول کی گاڑی تحریر ہونی چاہئے۔گاڑیوں میں اسپیڈ ریگولیٹرس کی بھی ضرورت ہے اور گاڑیوں کو بہتر حالت میں رکھا جاناچاہئے۔ اسکول کی گاڑیوں میں صرف رجسٹرڈ طلبہ کو ہی بٹھاناہوگا۔انہوں نے آرٹی او کو ہدایت دی کہ محفوظ ڈرائیونگ اور ڈرائیورس کے لئے دیگر سلامتی سے متعلق مسائل پر تربیت فراہم کی جائے۔ا سکولس کے حکام کو چاہئے کہ وہ ڈرائیورس کے پس منظر کی بھی جانچ کرلیں اور یہ بھی پتہ لگائیں کہ اس کے پاس مستند ڈرائیونگ لائسنس ہے۔بارش کے موسم کے دوران ڈرائیورس کو عجلت نہیں کرنی چاہئے اور نہ ہی دیگر گاڑیوں کے ساتھ مسابقت کرنی چاہئے۔ ڈرائیورس کو چاہئے کہ بغیر کسی تاخیر کے بچوں کو بس میں بٹھاتے ہوئے انہیں چھوڑیں۔اسکولوں اور ڈرائیورس کو چاہئے کہ وہ کسی بھی ہنگامی صورتحال کے دوران طلبہ کے پتہ ' فون نمبرات اور دیگر تفصیلات بھی اپنے ساتھ رکھیں۔بارش کے موسم کے دوران بروقت اسکول تک رسائی ممکن نہیں ہے۔ اسکول حکام تیز گاڑی چلانے کے لئے ڈرائیورس کو مجبور نہ کریں۔ ا نہو ں نے ہائی وے حکام کو ہدایت دی کہ وہ اسکولس کے قریب سگنل بورڈس نصب کریں اور غلط سائیڈ پر گاڑی چلانے وا لوں کے خلا ف کارروائی کریں۔ساتھ ہی ہائی وے پٹرولنگ پولیس سڑک کے قواعد پر عمل نہ کرنے والوں کے خلاف بھی کارروائی کریں۔ تمام اسکولس کے حکام کو چاہئے کہ ہر تین ماہ ایک مرتبہ بچوں کی سلامتی کی کمیٹی کی میٹنگ طلب کرے۔اس میٹنگ کے دوران والدین ' اسکول حکام اور ڈرائیورس کو چاہئے کہ وہ طلبہ کی سلامتی کے لئے کئے جانے والے اقدامات پر تبادلہ خیال کریں۔انہو ں نے کہا کہ بچوں کی سلامتی کے اقدامات ' ان کے حقوق ' پی او ایس سی او کی بنیاد پر کئے جانے والے اقدامات کے سلسلہ میں تمام ڈسٹرکٹ ' سرکاری اور پرائیویٹ اسکولس کا معائنہ کیا جائے گا۔

ایک نظر اس پر بھی

کماراسوامی بنے کرناٹک کے نئے وزیراعلیٰ ؛ جی پرمیشور نے لیا ڈپٹی سی ایم کا حلف؛ بنگلور میں سیکولر پارٹیوں کے لیڈروں  کا میگا شو

طویل عرصہ سے چل رہے کرناٹک  کے اقتدار کی  جدوجہد بالاخر آج رنگ لائی اور کانگریس کی حمایت سے جے ڈی ایس سربراہ کماراسوامی نے وزیراعلیٰ کا حلف لیتے ہوئے  بی جے پی کے لئے کٹھے انگور ثابت ہوگئے۔ ان کے ساتھ جی پرمیشور نے ڈپٹی وزیراعلیٰ کا حلف لیا۔

سیول سروس میں دلچسپی رکھنے والوں کے لئے زبردست خوش خبری؛ مینگلور میں ایس سیول سروس اکیڈمی میں دی جارہی ہے بہترین کوچنگ

  ملک کی  ایڈمنسٹریشن میں مسلمانوں کی تعداد نہ کے برابر ہونے کی وجہ سےآج پورے ملک کے مسلمانوں میں تشویش کی لہر پائی جارہی ہے ، جس کو دیکھتے ہوئے نوجوانوں میں بیداری پیدا کی جارہی ہے کہ وہ بڑی تعداد میں  ملک کی ایڈمنسٹریشن میں شامل ہوکر   ملک کی ترقی میں اپنی صلاحیتوں کو بروئے ...

کرناٹکااسمبلی میں وزیراعلیٰ کے بطور کمارا سوامی کی حلف برداری ۔منگلورو میں امتناعی احکامات کا نفاذ

کانگریس اور جے ڈی ایس مشترکہ محاذ کی طرف سے آج شام ودھان سودا میں جنتا دل کے ریاستی سیکریٹری ایچ ڈی کمارا سوامی بطور وزیر اعلیٰ حلف لینے اور اعتماد کا ووٹ حاصل کرنے والے ہیں ۔ اس پس منظر میں شہر منگلورو میں حالات کو پر امن بنائے رکھنے کے لئے امتناعی احکامات کا نفاذ کردیا گیا ہے۔

آج کمار سوامی کرناٹک کے 24ویں وزیراعلیٰ کا حلف لیں گے مسلم لیڈر کو نائب وزیراعلیٰ بنانے کا وعدہ جے ڈی ایس پورا کرے گی؟

کانگریس جے ڈی ایس مخلوط حکومت کی حلف برداری تقریب کے لئے تیاریاں تقریباً مکمل ہوچکی ہیں۔ چہارشنبہ کی شام 4:30؍بجے ودھان سودھا کے روبرو ایچ ڈی کمار سوامی کرناٹک کے 24ویں وزیراعلیٰ کی حیثیت سے حلف لیں گے۔ ان کے ساتھ کے پی سی سی صدر ڈاکٹر جی پرمیشور نائب وزیراعلیٰ کی حیثیت سے حلف ...

کرناٹک اسمبلی انتخابات میں دھاندلی:یدی یورپا کی چیف الیکشن کمشنر سے شکایت

کرناٹک کے وجئے پورہ ضلع کے ایک مکان میں ووٹر ویری فیبل آڈٹ ٹرائیل مشینوں کے پائے جانے کے واقعہ کے بعد سابق وزیراعلی یدی یورپا نے چیف الیکشن کمشنر کو ایک مکتوب تحریر کرتے ہوئے الزام لگایا ہے کہ حال ہی میں منعقدہ کرناٹک اسمبلی انتخابات میں بڑے پیمانہ پربے قاعدگیاں ہوئی ہیں۔