لوک سبھا انتخابات میں بی جے پی کو روکنے کی طاقت صرف عام آدمی پارٹی میں ہے: اروند کیجریوال

Source: S.O. News Service | By Staff Correspondent | Published on 7th October 2018, 1:52 PM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

نئی دہلی:7 اکتوبر (ایس او نیوز)  عام آدمی پارٹی (آپ) کے کنوینراوردہلی کے وزیراعلی اروند کیجریوال نے ہفتہ کے روزاگلے برس ہونے والے لوک سبھا انتخابات کے بارے میں کہا کہ بھارتیہ جنتاپارٹی (بی جے پی) کودہلی میں شکست دینے کے لئے ان کی پارٹی ہی واحد متبادل ہے۔

دلی کے روہنی علاقے میں جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے اروند کیجریوال نے کہا کہ بی جے پی اورراشٹریہ سیوم سیوک سنگھ (آر ایس ایس) لوک سبھا انتخابات جیتنے کے سلسلے میں آپ کے ووٹ کاٹنے کے لئے مبینہ طورپرکانگریس کی حمایت کررہی ہیں۔ لوگ بی جے پی سے ناراض ہیں وہ راہل گاندھی اوربدعنوان کانگریس کو بھی ووٹ نہیں دینا چاہتے۔ لہٰذا دہلی میں صرف آپ ہی واحد متبادل ہے۔

بی جے پی پر حملہ کرتے ہوئے کیجریوال نے کہا کہ لوک سبھا انتخابات 2014 میں آپ نے بی جے پی کو ووٹ دیئے اوربی جے پی کے سبھی 7 ممبر پارلیمنٹ کو پارلیمنٹ بھیجا۔ سال 2015 کے اسمبلی انتخابات میں آپ نے تبدیلی کے لئے ووٹ ڈالے اوردہلی میں 70 میں سے 67 سیٹوں پرآپ کو فتح دلائی۔ آپ کی فلاح کے لئے کس نے کام کیا؟ عام آدمی پارٹی یا بی جے پی کے 7 ممبر پالیمنٹ نے؟ یہ آپ ہے جوبغیرتھکے آپ کے لئے مسلسل کام کررہی ہے۔

انہوں نے الزام لگایا کہ بی جے پی کے ساتوں ممبر پارلیمنٹ انتخاب جیتنے کے بعد واپس نہیں آئے اورآپ سرکار کے پروجیکٹوں کو ناکام بنانے کے لئے لیفٹیننٹ گورنرکو مہرہ بنایا۔  کیجریوال نے کہا کہ انہوں نے محلہ کلینک، سی سی ٹی وی پروجیکٹ، نئے اسکول، نئی یونیورسٹیاں اور دہلی کے عوام کے لئے جو کچھ ہم کرنا چاہتے تھے، انہیں ناکام بنانے کی کوششیں کی گئیں، لیکن ہم وہ نہیں ہیں جو دلدل میں پھنس جائیں، ہم دلی والوں کے لئے لڑتے رہے اور ہم نے جو وعدے کئے تھےانہیں پورا کیا۔ اگر آپ لوگ آپ کے 7 ممبر پارلیمنٹ کو بھیجیں گے، ہم اب تک جو کام کئے ہیں اس سے 10 گنا زیادہ کام کریں گے۔

اروند کیجریوال نے وزیراعظم نریندرمودی پرالزام لگایا کہ انہوں نے آپ کو ووٹ دینے کے لئے دہلی والوں کو نشانہ بنایا اور میٹرو کے کرائے میں اضافہ اورسیلنگ شروع کردی۔ انہوں نے کہا کہ اگر دلی سے ہمارے 7 ممبرپارلیمنٹ ہوتے تو وہ میٹرو کا کرایہ نہیں بڑھا پاتے۔ ہم انہیں سیلنگ کرنے نہیں دیں گے۔

وزیراعلیٰ نے کہا کہ میں آپ سے درخواست کرتا ہوں کہ آپ 2014 کی غلطی نہ دہرائیں، اپنی پارٹی کو مضبوط بنایئے، آپ کو مضبوط بنایئے اورہم آپ کی فلاح و بہبود کے لئے کام کرتے رہیں گے۔ کانگریس پارٹی کو ایک بھی ووٹ نہ دیں، آپ کے لئے ووٹ کریں۔ صرف یہی سیاسی پارٹی مودی کی بی جے پی کو شکست دے سکتی ہے۔

انہوں نے آر ایس ایس پر الزام لگایا کہ وہ دہلی میں غلط تشہیر کے ذریعہ ووٹروں کو گمراہ کرنے کی کوشش کررہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ آر ایس ایس گھر گھرجاکرتشہیر کررہا ہے۔ وہ صبح کی سیرکے دوران پارکوں میں جاکرووٹروں کو بہکا رہے ہیں۔ وہ پارکوں اورلوگوں کے گھروں میں جاکرکہہ رہے ہیں کہ مودی نے سب کچھ برباد کردیا۔ کانگریس مودی سے بہترہے۔ کیجریوال نے کہا کہ آر ایس ایس چاہتا ہے کہ کانگریس کو کچھ ووٹ ملے اورآپ کو شکست ہو۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس دہلی میں کہیں نہیں ہے کیونکہ اس نے 15 برسوں تک دہلی میں غلط حکمرانی کے ساتھ کئی بدعنوانیاں کیں۔

ایک نظر اس پر بھی

تلنگانہ میں 19فروری کو کابینہ کی توسیع

تلنگانہ کے وزیر اعلی کے چندرشیکھر راؤ دوبارہ اقتدار میں آنے کے دو ماہ کے بعد اپنی کابینہ میں توسیع کرنے کی تیاری میں ہے اور ساری بحث اب اس بات پر ٹک گئی ہے کہ اس میں کن لوگوں کو شامل کیا جائے گا۔

بھٹکل میں مجلس اصلاح وتنظیم کی جانب سے پلوامہ دہشت گردانہ حملہ کی کڑی مذمت: تحصیلدار کی معرفت وزیراعظم کو میمورنڈم ؛کڑی کارروائی کا مطالبہ

کشمیر کے پلوامہ میں دہشت گردانہ حملے کی کڑی مذمت کرتے ہوئے مجلس اصلاح وتنظیم بھٹکل نے تحصیلدار کی معرفت وزیر اعظم نریندر مودی کو اپیل سونپتے ہوئے دہشت گردی کا کرار ا جواب دینے کا مطالبہ کیا۔

بھٹکل: شرالی میں ہائی وے کی توسیع کے دوران ہنگامہ؛ پولس کی لی گئی مدد؛ عوامی مخالفت نظرانداز؛ 30میٹرکی ہی توسیع کے ساتھ کام شروع

شرالی میں قومی شاہراہ کی تعمیر 45میٹر کی توسیع کے ساتھ ہی کی جائے ، کسی حال میں بھی توسیع کو 30میٹر تک کم کرنے نہیں دیں گے۔  مقامی  عوام کی سخت مخالفت کے باوجود ضلع انتطامیہ بدھ کو 30 میٹر کی توسیع کے ساتھ شاہراہ تعمیری کام کی شروعات کی۔