کانگریس اورجے ڈی ایس میں کوئی اختلاف نہیں : کمار سوامی

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 28th August 2018, 10:48 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،28؍اگست(ایس او نیوز) وزیر اعلیٰ ایچ ڈی کمار سوامی نے کہا ہے کہ قومی یا صوبائی سطح پر کانگریس یا جنتادل (ایس) کے درمیان کوئی اختلاف نہیں ہے، اگر کچھ پریشانی ہے تو مقامی سطح پر ہوسکتی ہے، جسے نپٹا لیا جائے گا ۔

میسور میں اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کمار سوامی نے کہاکہ ہاسن میں کانگریس اور جنتادل(ایس) کے درمیان مفاہمت کو لے کر تکرار ہے۔ ریاست کے دیگر حصوں میں کہیں بھی ایسی کوئی صورتحال دونوں پارٹیوں کو درپیش نہیں۔اس سلسلے میں ایک انگریزی میڈیا کو ان کی طرف سے دئے گئے انٹرویو کے حوالے سے اس قیاس پر کہ کانگریس اور جنتادل (ایس) کے درمیان اختلافات عروج پر ہیں۔

کمار سوامی نے کہاکہ انہوں نے یہ تذکرہ صرف ہاسن کی حد تک کیاتھا، اسے کچھ اور رنگ دے کر عوام کے سامنے پیش کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہاکہ دونوں پارٹیوں کے درمیان حکومت سازی سے لے کر اب تک کوئی بھی اختلاف نہیں ہے، باہمی تال میل کے ذریعے مخلوط حکومت آگے بڑھ رہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ چند ناگزیر وجوہات کے سبب رابطہ کمیٹی کے اہتمام میں تاخیر ہوئی ہوگی، اس کے علاوہ کوئی مسئلہ نہیں ہے۔ حکومت پر یہ الزام کہ عدم استحکام کے سبب وہ عوامی فلاح وبہبود کا کام نہیں کرپارہی ہے۔ کمار سوامی نے مسترد کردیا اور کہاکہ حکومت پوری سکون واطمینان کے ساتھ چل رہی ہے، عوامی فلاح وبہبود کے لئے بجٹ میں جن پروگراموں کا اعلان کیا گیاتھا ان کو عملی شکل دینے میں پورا انتظامیہ مستعد ہے۔

انہوں نے کہاکہ کورگ ضلع میں سیلاب کی وجہ سے جو غیر معمولی تباہی مچی ہے اس کے سبب یہاں کے متاثرہ لوگوں کو جلد از جلد باز آباد کرنے کے لئے حکومت نے اپنی تمام توانائی لگادی ہے۔ جلد از جلد کوشش کی جائے گی کہ اس علاقے کے عوام کو پہلے کی طرح زندگی بسر کرنے کا موقع فراہم کیا جائے۔

ایک نظر اس پر بھی

مشاعروں کو با مقصد بنا کر نفرت کے ماحول کو پیار اور محبت میں بدلا جاسکتا ہے : سید شفیع اللہ

مشاعرے اردو زبان اور ادب کی تہذیب کے ساتھ ساتھ امن اور اتحاد کو فروغ دینے کا ذریعہ بھی ہیں۔ ملک اور سماج کے موجودہ حالات کو بہتر بنانے کیلئے زیادہ سے زیادہ مشاعروں کا انعقاد کیا جائے۔ بنگلورو میں بزم شاہین کے کل ہند مشاعرے میں ان خیالات کا اظہار کیا گیا۔

ٹیپوجینتی منسوخ کرنے کی کوئی تجویز نہیں ہے جواہر لال نہروکی جنم دن تقریب سے وزیراعلیٰ کااظہار خیال

کسانوں کی طرف سے حاصل کردہ زرعی قرضہ معاف کئے جانے کے سلسلہ میں شکوک وشبہات کا شکار نہ ہوں۔ قرضہ وصولی کیلئے کسانو ں کوغیر ضروری طور پر اذیت دی گئی تو بینک منیجرکو بھی گرفتار کیا جاسکتا ہے ۔

جمہوریت اوردستورکے تحفظ کے لیے ووٹر فہرست میں ناموں کا اندراج لازمی سی آر ڈی ڈی پی کی ملک گیر جدوجہد

مسلمانوں کے لیے ایوان میں کم ہورہی مسلم نمائندگی سے زیادہ تشویشناک صورتحال یہ ہے کہ ملک بھر میں ووٹرس فہرست سے کروڑوں مسلمانوں کے نام غائب ہیں۔ ایک سروے کے مطابق ملک میں تقریباً 25 فیصد سے زائد اہل ووٹروں کے نام فہرست سے غائب ہیں۔ اس اہم مسئلے پر ماہر معاشیات و سچر کمیٹی کے ممبر ...