بچوں کی سلامتی کے لئے اسکول بسوں میں تمام اصولوں پر عمل کیا جائے: اڈوپی کی ڈپٹی کمشنر کی ہدایت

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 18th May 2017, 1:11 AM | ریاستی خبریں |

اڈوپی,کرناٹک:17/مئی (یواین آئی) بچوں کو لانے والی اسکول کی گاڑیوں کو چاہئے کہ وہ لازمی طور پر حکومت کے اصولوں پر عمل کریں تاکہ بچوں کی سلامتی اور سکیورٹی کو یقینی بنایا جاسکے۔ گاڑی مالکین ' ڈرائیورس اور تعلیمی اداروں کے لئے یہ لازمی ہے۔ڈپٹی کمشنر اڈوپی ضلع پرینکا میری فرانسیس نے یہ بات بتائی۔ انہوں نے گاڑی مالکین ' ڈرائیورس ' تعلیمی اداروں کے سربراہوں ' ریجنل ٹرانسپورٹ آفیسر' محکمہ تعلیم کے افسروں ' پولیس کے افسروں کے ساتھ ایک میٹنگ سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اسکول کی گاڑیوں کی انشورنس پالیسی ' فٹنس ریکارڈ ' ابتدائی طبی امداد کی دواوں کے ڈبے ' ایمرجنسی دروازے ' حادثات کی صورت میں سلامتی کے اصول ہونے چاہئے۔ ان گاڑیوں کا رنگ زرد ہونا چاہئے اور اس پر 4مقامات پر اسکول کی گاڑی تحریر ہونی چاہئے۔گاڑیوں میں اسپیڈ ریگولیٹرس کی بھی ضرورت ہے اور گاڑیوں کو بہتر حالت میں رکھا جاناچاہئے۔ اسکول کی گاڑیوں میں صرف رجسٹرڈ طلبہ کو ہی بٹھاناہوگا۔انہوں نے آرٹی او کو ہدایت دی کہ محفوظ ڈرائیونگ اور ڈرائیورس کے لئے دیگر سلامتی سے متعلق مسائل پر تربیت فراہم کی جائے۔ا سکولس کے حکام کو چاہئے کہ وہ ڈرائیورس کے پس منظر کی بھی جانچ کرلیں اور یہ بھی پتہ لگائیں کہ اس کے پاس مستند ڈرائیونگ لائسنس ہے۔بارش کے موسم کے دوران ڈرائیورس کو عجلت نہیں کرنی چاہئے اور نہ ہی دیگر گاڑیوں کے ساتھ مسابقت کرنی چاہئے۔ ڈرائیورس کو چاہئے کہ بغیر کسی تاخیر کے بچوں کو بس میں بٹھاتے ہوئے انہیں چھوڑیں۔اسکولوں اور ڈرائیورس کو چاہئے کہ وہ کسی بھی ہنگامی صورتحال کے دوران طلبہ کے پتہ ' فون نمبرات اور دیگر تفصیلات بھی اپنے ساتھ رکھیں۔بارش کے موسم کے دوران بروقت اسکول تک رسائی ممکن نہیں ہے۔ اسکول حکام تیز گاڑی چلانے کے لئے ڈرائیورس کو مجبور نہ کریں۔ ا نہو ں نے ہائی وے حکام کو ہدایت دی کہ وہ اسکولس کے قریب سگنل بورڈس نصب کریں اور غلط سائیڈ پر گاڑی چلانے وا لوں کے خلا ف کارروائی کریں۔ساتھ ہی ہائی وے پٹرولنگ پولیس سڑک کے قواعد پر عمل نہ کرنے والوں کے خلاف بھی کارروائی کریں۔ تمام اسکولس کے حکام کو چاہئے کہ ہر تین ماہ ایک مرتبہ بچوں کی سلامتی کی کمیٹی کی میٹنگ طلب کرے۔اس میٹنگ کے دوران والدین ' اسکول حکام اور ڈرائیورس کو چاہئے کہ وہ طلبہ کی سلامتی کے لئے کئے جانے والے اقدامات پر تبادلہ خیال کریں۔انہو ں نے کہا کہ بچوں کی سلامتی کے اقدامات ' ان کے حقوق ' پی او ایس سی او کی بنیاد پر کئے جانے والے اقدامات کے سلسلہ میں تمام ڈسٹرکٹ ' سرکاری اور پرائیویٹ اسکولس کا معائنہ کیا جائے گا۔

ایک نظر اس پر بھی

رکن کونسل بائرتی سریش کی امیر شریعت سے ملاقات

سینئر کانگریس لیڈر اور رکن کونسل بائرتی سریش نے دارالعلوم سبیل الرشاد پہنچ کرامیر شریعت مفتی محمد اشرف علی سے ملاقات کی اور ان سے دعائیں لیں، پچھلے اسمبلی ضمنی انتخابات میں ہبال اسمبلی انتخاب میں کانگریس کی ٹکٹ کیلئے کوشش کرنے والے بائرتی سریش بحیثیت رکن کونسل اپنے حلقہ کے ...

فروغ ہنر سے استفادہ کرنے انجینئروں کو آواز

وشویشوریا ٹیکنیکل یونیورسٹی کی طرف سے دو سو کروڑ روپیوں کی لاگت پر فروغ ہنر مرکز قائم کیاگیا ہے ،جہاں ڈگری یافتہ انجینئرس مختلف فنون کی تربیت کا استفادہ کرسکتے ہیں اور اپنی تعلیم کے ساتھ منتخب ہنر میں غیر معمولی مہارت حاصل کرسکتے ہیں۔ یہ بات آج اس فروغ ہنر سنٹر کے وائس چانسلر ...

بی بی ایم پی کی طرف سے اندراکینٹین کی بروقت شروعات مشکوک

ریاستی حکومت کی طرف سے برہت بنگلور مہانگر پالیکے کی حدود میں یوم آزادی کے موقع پر بڑے پیمانے پر اندرا کینٹین کی شروعات کرکے یہاں پر پانچ روپیوں میں ناشتہ اور دس روپیوں میں دوپہر اور شام کا کھانا مہیا کرانے کا اعلان کیا گیا ہے ، ایسا نہیں لگتا کہ وہ یوم آزادی تک جامۂ حقیقت پہن ...

بی بی ایم پی کے اگلے میئر کے انتخاب کی تیاریاں

برہت بنگلور مہانگر پالیکے کی موجودہ میئر جی پدماوتی کی میعاد 10ستمبر کو پوری ہوجائے گی۔اس کے ساتھ ہی شہر کے اگلے میئر کی تلاش بھی زور پکڑ چکی ہے۔ آنے والی میعاد میں جو بھی میئر بنے گا اس پر انتخابی سال کا دباؤ کافی زیادہ رہے گا۔ جنتادل (ایس) اور آزاد اراکین کے ساتھ کی بدولت پچھلے ...

لنگایت فرقہ کو الگ مذہب کا درجہ دینے کی مانگ، بی جے پی اور آر ایس ایس کے پیروں تلے زمین کھسکنے لگی

ریاست میں لنگایت طبقے کو الگ مذہب کا درجہ دینے کے مطالبے سے پریشان آر ایس ایس نے مطالبہ کیا ہے کہ اس تنازعہ کو سلجھانے کیلئے ایک غیر سیاسی کمیٹی تشکیل دی جائے۔ آر ایس ایس کی طرف سے ریاستی حکومت کے موقف کی نکتہ چینی کرتے ہوئے کہاگیا ہے کہ لنگایت طبقہ کو علیحدہ مذہب کا درجہ دینے ...

کرناٹک کو بی جے پی سے پاک ریاست بنایا جائے گا: سدرامیا

وزیر اعلیٰ سدرامیا نے آج یہ بات دہرائی کہ ریاست میں انتخابات کے بعد ایک بار پھر کانگریس حکومت ہی برسر اقتدار آئے گی اور کرناٹک میں بی جے پی کو پنپنے نہیں دیا جائے گا۔ ہاویری میں سرکاری پروگراموں میں شرکت کیلئے روانگی سے قبل ہبلی میں اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے سدرامیا ...