تلنگانہ میں بھیانک سڑک حادثہ، بس کھائی میں جاگری؛ 43 ہلاک، 20 زخمی

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 11th September 2018, 3:23 PM | ملکی خبریں |

حیدرآباد 11/ستمبر (ایس او نیوز/ایجنسی)  تلنگانہ کے جگتیال میں منگل کو پیش آئے  ایک بھیانک سڑک حادثہ میں 43 سے زائد لوگوں کے ہلاک ہونے کی خبر ملی ہے، جبکہ بیس افراد زخمیوں میں شامل ہیں۔ حادثہ کونڈاگٹوٹ  گھاٹ پر پیش آیا۔

تلنگانہ اسٹیٹ روڈ ٹرانسپورٹ کی  اس بس پر 62 افراد سفر کررہے تھے۔فوری طور پر زخمیوں کو قریبی اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے اور راحت اور بچاو کا کام جاری ہے۔ ضلع جگتیال کے  سپرنٹنڈنٹ آف پولس سندھو شرما نے حادثے میں اب تک 43 لوگوں کے مرنے کی تصدیق کی ہے، مگر کچھ کی حالت نہایت نازک ہونے کی بھی خبر دی ہے۔

بتایا گیا ہے کہ بس کونڈا گٹوٹ کے ہنومان مندر سے جگتیال جارہی تھی، سڑک پر ڈھلان ہونے کی وجہ سے بس کو موڑتے وقت بریک فیل ہوگیا اور بس گھاٹی سے سیدھے نیچے کھائی میں جاگری۔ ایک ذرائع کے مطابق بس کھائی میں گرنے سے پہلے چار بار پلٹیاں کھائی تھیں جس کے بعد کافی گہری کھائی میں جاگری۔

وزیر اعلی چندرشیکھر راؤ نے اس حادثے پر سخت افسوس کا اظہار کیا ہے اور زخمیوں کو فوری طور پر ضروری  طبی امداد فراہم کرنے ہر طرح کی  سہولیات فراہم کرنے کا حکم دیا ہے. اسی طرح ریاستی حکومت کی جانب سے حادثے میں ہلاک ہونے والوں کےورثاء کو 5 لاکھ روپیہ  معاوضہ دینے  کا بھی اعلان کیا ہے.

ایک نظر اس پر بھی

جھارکھنڈمیں پھرہجومی دہشت گردی 

وزیراعظم کہتے ہیں کہ ایک واقعے کے لیے ریاست کی تنقیدنہیں کی جاسکتی لیکن جھارکھنڈمیں متعددہجومی دہشت گردی ہوچکی ہے اوریہ سلسلہ جاری ہے۔