کانگریس اورجے ڈی ایس میں کوئی اختلاف نہیں : کمار سوامی

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 28th August 2018, 10:48 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،28؍اگست(ایس او نیوز) وزیر اعلیٰ ایچ ڈی کمار سوامی نے کہا ہے کہ قومی یا صوبائی سطح پر کانگریس یا جنتادل (ایس) کے درمیان کوئی اختلاف نہیں ہے، اگر کچھ پریشانی ہے تو مقامی سطح پر ہوسکتی ہے، جسے نپٹا لیا جائے گا ۔

میسور میں اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کمار سوامی نے کہاکہ ہاسن میں کانگریس اور جنتادل(ایس) کے درمیان مفاہمت کو لے کر تکرار ہے۔ ریاست کے دیگر حصوں میں کہیں بھی ایسی کوئی صورتحال دونوں پارٹیوں کو درپیش نہیں۔اس سلسلے میں ایک انگریزی میڈیا کو ان کی طرف سے دئے گئے انٹرویو کے حوالے سے اس قیاس پر کہ کانگریس اور جنتادل (ایس) کے درمیان اختلافات عروج پر ہیں۔

کمار سوامی نے کہاکہ انہوں نے یہ تذکرہ صرف ہاسن کی حد تک کیاتھا، اسے کچھ اور رنگ دے کر عوام کے سامنے پیش کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہاکہ دونوں پارٹیوں کے درمیان حکومت سازی سے لے کر اب تک کوئی بھی اختلاف نہیں ہے، باہمی تال میل کے ذریعے مخلوط حکومت آگے بڑھ رہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ چند ناگزیر وجوہات کے سبب رابطہ کمیٹی کے اہتمام میں تاخیر ہوئی ہوگی، اس کے علاوہ کوئی مسئلہ نہیں ہے۔ حکومت پر یہ الزام کہ عدم استحکام کے سبب وہ عوامی فلاح وبہبود کا کام نہیں کرپارہی ہے۔ کمار سوامی نے مسترد کردیا اور کہاکہ حکومت پوری سکون واطمینان کے ساتھ چل رہی ہے، عوامی فلاح وبہبود کے لئے بجٹ میں جن پروگراموں کا اعلان کیا گیاتھا ان کو عملی شکل دینے میں پورا انتظامیہ مستعد ہے۔

انہوں نے کہاکہ کورگ ضلع میں سیلاب کی وجہ سے جو غیر معمولی تباہی مچی ہے اس کے سبب یہاں کے متاثرہ لوگوں کو جلد از جلد باز آباد کرنے کے لئے حکومت نے اپنی تمام توانائی لگادی ہے۔ جلد از جلد کوشش کی جائے گی کہ اس علاقے کے عوام کو پہلے کی طرح زندگی بسر کرنے کا موقع فراہم کیا جائے۔

ایک نظر اس پر بھی

مودی دوبارہ منتخب ہونے پر ہٹلر بن جائیں گے۔ سابق وزیر اعلیٰ سدارامیا کابیان

سابق وزیراعلیٰ اور مخلوط ریاستی حکومت کی کوآرڈینیشن کمیٹی کے صدر سدارامیا نے باگلکوٹ میں کانگریسی امیدوار وینا کاشپناور کے لئے انتخابی مہم کے دوران کہا کہ بی جے پی والے دیش کادستور بدلنے کی بات کررہے ہیں۔ اگر دیش کے دھرم شاستر کا مقام رکھنے والے دستور کو بدلنے کی کوشش کی گئی ...

کرناٹکا میں لوک سبھا انتخابات کے دوسرے مرحلہ کی انتخابی مہم ختم 14حلقوں میں237امیدوار، کل23اپریل کو امیدواروں کی سیاسی قسمت کا فیصلہ ووٹر مشینوں میں ہوگا بند

ریاست میں ہورہے دوسرے مرحلہ کے لوک سبھا انتخابات کے لئے آج شام سیاسی انتخابی مہم اختتام کو پہنچ گئی۔ ریاست کے 14لوک سبھا حلقوں میں237امیدوار میدان میں ہیں۔

ووٹر فہرست سے رائے دہندوں کے ناموں کے غائب ہونے کا معاملہ کئی شکایت کے بعدالیکشن کمیشن چوکنا ،جانچ کرنے کا فیصلہ

بنگلور شہری ضلع کی حدودمیں آنے والے پارلیمانی حلقوں میں کئی افراد نے ووٹر فہرست سے اپنے نام غائب رہنے کی شکایتیں کی ہیں۔ریاستی انتخابی کمیشن نے اس معاملہ کوسنجیدگی سے لے کراس کی مکمل جانچ کروانے کا فیصلہ کیا ہے ۔

وزیر اعظم کی ذاتی زندگی کونشانہ بنانے پر ضمیر احمد خان کے خلاف الیکشن کمیشن میں بی جے پی کی شکایت

ریاستی وزیر برائے اقلیتی امور ،اوقاف ، حج اور غذا وشہری رسدات بی زیڈ ضمیراحمد خان کے ہاویری میں کانگریس امیدوار ڈی ۔ آر پاٹیل کے انتخابی ریلی کے دران وزیر اعظم نریندر مودی کے خلاف بیان دینے پر بھارتیہ جنتا پارٹی ( بی جے پی ) نے انتخابی کمیشن میں شکایت کی ہے ۔

چوکیدار کا مطلب سب سے بڑا چور ہے:سدارامیا

سابق وزیراعلیٰ سدارامیا نے کہا کہ ملک کے بے روز گار نوجوان بر سر اقتدار نریندر مودی سے روز گار کا سوال کرتے ہیں تو مودی ان نوجوانوں کو پکوڑے بنانے کی صلاح دیتے ہیں۔

اُترکنڑا میں کرناٹکا کے وزیراعلیٰ کی کارکو 13 جگہوں پر روک کر تلاشی لینے کے بعد اب سابق وزیراعظم کے ہیلی کاپٹرکی بھی لی گئی تلاشی

3/اپریل کو کرناٹک کے وزیراعلیٰ کماراسوامی کی کار کو قریب 13 جگہوں پر روک کر تلاشی لینے کی کاروائی کے بعد اب اُن کے والد  اور ملک کے سابق وزیراعظم  ایچ ڈی دیوے گوڈا صاحب  کے   ہیلی کاپٹر کی تلاشی لینے کی بات سامنے آئی ہے، جس پر سیاسی لیڈران  مرکزی حکومت  پر یکطرفہ کاروائی کرنے ...