ہونسور کے قریب ہوئے حادثے میں الال کے تین افراد ہلاک، کئی زخمی

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 14th November 2017, 9:48 PM | ساحلی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

میسورو14؍نومبر (ایس او نیوز) میسورو اور ہونسور کے درمیان پیش آنے والے ایک سڑک حادثے میں الال و تھوکٹوکے تین افراد ہلاک اور کئی زخمی ہونے کی اطلاع ملی ہے۔

موصولہ رپورٹ کے مطابق صبح 4بجے کے وقت پیش آئے اس حادثے میں موقع پر ہی ہلاک ہونے والوں کی شناخت عبدالحمید (40سال)، ان کے فرزند عاقب (18سال) اور بھائی اقبال (34سال) کے طور پر کی گئی ہے۔کہاجاتا ہے کہ تھوکٹو کے رہنے والے ایک ہی خاندان کے 17افراد پر مشتمل ایک گروپ میسورو اور اطراف کے مقامات کی سیاحت کے لئے ٹیمپو ٹراویلر میں روانہ ہوا تھا۔مگر سیاحت کا یہ سفر کچھ لوگوں کے لئے اس وقت موت کا سفر بن گیا جب ان کی ٹیمپو سے ایک ٹرک کی ٹکر ہوگئی۔پولیس نے جائے حادثہ پر پہنچ کر لاشوں کو پوسٹ مارٹم کے لئے روانہ کیا اور زخمیوں کو علاج کے لئے اسپتال میں منتقل کیا۔ جن میں سے کچھ کی حالت نازک بتائی جاتی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

دیہاتوں کے ندی نالوں پر بانس اور لکڑیوں سے بنے جھولتے ہوئے پُل عوام کے لیے خطرے کی گھنٹیاں؛ عوام اپنے مسائل کواپنے ہی وسائل کے مطابق حل کرنے اور خطرات بھری زندگی بسر کرنے پر مجبور

جدیدٹیکنالوجی کے ساتھ ہمارے ملک اورشہروں کی ترقی تیز تر ہوتی جارہی ہے۔ جب ہم ملک کی ترقی کی بات کرتے ہیں توصرف شہروں کی ترقی سے کام نہیں چلے گا۔ بلکہ قصبوں اور دیہاتوں کی ترقی بھی اتنی ہی ضروری ہے۔جب تک شہروں اوردیہاتوں کے مابین رابطہ بہتر نہیں ہوتا تب تک عوام کی زندگی میں ...

پانچ دنوں تک بیوی کی لاش کے ساتھ پڑا رہا معذور شوہر !

شہر کی کے ایچ بی کالونی میں ایک انتہائی دردناک اورقابل صد افسوس واقعہ پیش آیا ہے جس میں بیماری کی وجہ سے معذورشوہر پانچ دنوں تک اپنی بیوی کی سڑتی ہوئی لاش کے ساتھ پڑا رہا اور کسی کو کانوں کان خبر بھی نہیں ہوئی۔ 

بھٹکل :میڈیکل اور ڈینٹل کورسس کی فیس میں تین گنااضافہ :اے سی کے توسط سے وزیربرائے طبی تعلیم کو میمورنڈم

سال 2018-2019کے میڈیکل اور ڈینٹل کورسس کے لئے فیس میں تین گنا اضافہ کئے جانے سے غریب طلباکو  میڈیکل میدان سے محروم کئے جانے کا حکومت پر الزام عائد کرتے ہوئے اے بی وی پی بھٹکل شاخ  کے ممبران نے بھٹکل اسسٹنٹ کمشنر کی معرفت ریاستی وزیر برائے میڈیکل تعلیم کو میمورنڈم سونپا۔

بھٹکل بس اسٹائنڈ کی بوسیدہ عمارت منہدم : کوئی جانی یا مالی نقصان نہیں

بھٹکل کے لئے  ہائی ٹیک بس اسٹانڈ کی تعمیر جاری رہتے پیر کی دوپہر بھٹکل بس اسٹانڈ کی عمارت  منہدم ہوکر تاریخ کا حصہ بن گئی ۔ بارش کی وجہ سے عمارت کی دیواریں اور پتھر ایک ایک کرکے گرنے لگے  تھے پیر کی دوپہر عمارت پوری طرح منہدم ہوگئی ۔ پیشگی طورپر خستہ حال عمارت کی بوسیدگی دیکھتے ...

ساحل آن لائن کے مینجنگ ایڈیٹر کو صحافتی خدمات کے اعتراف میں ضلعی ایوارڈ : ایوارڈ یافتہ بھٹکل کے پہلے اور ضلع کے پہلے مسلم صحافی

ملک عزیز میں اپنی شناخت رکھنے والے ریاست کرناٹک ، بھٹکل کے  معروف آن لائن نیوز پورٹل ساحل آن لائن کے مینجنگ ایڈیٹر عنایت اللہ گوائی کو ضلعی سطح کے" جی ایس ہیگڈے اجّیبل ایوارڈ" سےاتوار 15 جولائی کو ضلع اُترکنڑا کے معروف سیاحتی مقامی گوکرن میں  اُترکنڑا  ورکنگ جرنلسٹ اسوسی ایشن ...

12؍ سالوں سے جیل میں مقید ملزم کی پیرول پر رہائی کی عرضداشت سماعت کے لیئے منظور ضعیف والدین کے علاج کے لیئے درخواست سپریم کورٹ میں داخل کی گئی، گلزار اعظمی

  گذشتہ 12؍ سالوں سے جیل کی سعوبتیں جھیلنے والے ایک مسلم قیدی کی اس کے ضعیف والدین کے علاج کے لئے جیل سے پیرول پر رہائی کے لیئے سپریم کورٹ آف انڈیا میں داخل عرضداشت پر آج عدالت نے کارروائی کرتے ہوئے مہاراشٹر حکومت کی نمائندگی کرنے والے وکیل کو حکم دیا

پلوامہ میں نیشنل کانفرنس لیڈر کے گھر پر حملہ، ایک پولیس اہلکار ہلاک، ہتھیار بھی چھین لیے گئے

جنوبی کشمیر کے ضلع پلوامہ کے مرن میں پیر کے روز جنگجوؤں نے نیشنل کانفرنس کے ایک لیڈر کی حفاظت پر مامور ریاستی پولیس کے اہلکاروں پر فائرنگ کرکے ایک کو ہلاک جبکہ دوسرے ایک کو شدید طور پر زخمی کردیا۔

ائیر ہوسٹس انیشیا بترا کی موت : دو سال پہلے ہوئی تھی شادی ، اکثر ہوتی تھی شوہر سے لڑائی

ہلی کے حوض خاص علاقہ میں 39 سالہ ایئر ہوسٹس انیشیا بترا کی موت کے معاملہ میں اس کے بھائی کرن بترا نے اپنے بہنوئی مینک پر سنگین الزامات عائد کئے ہیں۔ اس نے کہا کہ مینک اس کی بہن کے ساتھ مار پیٹ کرتا تھا اور اس کا استحصال کرتا تھا۔ انیشیا کے فیس بک پیج کے مطابق دونوں کی شادی فروری 2016 ...

اترپردیش میں بیٹی پیدا ہونے پر ناراض شوہر نے بیوی کو دیا تین طلاق

یم کورٹ کے تین طلاق کو غیر قانونی قرار دینے کے باوجود تین طلاق کے معاملات رک نہیں رہے ہیں۔ تازہ ترین معاملہ اتر پردیش کے شاملی کا ہے جہاں ایک مسلم عورت کو اس کے شوہر نے صرف اس وجہ سے تین طلاق دے دی کیونکہ اس نے بیٹی کو جنم دیا تھا۔