5؍ہزارسرکاری اسکول اساتذہ کو نومبرکی تنخواہ نہیں ملے گی

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 13th November 2017, 11:17 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،12/نومبر(ایس او نیوز) 5؍ہزار سے زائد سرکاری اسکول کے اساتذہ کو نومبر کی تنخواہ نہیں ملے گی۔ محکمہ تعلیمات عامہ نے طے کیاہے کہ ماہانہ دوسو روپئے کا خصوصی بھتہ جو ان اساتذہ کو 2008ء سے دیاجارہاہے اس کو واپس حاصل کرنے کے لئے یہ رقم اس مہینہ کی تنخواہ سے وضع کی جائے گی۔ ریاستی حکومت نے پرائمری اسکول اساتذہ کے لئے خصوصی بھتہ 2006ء میں منظور کیا تھا۔ بعد ازاں یہ بھتہ بڑھاکر پرائمری اسکول اساتذہ کے لئے ماہانہ 300؍روپئے، سکینڈری اساتذہ کے لئے ماہانہ 400؍روپئے اور پی یوسی لکچررز کے لئے ماہانہ 500؍روپئے کردیاگیاتھا۔ لیکن 2008ء میں پرائمری اسکول اساتذہ کے لئے اور 2014ء میں سکینڈری اسکول اساتذہ اور پی یو سی لکچررس کے لئے اس خصوصی بھتہ کا حکمنامہ منسوخ کردیا گیا اس کے باوجود اساتذہ کو یہ بھتہ دیا جارہاتھا۔ سی اے جی کی سرکاری جانچ میں اس بات کا خلاصہ کیا گیاہے۔ ایک اور سرکاری جانچ میں پتہ چلا ہے کہ 1557پرائمری اسکول اساتذہ سے افزود خصوصی بھتہ کے 127؍لاکھ روپئے، 3789؍سکینڈری اسکول اساتذہ سے 512؍لاکھ روپئے اور 1896؍پی یو سی لکچررس سے 193؍لاکھ روپئے حکومت موصول ہونے ہیں۔ ایسے اساتذہ کا تعلق زیادہ تر بلاری، بلگاوی، بیدر، وجیاپور، داونگیرے، ٹمکور، ہاسن اور منڈیا اضلاع سے ہے۔ کرناٹکا پرائمری اسکول ٹیچرس اسوسی ایشن کے صدر بسواراج گریکر نے بتایاکہ اس ضمن میں ہم نے تعلیمات عامہ کے کمشنر اور محکمہ کے اعلیٰ افسروں سے رابطہ کیاہے اور درخواست کی ہے کہ اگر ممکن ہوتو اس خصوصی بھتہ کو جاری رکھاجائے۔ اتنی بڑی رقم کو وضع کرنے کے لئے تنخواہ میں کٹوتی کرنے سے اساتذہ اور ان کے کنبوں کے لئے مشکلات پیداہوں گی۔ ایک سرکاری اسکول ٹیچر نے بتایاکہ پورے ایک مہینہ کی تنخواہ روک لئے جانے کی بجائے یہ رقم قسطوں میں وضع کی جائے تو بہتر ہوگا۔

ایک نظر اس پر بھی

انتخابات کے پیش نظر پارٹی لیڈروں کے باہمی تبادلہ خیالات کاسلسلہ سی ایم ابراہیم کی جے ڈی ایس سربراہ دیوے گوڈا سے ملاقات

ریاستی اسمبلی انتخابات جیسے جیسے قریب آنے لگے ہیں ، سیاسی قائدین سے ملاقاتیں اور ان سے تبادلہ خیالات کا سلسلہ شروع ہوجاتا ہے جوکافی اہم اور دلچسپ ہوا کرتا ہے ۔

کانگریس نے لوک سبھا میں بھی طلاق ثلاثہ بل کی مخالفت کی تھی کرناٹک وقف بورڈ کے انتخابات میں تاخیر افسوسناک :ڈاکٹر کے رحمٰن خان

لوک سبھا میں طلاق ثلاثہ بل کے خلاف کانگریس نے کوئی آواز نہیں اٹھائی یہ ایک غلط خبر ہے اور بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کی پیداوار ہے جس کو اسی کی ایماء پر میڈیا نے پھیلایاہے۔

اگلا وزیراعلیٰ بنانے ہائی کمان کے اعلان سے سدارامیاکا حوصلہ بلند راہل گاندھی کے بیان سے وزیراعلیٰ کی کرسی پر نظر رکھے لیڈروں کو مایوسی۔ بغاوت کے آثار

ریاست کرناٹک میں ہونے و الے اگلے اسمبلی انتخابات میں کانگریس پارٹی اگر اکثریت حاصل کرکے دوبارہ اقتدار حاصل کرلے گی تو سدارامیا ہی اگلے وزیراعلیٰ ہوں گے ۔

مودی ، یوگی اور ونود سب نے کرناٹک کی توہین کی ،گالی گلوچ بی جے پی کا مزاج ؛گوا کے وزیر آبپاشی ونود پالیکر نے کیا کنڑیگا س کو ذلیل

منہ پھٹ بی جے پی لیڈرز ہر دن کوئی نہ کوئی متنازعہ اور اشتعال انگیز بیان دیتے ہوئے عوامی غیض وغضب کا شکار ہورہے ہیں، بیلگاوی ضلع کے خانہ پور تعلقہ میں چل رہے کلسا نالا تعمیراتی کاموں کا معائنہ کرنے کے بعد گوا کے وزیر برائے آبپاشی ونود پالیکر نے کرناٹک کے باشندوں کو حرامی کہہ ...

اُترکنڑا کے سُودّی ٹی وی نیوز چینل کے رپورٹرکی بائک درخت سے ٹکراگئی؛ رپورٹر کی موقع پر موت

سرسی سے ہانگل جانے کے دوران ایک کنڑا نیوز چینل کے رپورٹر کی بائک تیز رفتاری کے ساتھ  ایک درخت سے ٹکرانے کے نتیجے میں موقع پر ہی اُس کی موت واقع ہوگئی۔ یہ حادثہ اتوار کو ضلع ہاویری کے ہانگل کے قریب گُنڈورو نامی دیہات میں علی الصباح پیش آیا۔