کرپشن الزامات کے بعد تہران کے اصلاح پسند میئر مستعفی

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 11th April 2018, 4:54 PM | عالمی خبریں |

تہران 11اپریل(ایس او نیوز؍ آئی این ایس انڈیا) ایران کے دارالحکومت تہران کی بلدیہ نے ایک بیان میں بتایا ہے کہ شہر کے میئر نے مبینہ بدعنوانی کے الزامات کے بعد اپنے عہدے سے استعفیٰ دے دیا ہے۔ذرائع کے مطابق تہران بلدیہ کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ سبکدوش ہونے والے میئر اصلاح پسند رہ نما محمد علی نجفی کو استعفیٰ نہ دینے کی صورت میں گرفتار کرنے کی دھمکیاں دی گئی تھیں جس کے بعد انہوں نے رضاکارانہ طورپر میئر کے عہدے سے استعفیٰ دے دیا ہے۔تاہم گذشتہ برس مئی میں میئر کا عہدہ سنبھالنے والے علی نجفی کا کہنا ہے کہ انہوں نے بیماری کے باعث استعفیٰ دیا ہے اور انہیں طویل علاج کی ضرورت ہے تاہم انہوں نے بیماری کی وضاحت نہیں کی۔بلدیہ کے دیگر عہدیداروں اور ان کے جانشینوں کا کہنا ہے کہ علی نجفی کو کرپشن کے الزامات کی بناء پر عہدے سے ہٹایا گیا ہے۔ ایران کے بنیاد پرست حلقوں کی طرف سے ان پربدعنوانی کا الزام عاید کیا گیا تھا۔بلدیہ کے ایک سینیر رکن مرتضیٰ الفیری کا کہنا ہے کہ محمد علی نجفی سے ایک رات پراسیکیوٹر جنرل کے دفتر میں پوچھ تاچھ کی گئی ہے۔الفیری نے اپنے ویدیو بیان میں کہا ہے کہ علی نجفی کے ساتھ نامناسب اور غیر مہذبانہ انداز میں بات کی گئی۔ انہیں رات کو سوتے ہوئے اٹھا کر پراسیکیوٹر جنرل کے دفتر لے جایا گیا۔ میں نے سنا ہے کہ انہیں گرفتار کرنے کی دھمکی بھی دی گئی۔خیال رہے کہ محمد علی نجفی کا شمار ایران کے اصلاح پسند اور اعتدال پسند رہ نماؤں میں ہوتا جب کہ وہ ملک کے انتہا پسند حلقوں کی طرف سے ہمیشہ تنقید کی زد میں رہے ہیں۔گذشتہ ماہ ایران میں خواتین کے قومی دن کے موقع پر انہوں نے بلدیہ کے زیراہتمام ایک محفل کا انعقاد کیا جس میں اسکول کی بچیوں نے روایتی رقص پیش کیا تھا۔ ایران کے بنیاد پرست حلقوں نے اسے غیراسلامی اور غیراخلاقی تقریب قرار دیتے ہوئے علی نجفی کے خلاف سخت کارروائی کا مطالبہ کیا تھا۔

ایک نظر اس پر بھی

نیویارک کے مرکزی علاقے میں زیر زمین بھاپ پائپ لائن پھٹنے سے دھماکے

نیویارک شہر کے فائر ڈپارٹمنٹ نے کہا ہے کہ مین ہیٹن کی گلیوں میں زیر زمین گزرنے والا ایک ہائی پریشر بھاپ کا پائپ پھٹ گیا جس کے نتیجے میں ففتھ ایونیو کے مرکز میں واقع ایک سوراخ سے بھاپ نکل کر ہوا میں پھیلنا شروع ہو گئی۔

ترک بچوں اور خواتین کا جنسی استحصال کرنے والا خود ساختہ مذہبی رہنما گرفتار

استنبول کی ایک عدالت نے بزعم خود ایک اسلامی فرقے کے رہنما اور ٹی وی پر تبلیغ کرنے والی شخصیت عدنان اوکتار کو 115 دیگر پیروکاروں سمیت مختلف الزامات کی مزید تفتیش کے لئے پولیس کے حوالے کر دیا ہے۔ عدنان اوکتار پر جرائم پیشہ گینگ قائم کرنے، دھوکادہی اور جنسی استحصال کے الزامات ہیں۔

مقتدیٰ الصدر نے مظاہرین کی حمایت کردی ،نئی حکومت کی تشکیل مُوَخَّر کرنے کا مطالبہ

عراق کے سرکردہ شیعہ لیڈر مقتدیٰ الصدر نے ملک کے جنوبی صوبوں میں احتجاج کرنے والے مظاہرین کی حمایت کردی ہے او ر تمام متعلقہ سیاست دانوں پر زور دیا ہے کہ وہ مظاہرین کے بہتری شہری خدما ت کی فراہمی کے مطالبات پورے ہونے تک نئی حکومت کی تشکیل کے لیے مذاکرات کا سلسلہ معطل کردیں ۔