یورپی یونین ترکی کے بغیر نامکمل ہے: ایردوآن

Source: S.O. News Service | By Afeef Gawai | Published on 11th January 2017, 8:41 PM | عالمی خبریں |

انقرہ11جنوری(آئی این ایس انڈیا)ترک صدر رجب طیب ایردوآن نے مطالبہ کیا ہے کہ یورپی یونین ترکی کی رکنیت کے حوالے سے معطل شُدہ مذاکراتی عمل پھر سے شروع کرے۔ ایردوآن کا کہنا ہے کہ ترکی کے بغیر یورپی یونین نامکمل ہے۔رجب طیب ایردوآن نے واضح اندازمیں کہا کہ یورپی یونین ترکی کے ساتھ طے کردہ معاہدے کے تحت فوری طور پر ترک شہریوں کے لیے شینگن ممالک کے ویزہ فری سفر کی اجازت دے۔ گزشتہ برس مارچ میں طے پانے والے اس معاہدے کے تحت ترکی کو پابند بنایا گیا تھا کہ وہ اپنے ہاں سے مہاجرین کو غیرقانونی طورپربحیرۂ ایجیئن عبور کر کے یونان پہنچنے سے روکے جب کہ اس کے بدلے میں دیگرمراعات کے علاوہ ترک شہریوں کے لیے شینگن ممالک کے ویزہ فری سفر کا وعدہ بھی کیاگیاتھاجس پراب تک عمل درآمدنہیں ہو پایا ہے۔ یورپی یونین کا موقف ہے کہ ترکی میں ناکام فوجی بغاوت کے بعد جاری کریک ڈاؤن کی آڑ میں حکومت مخالف عناصرکے خلاف کارروائیاں، دہشت گردی سے متعلق سخت قوانین اور آزادیء اظہار پر قدغنیں ختم ہونے کے بعد ہی ویزا فری انٹری سے متعلق یورپی وعدے پر عمل درآمد ممکن ہو سکے گا۔پیر کے روز اپنے ایک بیان میں ایردوآن نے ایک بار پھر یورپی یونین پر شدید تنقید کرتے ہوئے کہا، یورپی یونین ترکی کے لیے اب بھی بہترین اسٹریٹیجک انتخاب ہے۔ تاہم یورپی یونین کی بے ربط پالیسیاں اور ہمارے ملک کی بابت دوہرے معیارات کو اندھے بن کرقبول نہیں کیاجاسکتا۔ترک وزیرخارجہ مولودچاوُش اولو کا کہنا ہے کہ یورپی یونین رکنیت کے حوالے سے مذاکرات میں حائل مصنوعی رکاوٹوں کے خاتمے کے لیے مزید وضاحتیں کرے۔انہوں نے یہ بھی کہا کہ انقرہ حکومت ترک شہریوں کے لیے یورپ میں داخلے کے لیے ویزے کی پابندی جلد ختم ہو جانے کی امید کر رہی ہے۔ یہ بات اہم ہے کہ ترکی کی آبادی 80 ملین ہے، جب کہ ترکی میں سیاسی افراتفری اور رجب طیب ایردوآن کے سخت طرز حکومت کی وجہ سے متعدد صحافی اور دیگر شعبہ ہائے زندگی سے وابستہ ترک شہری یورپی ممالک میں سیاسی پناہ کی درخواست دائر کرتے دکھائی دے رہے ہیں اور ایسے میں ترکی کے لیے ویزے کی پابندیاں ختم کرنے پر متعدد یورپی ممالک کی جانب سے مخالفت دیکھنے میں آ رہی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

محمود عباس غزہ میں بجلی کے بحران کو ہوا دینے کے ذمہ دار ہیں:حماس

اسلامی تحریک مزاحمت حماس نے صدر محمود عباس کے ایک بیان جس میں انہوں نے غزہ کی پٹی میں بجلی کے بحران پر تبصرہ کیا ہے کی شدید مذمت کی ہے۔ حماس کا ترجمان کا کہنا ہے کہ محمود عباس کا غزہ میں بجلی کے بحران سے متعلق بیان اس بات کا ثبوت ہے کہ فلسطینی اتھارٹی غزہ میں بجلی کے بحران کا ذمہ ...

سعودی عرب یمن میں مداخلت اور جارحیت بند کرے: ایرانی صدر

ایرانی صدر حسن روحانی نے سعودی عرب سے مطالبہ کیا کہ وہ یمن میں اپنی جارحیت اور مداخلت بند کرے۔ منگل کے روز تہران میں ایک نیوز کانفرنس میں ان کا کہنا ہے تھا کہ ایران کے سعودی عرب کے ساتھ اس سے زیادہ کوئی جھگڑا نہیں کہ وہ یمن اور بحرین میں اپنی مداخلت بند کرے۔ روحانی کے بقول دس ...

گیمبیا کے صدر نے ایمرجنسی نافذ کر دی

گیمبیا کے صدر یحییٰ جامع نے اپنا عہدہ چھوڑنے کے لیے مقرر کردہ دن سے صرف دو روز قبل ملک میں ہنگامی حالت نافذ کر دی ہے۔ جامع نے گزشتہ مہینے ہونے والے انتخابات کے نتائج کو تسلیم کرنے سے انکار کر دیا تھا۔

اوباما نے جاسوس میننگ کی سزا میں کمی کر دی

امریکی صدر باراک اوباما نے رحم دلی کا مظاہرہ کرتے ہوئے سابقہ فوجی اہلکار چیلسی میننگ کی سزا کم کر دی ہے۔ وکی لیکس کو خفیہ راز مہیا کرنے کے جرم میں میننگ کو 35سال کی سزا ئے قید سنائی گئی تھی۔وائٹ ہاؤس کے مطابق باراک اوباما کی جانب سے اس اعلان کے بعد میننگ کی سزا 35سال سے کم کر کے سات ...

برلسکونی کے حلیف انتونیو تاجانی یورپی پارلیمان کے نئے اسپیکر

اٹلی کے سابق وزیر اعظم سلویو برلسکونی کے اتحادی اطالوی سیاستدان انتونیو تاجانی کو یورپی پارلیمان کا نیا اسپیکر منتخب کر لیا گیا ہے۔ 63 سالہ سابق صحافی تاجانی کا تعلق یورپی پارلیمان میں قدامت پسندوں کی پارٹی سے ہے۔فرانس کے شہر اسٹراسبرگ سے ملی رپورٹوں کے مطابق انتونیو تاجانی ...

نہتے فلسطینی بچے کا وحشیانہ قتل، فلسطین بھر میں مذمت اور احتجاج

فلسطین کے مقبوضہ مغربی کنارے کے شمالی شہر بیت لحم میں ایک سترہ سالہ فلسطینی بچے کے وحشیانہ قتل کے واقعے کی ویڈیو سامنے آنے کے بعد فلسطین بھرمیں اسرائیلی ریاست کے خلاف شدید غم وغصے کی لہر دوڑ گئی ہے۔ فلسطینی عوام، سیاسی اور سرکاری حلقوں میں شدید رد عمل اس وقت سامنے آیا جب ایک ...