کانگریس جھوٹ بولنے والی مشین بن گئی ہے: بی جے پی صدر اجئے بھٹ کا خیال

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 16th March 2019, 2:38 AM | ملکی خبریں |

دہرادون:15 /مارچ (ایس اونیوز /آئی این ایس انڈیا) کانگریس کی جانب سے لگائے گئے ایک کے بعد ایک الزام سے بی جے پی میں غالبا بوکھلاہٹ پائی جارہی ہے جس کے نتیجے میں اتراکھنڈ بی جے پی نے جمعہ کو الزام لگایا کہ کانگریس ایک جھوٹ بولنے والی مشین بن گئی ہے اور رافیل اور بالاکوٹ فضائی حملے کے مسائل پر اس کا رخ آئندہ لوک سبھا انتخابات میں اس کو مہنگا پڑنے والا ہے۔

اتراکھنڈ صوبہ کے بی جے پی صدر اجے بھٹ نے کہاکہ کانگریس ایک جھوٹ بولنے والی مشین بن گئی ہے۔عوام کو گمراہ کرنے کے لئے انہوں نے رافیل سودے پر ایک کے بعد ایک جھوٹ بولے۔ اس سودے پر سپریم کورٹ کی طرف سے حکومت کو کلین چٹ دیے جانے کے بعد بھی اس پارٹی نے اس معاملے پر جھوٹ پھیلانا بند نہیں کیا۔ انہوں نے کہاکہ جھوٹ پھیلانا اس پارٹی کو آئندہ لوک سبھا انتخابات میں بہت مہنگا ثابت ہونے والا ہے۔ بھٹ نے کہاکہ کانگریس کے ان جھوٹو ں کو عوام سمجھ چکی ہے اور انتخابات میں انہیں پوری طرح خارج کرنے کے موڈ میں ہے۔ انہوں نے دعوی کیا کہ عوام نریندر مودی کو دوبارہ وزیر اعظم بنانے کے موڈ میں ہے اور کہا کہ ملک  صرف مودی کے ہاتھوں میں محفوظ ہے۔ بی جے پی لیڈر نے کانگریس پر پختگی کی کمی اور غیر ذمہ دار ہونے کا بھی الزام لگایا۔انہوں نے کہاکہ پلوامہ دہشت گردانہ حملے کے بعد بھارتی فضائی حملے کو لے کر جس طرح سے کانگریس نے سوالات اٹھائے، اس سے کانگریس قیادت کی پختگی کی کمی کی عکاسی ہوتی ہے۔حالت جنگ میں، چاہے وہ کسی بھی سطح کی ہو، ملک کو ایک سر میں بولنا چاہئے لیکن کانگریس نے اس کے برعکس راہ اختیار کی۔ بھٹ نے کہا کہ انہیں یقین ہے کہ ریاست کی پانچوں لوک سبھا سیٹوں پر 2014 کی طرح اس بار بھی بی جے پی ہی جیتے گی۔

ایک نظر اس پر بھی

وزیراعظم مودی نے کابینہ سمیت سونپا صدرجمہوریہ کو استعفیٰ، 30 مئی کو دوبارہ حلف لینےکا امکان

لوک سبھا الیکشن کے نتائج کے بعد جمعہ کی شام نریندرمودی نے وزیراعظم عہدہ سے استعفیٰ دے دیا۔ ان کے ساتھ  ہی سبھی وزرا نے بھی صدرجمہوریہ کواپنا استعفیٰ سونپا۔ صدر جمہوریہ نےاستعفیٰ منظورکرتےہوئےسبھی سے نئی حکومت کی تشکیل تک کام کاج سنبھالنےکی اپیل کی، جسے وزیراعظم نےقبول ...

نوجوت سنگھ سدھوکی مشکلوں میں اضافہ، امریندر سنگھ نے کابینہ سے باہرکرنے کے لئے راہل گاندھی سے کیا مطالبہ

لوک سبھا الیکشن میں زبردست شکست کا سامنا کرنے والی کانگریس میں اب اندرونی انتشار کھل کرباہرآنے لگی ہے۔ پہلےسے الزام جھیل رہے نوجوت سنگھ سدھو کی مشکلوں میں اضافہ ہونےلگا ہے۔ اب نوجوت سنگھ کوکابینہ سےہٹانےکی قواعد نے زورپکڑلیا ہے۔

اعظم گڑھ میں ہارنے کے بعد نروہوا نے اکھلیش یادو پر کسا طنز، لکھا، آئے تو مودی ہی

بھوجپوری سپر اسٹار نروہوا (دنیش لال یادو) نے لوک سبھا انتخابات کے دوران سیاست میں ڈبیو کیا تھا،وہ بی جے پی کے ٹکٹ پر یوپی کی ہائی پروفائل سیٹ اعظم گڑھ سے انتخابی میدان میں اترے تھے لیکن اترپردیش کے سابق وزیر اعلی اکھلیش یادو کے سامنے نروہا ٹک نہیں پائے۔