بھٹکل میں موسلادھار بارش؛ شرالی سے الوے کوڈی کو جوڑنے والی عارضی سڑک پانی میں بہہ گئی

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 8th June 2018, 6:58 PM | ساحلی خبریں |

بھٹکل 8/جون (ایس او نیوز) تعلقہ بھر میں کل جمعرات صبح سے جاری موسلادھار بارش آج شام تک مسلسل جاری ہے۔  ایک طرف  ندی نالے پانی سے بھر کر لبریز ہوگئے ہیں تو وہیں تعلقہ کے شرالی میں شرالی سے الوے کوڈی کو جوڑنے والی عارضی سڑک  کو بارش کے پانی نے بہادیا ہے، جس کے ساتھ ہی الوے کوڈی کی طرف جانے والوں کے لئے سخت دشوای پیش آرہی ہے۔

بتایا گیا ہے کہ رات قریب تین بجے  زبردست بارش کے نتیجے میں پوری سڑک پلّی نالے میں بہہ گئی، جس کے ساتھ ہی الوے کوڈی کا شرالی اور بھٹکل سے بری رابطہ ٹوٹ گیا۔

خیال رہے کہ شرالی کے  پلّی نالے پر واقع بریج بے حد خستہ حال ہونے کی وجہ سے قریب دو ماہ قبل اُس بریج کو نکال کر وہاں نئی بریج کا کام شروع کیا تھا، ایسے میں   عوام کو ایک جگہ سے دوسری جگہ پہنچنے کے لئے   عارضی طور پر ایک عارضی سڑک تعمیر کرکے دی گئی تھی اور ندی سے پانی کے اخراج کے لئے  بڑے بڑے پائپ بچھائے گئے تھے، مگر رات کو زبردست بارش سے ندی کے اندر بچھائے گئے موٹے پائپ کو ہی ندی کے تیز بہائو کی نظر ہوگئے ، اور پائپوں کو پانی اپنے ساتھ بہا لے گیا، جس کے ساتھ ہی پائپ  پوری سڑک زمین بوس ہوگئی۔

سڑک کا رابطہ ٹوٹتے ہی اب بھٹکل اور شرالی سے پلّی، تٹّی ہکّل، منہونڈا، کلسیکیری، الوے کوڈی اور سنبھاوی جیسے دیہات الگ تھلگ ہوگئے، واقعے کی اطلاع ملتے ہی  پی ڈبلیو کے اہلکار اور  شرالی پنچایت کے اہلکار سمیت بھٹکل رکن اسمبلی سنیل نائک نے فوری جائے وقوع پر پہنچ کر جائزہ لیا، جس کے بعد سڑک کی تعمیر کرنے والی کنٹریکٹ کمپنی  کے ذریعے ہی  عوام کو ایک جگہ سے دوسری جگہ لانے اور لے جانے کے لئے عارضی طور پر کشتی کا انتظام کیا گیا ہے۔ ساتھ ساتھ پرانے اور خستہ حال   پیدل بریج کو فوری طور پر درست کرکے چلنے  لائق بنایا گیا ہے۔

عارضی سڑک پانی میں بہہ جانے سے  سواریوں کو  اب بینگرے ،ماون کٹے کے راستے سے الوی کوڈا جانا ہوگا جو کافی لمبا راستہ ہے۔

مقامی لوگوں نے ساحل آن لائن سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ پلّی ہالّا  بریج کی پوری  سڑک پانی میں بہہ جانے سے عوام کے ساتھ ساتھ   اسکول اور کالج جانے والے بچے سب سے زیادہ متاثر ہوئے ہیں، جو بریج کے اُس پار والے  درو دراز کے دیہاتوں سے بھٹکل کے اسکولوں اور کالجوں کے لئے جاتے ہیں۔

 

بھٹکل میں 75.4 ملی میٹر بارش:   7/جون سے آج 8/جون صبح آٹھ بجے  تک بھٹکل میں 75.4 ملی میٹر بارش ریکارڈ کی گئی ہے۔ اسی طرح بھٹکل تعلقہ میں اب تک ہوئی جملہ بارش 440.9 ملی میٹر  ریکارڈ کی گئی ہے۔ خیال رہے کہ گذشتہ سال کے  مانسون کے مقابلے میں اس بار  8/ جون صبح آٹھ بجے تک 127.3 ملی میٹر بارش زائد ریکارڈ کی گئی ہے۔ بارش کی  شروعات کےساتھ ہی بھٹکل میں  کھتی باڑی کا کام بھی شروع ہوگیا ہے اور کسان کھیتوں میں بیج بونے کی تیاری  میں ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

کاروار:انکولہ ۔ہبلی ریلوے لائن کی سدراہ بنے ماحولیاتی این جی اوز کو ملنے والی مالی امداد کی جانچ کریں : رکن اسمبلی روپالی نائک کامرکزی ریلوے وزیر سے مطالبہ

ریاست کے ساحلی علاقے سے شمالی کرناٹک  کو جوڑنے والی ’قسمت کی ریکھا‘ انکولہ ۔ ہبلی ریلوے لائن کی تعمیرمیں جو ماحولیاتی اداروں ، این جی اوزاور ماہرین سدراہ بنے ہوئے ہیں دراصل یہ تمام  بیرونی ممالک کی  کروڑوں دولت کے تعاون سے بےبنیاد چیخ وپکار کررہے ہیں کاروار انکولہ کی رکن ...

کاروار میں انکولہ ۔ہبلی ریلوے لائن منصوبےکو جاری کرنےعوامی احتجاج : قومی شاہراہ بند کرنے پر احتجاجی پولس کی تحویل میں

انکولہ۔ ہبلی ریلوے لائن منصوبہ، سرحد علاقہ کاروار میں صنعتوں کا قیام سمیت مختلف مانگوں کو لے کر لندن برج پر قومی شاہراہ کو بند کرتے ہوئے احتجاج کی تیاری میں مصروف کنڑا چلولی واٹال پارٹی کے واٹال ناگراج سمیت 21جہدکاروں کو پولس نے گرفتار کرنے کے بعد رہاکردیا۔

لوک سبھاانتخابات کی تیاری میں مصروف الیکشن کمشن :اتراکنڑا  ضلع میں 11.40 لاکھ رائے دہندگان : 14ہزار ووٹرس آؤٹ تو 12ہزار ووٹرس اِن

الیکشن کمیشن  آئندہ ہونےو الے لوک سبھا انتخابات کی تیاری میں مصروف ہے۔اندراج و اخراج   اور ترمیم کے بعد تشکیل دی گئی  رائے دہندگان کی  فہرست کے مطابق ضلع کے 6ودھان سبھا حلقہ جات میں کل 11،40،316 ووٹر ہیں۔ چونکہ انتخابات کے قریب تک ووٹروں کے اندراج کے لئے موقع دیا گیا ہے تو رائے ...

شرالی میں قومی شاہراہ کی توسیع کو لےکر ہزاروں عوام  شاہراہ روک کیا  احتجاج : مجموعی استعفیٰ کا انتباہ اور الیکشن بائیکاٹ کا اعلان

تعلقہ کے شرالی میں دن بدن قومی شاہراہ کی توسیع کو لےکر معاملہ گرم ہوتا جارہاہے۔ شرالی میں قومی شاہراہ کی توسیع 45میٹر سے کم کرکے 30میٹر کئے جانےکی مخالفت کرتے ہوئے جمعرات کو ہزاروں لوگو ں نے قومی شاہراہ روک کر سخت احتجاج درج کیا۔ اس دوران عوامی مانگوں کو منظوری نہیں دی گئی تو ...