ہاشم پورہ سانحہ پر دہلی ہائی کورٹ کا فیصلہ دیر سے آیا ہوا ایک درست فیصلہ : مولاناارشدمدنی

Source: S.O. News Service | By Staff Correspondent | Published on 1st November 2018, 11:41 AM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

نئی دہلی،یکم نومبر( پریس ریلیز ؍ایس او نیوز)یہ ملک کی تاریخ میں اپنی نوعیت کا انوکھافیصلہ ہے جو دیر آید درست آید کا مصداق ہے مگر اس سے انصاف کو سربلندی حاصل ہوئی ہے ،یہ الفاظ جمعیۃعلماء ہند کے صدرمولانا سید ارشدمدنی کے ہیں جو انہوں نے ہاشم پورہ قتل عام معاملہ پر آج دہلی ہائی کورٹ کے فیصلہ پر اپنے ردعمل کااظہار کرتے ہوئے کہاکہ اطمینان بخش بات یہ ہے کہ 31برس کے طویل انتظار اور قانونی جدوجہد کے بعد متاثرین کو انصاف مل گیا اور خاطیوں کو ان کے گناہوں کی سزامل گئی ، مولانا مدنی نے کہا کہ آزادی کے بعد سے اب تک ملک بھرمیں25 ہزارسے زائد فسادات ہوچکے ہیں لیکن بیشتر معاملوں میں متاثرین کو انصاف سے محروم رکھا گیا اس تناظرمیں انہوں نے وضاحت کی کہ اگر آزادی کے فورا بعد ہوئے جبل پورجیسے بھیانک فسادات میں خاطیوں کو سزامل جاتی اور قانون و انصاف کے معیارکو برقراررکھا جاتا تو اس کے بعد وقفہ وقفہ سے مسلسل ہونے والے فسادات کو رونماہونے سے روکا جاسکتا تھا اور ان فسادات کے دوران جو ہزاروں قیمتی جانیں ضائع ہوئی اور کروڑوں اربوں کی املاک کا نقصان ملک کوہوا اس سے بچاجاسکتا تھا ،ساتھ ہی فرقہ پرستی کو پھلنے پھولنے سے بھی روکا جاسکتا تھا ، مگر افسوس! جہاں کہیں بھی اس طرح کے واقعات ہوئے تو انہیں ہمیشہ تعصب کی عینک سے دیکھا گیااور انتظامیہ وحکومتی سطح پر متاثرین کے ساتھ امیتاز کا رویہ اپنا کر خاطیوں کی درپردہ حوصلہ افزائی کی گئی جس کے خطرناک نتائج اب سامنے آچکے ہیں ، انہوں نے مزید کہا کہ اسی معاملہ کو دیکھیں پہلے ہی دن سے سب کچھ آئینہ کی طرح صاف تھا عینی شاہدین تھے جو چیخ چیخ کر کہہ رہے تھے کہ پی اے سی نے عمداًاس قتل عام کو انجام دیا ہے مگر انصاف کے حصول میں 31برس کا طویل عرصہ صرف ہوگیا ، مولانا مدنی نے یہ بھی کہا کہ کیا یہ بات حیرت انگیز نہیں ہے کہ ایک ہی معاملہ میں ایک عدالت تمام خاطیوں کو باعزت بری کردیتی ہے تو دوسری عدالت انہیں خاطی قراردیکر سزاسناتی ہے ، انہوں نے آخرمیں کہا کہ اس فیصلے سے عدلیہ پر ہمارااعتماد مزید مضبوط ہوا ہے اور ہم اکثرمواقع پر یہ کہتے آئے ہیں کہ جو کام حکومتوں کو کرنا چاہئے تھا وہ عدلیہ کررہی ہے ، ہاشم پورہ واقعہ اس کی روشن مثال ہے ، انہوں نے کہا کہ ہمارا یہ مانناہے کہ انصاف کا دوہرا پیمانہ نہیں ہونا چاہئے بلکہ اگر کوئی مجرم ہے اور اس کا جرم ثابت ہوجاتا ہے تو وہ خواہ کسی بھی مذہب سے تعلق رکھتا ہواورکسی بھی رتبہ یا منصب پر فائز ہواسے سزاملنی چاہئے ، ،قابل ذکر ہے کہ 2015میں دہلی کی تیس ہزاری کورٹ نے تمام خاطیوں کو کلین چیٹ دیدی تھی تو اس کے فورابعد مولانا مدنی نے اترپردیش کے اس وقت کے وزیراعلیٰ اکھلیش یادوسے ملاقات کرکے اس فیصلے کے تناظر میں گفتگوکی تھی اور یہ مطالبہ کیا تھا کہ ریاستی حکومت مثاثرین کی مالی امدادکرے ، اہم بات یہ ہے کہ مولانا مدنی کے مطالبہ کو سنجیدگی سے لیتے ہوئے اکھلیش سرکارنے نہ صرف 48 متاثرین کو پانچ لاکھ روپے فی کس مالی امدادفراہم کی تھی بلکہ یہ بھی اعلان کیا تھا کہ اس معاملہ میں زیریں عدالت کے فیصلہ کے خلاف اترپردیش حکومت ہائی کورٹ میں اپیل کریگی ۔چنانچہ اس روز کی ملاقات میں جو فیصلہ لیا گیا دہلی ہائی کورٹ کے فیصلہ کی شکل میں اس کا نتیجہ آج سب کے سامنے ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

ایسی جھوٹی حکومت کبھی نہیں آئی ،اپوزیشن پوری طرح متحدرہے توبی جے پی اقتدارسے باہرہوگی،کولکاتہ مہاریلی میں برسے بی جے پی کے سابق لیڈر یشونت سنہا اور ارون شوری

ممتا بنرجی مودی حکومت کے خلاف ایک ریلی میں اپوزیشن جماعتوں کو متحد کرنے میں کامیاب رہیں۔ملک کی 20مختلف سیاسی جماعتوں کے لیڈران کو ایک اسٹیج پر دیکھا گیا ۔اس اسٹیج پرسابقہ بی جے پی حکومت میں وزیر رہے یشونت سنہا اور ارون شوری بھی شامل ہوئے ۔دونوں رہنماؤں نے ممتا کے اسٹیج سے مودی ...

ممتا کے منچ سے گرجے اکھلیش یادو، کہا، انتخابات کے دوران مودی حکومت سی بی آئی اور ای ڈی سے اتحاد کررہی ہے

آج کل مغربی بنگال کے دارالحکومت کولکاتہ حزب اختلاف کے اتحاد کی ایک علامت رہا۔وزیر اعلی ممتا بنرجی نے اپوزیشن یونٹی ریلی نے تقریباََ20جماعتوں کے رہنماؤں کا ایک اجتماع پیش کیا اور ہر ایک نے مودی حکومت پر مرحلہ وار حملہ کیا۔سماج وادی پارٹی کے سربراہ اکھلیش نے ٹائیگر بریگیڈ پریڈ ...

بھیوجی مہاراج خودکشی کیس میں قریبی سمیت 3افرادگرفتار،بھیجے گئے جیل

مدھیہ پردیش کے معروف بھیوجی مہاراج خودکشی کیس کے معاملے میں اندور پولیس نے بڑے خلاصے کیے ہیں۔پولیس نے کیس میں ایک خاتون سمیت 3افراد کو گرفتار کر لیا ہے، جن میں سے ایک مقتول کاسب سے قریبی سیوادار ہے۔ اندور ڈی آئی جی ہری نارائن چاری مشرا نے بتایا کہ اس معاملے میں ان کے سب سے خاص ...

مہاگٹھ بندھن ریلی پروزیراعظم مودی نے کیاطنز،کہا ،اپوزیشن کامہاگٹھ بندھن صرف مودی کے خلاف نہیں بلکہ ہندوستان کی عوام کے خلاف بھی

جہاں ایک طرف مغربی بنگال کے دارالحکومت کولکاتہ میں ترنمول کانگریس (ٹی ایم سی)کی صدر ممتا بنرجی کی قیادت میں متحدہ اپوزیشن نے مودی حکومت پر نشانہ لگایا تو وزیر اعظم نریندر مودی نے دمن-دیو اور دادر-ناگر حویلی کے سلواسا سے اپوزیشن پر حملہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ اپوزیشن کامہاگٹھ ...

ممتاکے منچ سے اروند کجریوال کازبردست حملہ، مودی۔ شاہ نے 5سالوں میں وہ کردیاجو پاکستان اب تک نہ کرسکا، مسلمانوں کونشانہ بنایاگیا،خواتین کوگالی دینے والوں کووزیراعظم فالوکرتے ہیں

دہلی کے وزیراعلیٰ اورعام آدمی پارٹی کے کنوینر اروندکجریوال ممتابنرجی کی ریلی میں مغربی بنگال میں شامل ہوئے۔دہلی کے وزیراعلیٰ نے مودی اوربی جے پی کے قومی صدر امت شاہ کے خلاف آواز بلند کی۔کجریوال نے کہا کہ مودی نے وعدخلافی کی ہے۔مودی جی کی نوٹ بندی کی وجہ سے سو لاکھ نوکریاں ختم ...

ملیناڈو کراولی ریلوے لائن منصوبے پر جلد عمل درآمد کے لئے ریاستی وزیر اعلیٰ کمار اسوامی کا مرکزی حکومت سے تقاضہ

شیموگہ، شرنگیری، منگلورو جیسے علاقوں سے گزرنے والی ملیناڈو کراولی ریلوے لائن منصوبے پر جلد عمل درآمد کے لئے ریاستی وزیر اعلیٰ کمار ا سوامی نے مرکزی حکومت سے تقاضہ کیا ہے۔

چیتے کی کھال فروخت کرنے کے دوران کنداپور میں بھٹکل کے پانچ افراد سمیت دس گرفتار

یہاں شاستری سرکل کے قریب غیر قانونی طورپر چیتے کی کھال فروخت کرنے کے الزام میں بینگلور کی سی آئی ڈی فوریسٹ یونٹ  نے دس افراد کو گرفتار کرلیا ہے جس میں پانچ کا تعلق بھٹکل، تین کا تعلق بیندور اور ایک ایک کا تعلق ، منڈگوڈ اور  ہوناورسے ہے۔ گرفتاری کی یہ واردات جمعہ کی دوپہر کو ...