یورپی یونین ترکی کے بغیر نامکمل ہے: ایردوآن

Source: S.O. News Service | By MAZ Gawai | Published on 11th January 2017, 8:41 PM | عالمی خبریں |

انقرہ11جنوری(آئی این ایس انڈیا)ترک صدر رجب طیب ایردوآن نے مطالبہ کیا ہے کہ یورپی یونین ترکی کی رکنیت کے حوالے سے معطل شُدہ مذاکراتی عمل پھر سے شروع کرے۔ ایردوآن کا کہنا ہے کہ ترکی کے بغیر یورپی یونین نامکمل ہے۔رجب طیب ایردوآن نے واضح اندازمیں کہا کہ یورپی یونین ترکی کے ساتھ طے کردہ معاہدے کے تحت فوری طور پر ترک شہریوں کے لیے شینگن ممالک کے ویزہ فری سفر کی اجازت دے۔ گزشتہ برس مارچ میں طے پانے والے اس معاہدے کے تحت ترکی کو پابند بنایا گیا تھا کہ وہ اپنے ہاں سے مہاجرین کو غیرقانونی طورپربحیرۂ ایجیئن عبور کر کے یونان پہنچنے سے روکے جب کہ اس کے بدلے میں دیگرمراعات کے علاوہ ترک شہریوں کے لیے شینگن ممالک کے ویزہ فری سفر کا وعدہ بھی کیاگیاتھاجس پراب تک عمل درآمدنہیں ہو پایا ہے۔ یورپی یونین کا موقف ہے کہ ترکی میں ناکام فوجی بغاوت کے بعد جاری کریک ڈاؤن کی آڑ میں حکومت مخالف عناصرکے خلاف کارروائیاں، دہشت گردی سے متعلق سخت قوانین اور آزادیء اظہار پر قدغنیں ختم ہونے کے بعد ہی ویزا فری انٹری سے متعلق یورپی وعدے پر عمل درآمد ممکن ہو سکے گا۔پیر کے روز اپنے ایک بیان میں ایردوآن نے ایک بار پھر یورپی یونین پر شدید تنقید کرتے ہوئے کہا، یورپی یونین ترکی کے لیے اب بھی بہترین اسٹریٹیجک انتخاب ہے۔ تاہم یورپی یونین کی بے ربط پالیسیاں اور ہمارے ملک کی بابت دوہرے معیارات کو اندھے بن کرقبول نہیں کیاجاسکتا۔ترک وزیرخارجہ مولودچاوُش اولو کا کہنا ہے کہ یورپی یونین رکنیت کے حوالے سے مذاکرات میں حائل مصنوعی رکاوٹوں کے خاتمے کے لیے مزید وضاحتیں کرے۔انہوں نے یہ بھی کہا کہ انقرہ حکومت ترک شہریوں کے لیے یورپ میں داخلے کے لیے ویزے کی پابندی جلد ختم ہو جانے کی امید کر رہی ہے۔ یہ بات اہم ہے کہ ترکی کی آبادی 80 ملین ہے، جب کہ ترکی میں سیاسی افراتفری اور رجب طیب ایردوآن کے سخت طرز حکومت کی وجہ سے متعدد صحافی اور دیگر شعبہ ہائے زندگی سے وابستہ ترک شہری یورپی ممالک میں سیاسی پناہ کی درخواست دائر کرتے دکھائی دے رہے ہیں اور ایسے میں ترکی کے لیے ویزے کی پابندیاں ختم کرنے پر متعدد یورپی ممالک کی جانب سے مخالفت دیکھنے میں آ رہی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

انجلینا جولی کی عید پرعراق کے شہر موصل کے پناہ گزینوں سے ملاقات

اقوام متحدہ کی پناہ گزین کی خصوصی ایلچی انجلینا جولی نے عراق میں دہشت گردی سے سب سے متاثرہ علاقے موصل کا دورہ کیا اور عالمی برادری سے تباہ حال شہر کے بے گھر رہائشیوں کی دوبارہ اپنے گھروں میں آبادکاری کے لیے مدد کی اپیل کی ہے۔

ننگر ہار: طالبان پر خودکش حملے میں ہلاکتوں کی تعداد 36 ہو گئی

صوبہ ننگرہار میں کے محکمہ صحت کے ڈائریکٹر نجیب اللہ کماوال کے حوالے سے کہا ہے کہ ہفتہ کو ہونے والے اس حملے میں 65 افراد زخمی بھی ہوئے۔افغان حکام نے کہا ہے کہ جنگ بندی کے دوران مشرقی صوبہ ننگرہار میں افغان جنگجوؤں کے ایک اجتماع پر خودکش حملے میں ہلاکتوں کی تعداد 36 ہو گئی ہے۔

جاپان میں.1 6 شدت کا زلزلہ، تین افراد ہلاک

اوساکا اور اس کے گرد و نواح کا شمار جاپان کے اہم ترین صنعتی مراکز میں ہوتا ہے اور زلزلے کے بعد علاقے میں واقع بیشتر کارخانوں میں کام بند کردیا گیا ہے۔جاپان کے دوسرے بڑے شہر اوساکا میں آنے والے 6.1شدت کے زلزلے سے اب تک تین افراد کے ہلاک ہونے کی تصدیق ہوگئی ہے۔

نیو جرسی: آرٹ فیسٹول میں فائرنگ، حملہ آور ہلاک

امریکہ کی ریاست نیو جرسی میں ایک آرٹ فیسٹول کے دوران فائرنگ سے 22 افراد زخمی ہوگئے ہیں جب کہ ایک مبینہ حملہ آور مارا گیا ہے۔حکام کے مطابق واقعہ اتوار کو نیوجرسی کے شہر ٹرینٹن میں پیش آیا جہاں رات بھر جاری رہنے والے آرٹ فیسٹول کے دوران دو متحارب گروہ آپس میں لڑ پڑے۔

افغان طالبان کا جنگ بندی میں توسیع سے انکار

افغان طالبان نے کہا ہے کہ افغان سکیورٹی فورسز سے تین روزہ جنگ بندی کے خاتمے کے بعد اس میں مزید توسیع نہیں کی جائے گی۔فرانسیسی خبر رساں ادارے ’اے ایف پی‘ نے طالبان کے ترجمان ذبیع اللہ مجاہد کے حوالے سے کہا ہے کہ جنگ بندی 17 جون کی رات ختم ہو رہی ہے جس کے بعد طالبان کی کارروائیاں ...

ترک فوج کی عراق میں بمباری، 35 کرد جنگجو ہلاک

ترکی کی مسلح فوج نے ایک بیان میں دعویٰ کیا ہے کہ عراق کے شمالی علاقے جبل قندیل میں کرد علاحدگی پسند گروپ کردستان ورکرز پارٹی "PKK" کے ٹھکانوں پر بمباری کے نتیجے میں کم سے کم 35 کرد باغی ہلاک ہو گئے ہیں۔