مرکزی حکومت کسانوں کے مفادات کو نظرانداز کررہی ہے: کانگریس

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 19th May 2017, 1:40 AM | ریاستی خبریں |

میسور:18/مئی (یو این آئی)کرناٹک کانگریس کے نائب صدر پروفیسر بی کے چندر شیکھر نے آج کہاکہ تمام سیاسی جماعتوں کو سطحی سیاست چھوڑ کر ریاست میں کسانوں کی بدحالی پر غور و خوض کرکے خشک سالی سے وابستہ حالات پر مرکزی حکومت کو ایک رپورٹ بھیجنی چاہئے۔مسٹر چندر شیکھر نے آج یہاں نامہ نگاروں سے کہاکہ تمام سیاسی جماعتوں کا کہنا ہے کہ وہ اقتدار میں آنے پر تمام کسانوں کے قرض معاف کردیں گی لیکن یہ ممکن نہیں ہے کیونکہ قومی نمونہ سروے کی رپورٹ کے مطابق ملک میں 52فیصد سے زائد کسان قرض کے بوجھ سے دبے ہوئے ہیں۔ آندھراپردیش میں سب سے زیادہ کسانوں کے خودکشی کرنے کے معاملے سامنے آئے ہیں اور اس معاملے میں کرناٹک کانمبر تیسرا ہے۔ ریاستی حکومتوں کو نشانہ بنانے کے بجائے مرکزی حکومت کو زراعت اور آبپاشی جیسے امور کو ترجیح دینی چاہئے۔انہوں نے کہاکہ وزیراعظم نریندر مودی امریکہ جاکر تقریر کرتے ہیں جبکہ کسانوں کی حالت کی انہیں کوئی پرواہ نہیں ہے۔ کسانوں کی حالت کے بارے میں مرکزی حکومت کو پارلیمنٹ کا خصوصی اجلاس بلاکر اس معاملے پر بات چیت کرنی چاہئے۔سینئر کانگریس لیڈر اے وی وشوناتھ کے پارٹی چھوڑنے سے متعلق سوال پر انہوں نے کہاکہ وہ اب بھی پارٹی میں ہیں اور پارٹی کے خلاف عوامی طورپر بول کر انہوں نے پارٹی کی بدنامی کی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

اسکولی بچوں کے سوشیل میڈیا استعمال کرنے پر پابندی،پابندی پامال کرنے والوں کو اسکول سے نکال دینے کی تاکید

ریاستی محکمۂ تعلیمات نے کمسن ذہنوں پر سوشیل میڈیا کے اثرات کو دیکھتے ہوئے سختی سے یہ فرمان جاری کیا ہے کہ 13سال کی عمر تک کے بچوں کو سوشیل میڈیا کا استعمال کرنے کی اجازت قطعاً نہ دی جائے۔

مودی حکومت کے انسداد گؤ کشی قانون کو کمار سوامی نے قرار دیا خوش آئند: گائیوں کی دیکھ بھال کیلئے مراکز قائم کرنے کا بھی مشورہ

مرکزی حکومت کی طرف سے کل ملک بھر میں لاگو کئے گئے انسداد گؤ کشی قانون کا سابق وزیراعلیٰ اور ریاستی جنتادل(ایس) صدر ایچ ڈی کمار سوامی نے خیر مقدم کیااور کہاکہ مرکزی حکومت کو چاہئے کہ اس قانون کو نافذ کرنے کے ساتھ ملک بھر میں گائیوں کی دیکھ بھال کیلئے مراکز قائم کرے۔

موسلادھار بارش کی وجہ سے شہر میں عام زندگی متاثر،نشیبی علاقے زیر آب ، دوسو سے زائد درخت اور متعدد بجلی کے کھمبے زمین بوس

شہر میں کل رات ہوئی زبردست بارش کے سبب 200 سے زائد مقامات پر درخت اور بجلی کے کھمبے اکھڑگئے اور ساتھ ہی نہ صرف نشیبی علاقے بلکہ چند مشہور ومعروف سرکاری اور دیگر عمارتوں میں بھی بارش کا پانی گھس آیا۔