سی بی آئی معاملہ پر راجیہ سبھا میں ہنگامہ، اجلاس دن بھر کے لئے ملتوی

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 9th January 2019, 2:25 AM | ملکی خبریں |

نئی دہلی:8/جنوری (ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا)سی بی آئی کے غلط استعمال سمیت مختلف مسائل پر ایس پی اور دیگر اپوزیشن جماعتوں کے ارکان کے ہنگامے کی وجہ سے منگل کو راجیہ سبھا کی کارروائی دن بھر ملتوی رہی اور پانچ بار ملتوی ہونے کے بعد شام تین بج کر تقریبا 30 منٹ پر کارروائی پورے دن کے لئے ملتوی کر دی گئی۔ ہنگامے کی وجہ سے ایوان بالا میں آج بھی وقفہ صفر بھی نہ ہوسکا۔ اجلاس شروع ہونے پر چیئرمین ایم وینکیا نائیڈو نے ضروری دستاویزات ایوان میں رکھوائے اور کہا کہ انہیں کچھ ارکان کی جانب سے مختلف معاملات پر بات چیت کے لئے قوانین 267 کے تحت نوٹس ملے ہیں لیکن انہوں نے یہ نوٹس قبول نہیں کئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ تمام معاملات پر بات چیت کی جا سکتی ہے۔ اسی درمیان ایوان میں ہنگامہ شروع ہو گیا۔ ایس پی ارکان نے اپنے پارٹی رہنماؤں کے خلاف مرکزی تفتیشی ایجنسیوں کے غلط استعمال کے مسئلے پر اور کانگریس، بی ایس پی، ترنمول کانگریس سمیت دیگر جماعتوں نے مختلف امور پر ہنگامہ شروع کر دیا۔ نائیڈو نے ارکان سے پرسکون رہنے اور کارروائی چلنے دینے کی اپیل کی۔ کانگریس کے کچھ اراکین رافیل طیارے سودے کی مشترکہ پارلیمانی کمیٹی (جے پی سی) سے جانچ کرانے کا مطالبہ کرتے ہوئے نعرے لگانے لگے۔ بعد میں کانگریس کے رکن بھی آسن کے سامنے آگئے۔ ۔قابل ذکر ہے کہ پارلیمنٹ کے سرمائی اجلاس کے لئے مقررہ اعلان کے مطابق آج کاروائی کا آخری دن تھا؛ لیکن ایوان بالاکا اجلاس ایک دن کے لئے اور بڑھا دیا گیا ہے۔ 

ایک نظر اس پر بھی

الیکشن کمیشن کا حلف نامہ - گجرات میں راجیہ سبھا انتخابات قانون کے مطابق، کمزور پڑ رہی کانگریس 

گجرات میں راجیہ سبھا انتخابات کو لے کر کانگریس کی درخواست پر الیکشن کمیشن نے حلف نامہ داخل کیا ہے الیکشن کمیشن نے دو سیٹوں پر الگ الگ انتخابات کرانے کے اپنے فیصلے کو برقرار رکھا۔

بی ایس این ایل کی حالت خراب؛ ملازمین کو جون کی تنخواہ دینے کے لیے نہیں ہیں رقم

رکاری ٹیلی کام کمپنی بی ایس این ایل نے حکومت کو ایک خط  بھیجا ہے، جس میں کمپنی نے آپریشنز جاری رکھنے میں تقریبا نااہلی ظاہر کی ہے۔کمپنی نے کہا ہے کہ رقم میں  کمی کے سبب کمپنی کے ملازمین کو  جون ماہ کی تنخواہ  تقریبا 850 کروڑ روپے  دے پانا مشکل ہے۔کمپنی پر ابھی قریب 13 ہزار کروڑ ...