مرکزی حکومت کسانوں کے مفادات کو نظرانداز کررہی ہے: کانگریس

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 19th May 2017, 1:40 AM | ریاستی خبریں |

میسور:18/مئی (یو این آئی)کرناٹک کانگریس کے نائب صدر پروفیسر بی کے چندر شیکھر نے آج کہاکہ تمام سیاسی جماعتوں کو سطحی سیاست چھوڑ کر ریاست میں کسانوں کی بدحالی پر غور و خوض کرکے خشک سالی سے وابستہ حالات پر مرکزی حکومت کو ایک رپورٹ بھیجنی چاہئے۔مسٹر چندر شیکھر نے آج یہاں نامہ نگاروں سے کہاکہ تمام سیاسی جماعتوں کا کہنا ہے کہ وہ اقتدار میں آنے پر تمام کسانوں کے قرض معاف کردیں گی لیکن یہ ممکن نہیں ہے کیونکہ قومی نمونہ سروے کی رپورٹ کے مطابق ملک میں 52فیصد سے زائد کسان قرض کے بوجھ سے دبے ہوئے ہیں۔ آندھراپردیش میں سب سے زیادہ کسانوں کے خودکشی کرنے کے معاملے سامنے آئے ہیں اور اس معاملے میں کرناٹک کانمبر تیسرا ہے۔ ریاستی حکومتوں کو نشانہ بنانے کے بجائے مرکزی حکومت کو زراعت اور آبپاشی جیسے امور کو ترجیح دینی چاہئے۔انہوں نے کہاکہ وزیراعظم نریندر مودی امریکہ جاکر تقریر کرتے ہیں جبکہ کسانوں کی حالت کی انہیں کوئی پرواہ نہیں ہے۔ کسانوں کی حالت کے بارے میں مرکزی حکومت کو پارلیمنٹ کا خصوصی اجلاس بلاکر اس معاملے پر بات چیت کرنی چاہئے۔سینئر کانگریس لیڈر اے وی وشوناتھ کے پارٹی چھوڑنے سے متعلق سوال پر انہوں نے کہاکہ وہ اب بھی پارٹی میں ہیں اور پارٹی کے خلاف عوامی طورپر بول کر انہوں نے پارٹی کی بدنامی کی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

گوا کے وزیر اعلیٰ پاریکر اور وزیر آبپاشی کرناٹک سے معافی مانگیں ونودپالیکر نے جھوٹا الزام عائد کیاہے، پروٹوکول کی خلاف ورزی کرتے ہوئے عوامی جذبات کو ٹھیس پہنچایا ہے:ایم بی پاٹل

ریاستی وزیر آبپاشی ایم بی پاٹل نے  کلسابنڈوری نالے کا معائنہ کیاگواکے وزیر آبپاشی ونودپالیکر بروزہفتہ ضلع کنکتی کے دورہ کرتے ہوئے کلسانالے کی تعمیراتی کاموں کا جائزہ لیاتھا۔