مرکزی حکومت کسانوں کے مفادات کو نظرانداز کررہی ہے: کانگریس

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 19th May 2017, 1:40 AM | ریاستی خبریں |

میسور:18/مئی (یو این آئی)کرناٹک کانگریس کے نائب صدر پروفیسر بی کے چندر شیکھر نے آج کہاکہ تمام سیاسی جماعتوں کو سطحی سیاست چھوڑ کر ریاست میں کسانوں کی بدحالی پر غور و خوض کرکے خشک سالی سے وابستہ حالات پر مرکزی حکومت کو ایک رپورٹ بھیجنی چاہئے۔مسٹر چندر شیکھر نے آج یہاں نامہ نگاروں سے کہاکہ تمام سیاسی جماعتوں کا کہنا ہے کہ وہ اقتدار میں آنے پر تمام کسانوں کے قرض معاف کردیں گی لیکن یہ ممکن نہیں ہے کیونکہ قومی نمونہ سروے کی رپورٹ کے مطابق ملک میں 52فیصد سے زائد کسان قرض کے بوجھ سے دبے ہوئے ہیں۔ آندھراپردیش میں سب سے زیادہ کسانوں کے خودکشی کرنے کے معاملے سامنے آئے ہیں اور اس معاملے میں کرناٹک کانمبر تیسرا ہے۔ ریاستی حکومتوں کو نشانہ بنانے کے بجائے مرکزی حکومت کو زراعت اور آبپاشی جیسے امور کو ترجیح دینی چاہئے۔انہوں نے کہاکہ وزیراعظم نریندر مودی امریکہ جاکر تقریر کرتے ہیں جبکہ کسانوں کی حالت کی انہیں کوئی پرواہ نہیں ہے۔ کسانوں کی حالت کے بارے میں مرکزی حکومت کو پارلیمنٹ کا خصوصی اجلاس بلاکر اس معاملے پر بات چیت کرنی چاہئے۔سینئر کانگریس لیڈر اے وی وشوناتھ کے پارٹی چھوڑنے سے متعلق سوال پر انہوں نے کہاکہ وہ اب بھی پارٹی میں ہیں اور پارٹی کے خلاف عوامی طورپر بول کر انہوں نے پارٹی کی بدنامی کی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

الحاج قمرالاسلام کی وفات پرمولانااسرارالحق قاسمی کااظہارتعزیت

عالم دین وممبرپالیمنٹ مولانااسرارالحق قاسمی نے کرناٹک کے معروف سیاسی رہنمااورگلبرگہ سے ممبراسمبلی الحاج قمرالاسلام کے انتقال پر اپنے دلی رنج وغم کا اظہار کرتے ہوئے اپنے تعزیتی بیان میں کہاکہ مرحوم ایک سرگرم سیاسی رہنماہونے کے ساتھ مسلمانوں کے ملی مسائل سے بھی دلچسپی رکھتے ...

بھٹکل میونسپالٹی عمارت پر پتھرائو کا معاملہ؛ایم پی شوبھا کرندلاجے نے پولس سے کہا؛ بی جے پی کارکنان کی گرفتاری بند کی جائے؛ لیڈران کو گرفتار کرنے کی صورت میں دی دھمکی

بی جے پی لیڈر شوبھا کرندلاجے نے آج منگل کو بھٹکل ٹائون پولس تھانہ پہنچ کر بھٹکل ڈی وائی ایس پی سے نہایت ترش لہجہ میں کہا کہ وہ بی جے پی کارکنان کی گرفتاری کا سلسلہ فوری طور پر بند کرے۔ شوبھا نے کہا کہ پولس نے اب تک 9 لوگوں کو گرفتار کیا ہے، اگر پولس مزید لوگوں کو گرفتار کرتی ہے تو ...

جی ایس ٹی کی وجہ سے ریاست کرناٹک کو900 کروڑ کانقصان

گوڈس اینڈ سروس ٹیکس (جی ایس ٹی) نے ریاست کے خزانہ پر بہت بری طرح سے اثر کیا ہے اور جدید مربوط محصول نظام کے جاری کئے جانے کے ایک ماہ بعد جولائی کے مہینہ میں ریاست کو محصول کی آمدنی میں سے نو سو کروڑ روپئے کا نقصان برداشت کرنا پڑا ہے۔