بھٹکل:مجلس اصلاح وتنظیم کے زیر اہتمام طلبا کے درمیان یوم آزادی کے موضوعات پر تقریر ی مقابلہ

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 13th August 2017, 9:24 PM | ساحلی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

بھٹکل:13/اگست (ایس اؤنیوز)مجلس اصلاح وتنظیم بھٹکل کی جانب سے یوم آزادی15 اگست کی مناسبت سے اسکول ،کالج اور ڈگری کالج اور مدارس طلباءکے مابین انجمن کے اردو اینگلو ہائی اسکول بھٹکل کےعثمان حسن ہال میں ایک آزادی کے مختلف موضوعات پر اردو، کنڑا اور انگریزی زبان میں علاحیدہ علاحیدہ تقریری مقابلہ کااہم پروگرام منعقد کیا گیا۔

ہائی اسکول ، پی یوکالج، ڈگری کالج اور مدارس طلبا نے حضرت ٹیپو سلطان ؒ ایک بے مثال مجاہد ِآزادی ،تحریکِ خلافت اور جدوجہد آزادی اور جنگ ِ آزادی میں شعراء کا کردار جیسے عنوانات پر اپنے معصومانہ انداز میں پرمغز خیالات کو پیش کرتے ہوئے اپنی صلاحیتوں کو بہترین مظاہرہ کیا۔

پروگرام میں جامعہ اسلامیہ بھٹکل کے مہتمم مولانا مقبول احمد کوبٹے ندوی نے خطاب کرتےہوئے وقت کی ضرورت کے مطابق تقریری مقابلے کے لئے عنوانات کو منتخب کرتے ہوئے نئی نسل کو اپنے اسلاف سے جوڑنے کی بہترین کوشش کی ہے جس پر تنظیم کے ذمہ داران مبارکبادی کے مستحق ہیں۔ مقابلے میں طلبا کا شریک ہونا ہی کامیابی کی دلیل قرار دیا۔ وہیں مولانا نے پروگرام میں عوامی شرکت پر کہاکہ ایسے پروگراموں میں زیادہ سے زیادہ افراد شریک ہوکر طلبا کی ہمت افزائی اور نئی نسل کی حوصلہ افزائی کرنےکی اپیل کی۔تنظیم کے صدر قاضیا مزمل نے پروگرام کی صدارت کرتے ہوئے جنگ آزادی اور تحریک خلافت سے اہل بھٹکل کی کاوشوں پر بھی روشنی ڈالنے کی اپیل کی۔ انجمن حامئی مسلمین بھٹکل کے ایڈیشنل جنرل سکریٹری محمد اسحق شاہ بندری نے بھی موقع کی مناسبت سے خطاب کرتے ہوئے طلبا کو زیادہ تر کتب خانے میں مطالعہ کرنے کی نصیحت کی۔ اس موقع پر ملی اداروں میں زیر تعلیم طالبات کے لئے آزادی کے 70سال بعد ہمارا ہندوستان، جنگ آزادی میں مسلم خواتین کا رول اور آزادی کے بعد ہندوستان کس موڑ پر جیسے موضوعات پر اردو، کنڑا اور انگریزی زبانوں میں تحریری مقابلہ جات منعقد کئے جانے کی جانکاری دیتے ہوئے بتایا گیا کہ ان کے نتائج کا اعلان بہت جلد کیا جائے گا۔

پروگرام کا آغاز عمرو ابن محی الدین جیلانی اکرمی کی تلاوت قرآن سے ہوا۔ محمد نعمان ابن محمد طلحہ بیلی نے ہدیہ نعت پیش کی۔ محمدنعمان اور ساتھیوں نےعلامہ اقبال ؒ کا ترانہ ہندی ’’ سارے جہاں سے اچھا ‘‘کو پیش کیا۔ تنظیم کے جنرل سکریٹری محی الدین الطاف کھروری نے استقبال کرتے ہوئے مختصرا تعارف پیش کیا۔ تنظیم کے سکریٹری مولانا سید یاسر ندوی نے شکریہ اداکرتے ہوئے مع اقبال سعیدی نظامت کے فرائض انجام دئیے۔ تقریری مقابلہ جات میں انعام پانے والے طلبا کے درمیان ڈائس پر موجود رابطہ سوسائٹی کے سابق صدر محمد صادق پلور، بھٹکل مسلم جماعت دبئی کے سکریٹری محمد یوسف برماور، ثقافتی کمیٹی کے کنونیراور مقابلے کے نگراں کار سید عبدالعظیم امباری اور دیگر ذمہ داران کے ہاتھوں انعامات عطاکئے گئے ۔ انعام یافتہ طلبا کی تفصیل کچھ اس طرح ہے۔

ہائی اسکول :                                         اردو

اول: خبیب احمد ابن مولانا خواجہ معین الدین ندوی مدنی اکرمی ، آئی یو ایچ ایس ، بھٹکل

دوم : فارقلیط ردا ابن محمد رضامانوی نیو شمس ہائی اسکول

سوم : سید حماد ابن سید ہاشم ایس ایم علی پبلک اسکول

انگریزی :

اول: حسن روبین ابن ریاض احمد گنگاولی ، آئی یو ایچ ایس،نوائط کالونی

دوم : عبدالطیف بن افتخار شیخ، شمس انگلش میڈیم ہائی اسکول،

سوم : ہشام ابن اشفاق موٹیا، نیو شمس ہائی اسکول،

کنڑا:

اول : بلال ابن آزاد ارگا شمس انگلش میڈیم اسکول ،

دوم : سیف علی بن عبدالقادر چیکری ، انجمن بائز ہائی اسکول،انجمن آباد

سوم : محمد شہنواز ابن شبیر احمد جامعہ اسلامیہ بھٹکل

پی یو کالج :                           اردو

اول : زکوان ابن نظام الدین جامعہ اسلامیہ ،بھٹکل

دوم : محمد عرباض ائیکری انجمن پی یوکالج ،بھٹکل

انگریزی میں انجمن پی یوکالج بھٹکل کے سید عبدالمنان اور کنڑا میں اسی کالج کے پٹھان سفیان نے اول انعام حاصل کیا ۔ جب کہ ڈگری کالج کے زمرے میں انگریز ی میں محمد سویدابن حفظ الرحمن آمری ،جامعہ اسلامیہ بھٹکل کے اول اورانجمن ڈگری کالج کے اہرار کو اعزازی اسی طرح کنڑا میں انجمن ڈگری کالج بھٹکل کے گنیش نائک کو بھی اعزازی انعام سے نوازاگیا۔

ایک نظر اس پر بھی

کوپل کے ایس پی انوپ کمار شیٹی کریں گے ضلع شمالی کینرا میں امن و امان کی نگرانی

ضلع شمالی کینرا میں مختلف مقامات پر سر ابھارنے والی فرقہ وارانہ کشیدگی کے پس منظر میں امن و شانتی کی نگرانی کرنے کے لئے کوپل ضلع کے ایس پی انوپ کمار شیٹی کو عبوری نگران کی ذمہ داری سونپی گئی ہے۔

اعلیٰ عدالتوں میں ایک دہائی یا اس سے زیادہ وقت سے زیر التوا ہیں چھ لاکھ کیس 

بمبئی ہائی کورٹ سمیت ملک کی مختلف اعلیٰ عدالتوں میں تقریبا چھ لاکھ کیس ایک دہائی یا اس سے زیادہ وقت سے زیر التوا ہیں۔ اس میں سے سب سے زیادہ تقریباً ایک لاکھ سے زائد کیس بمبئی ہائی کورٹ میں زیر التوا ہیں۔

ہوناور کی صورت حال معمول پر :واٹس اپ، فیس بک وغیرہ پر کڑی نگاہ : ڈی سی نکول کی شہریوں اور لیڈران سے میٹنگ

ہوناور کے حالات معمول پر۔واٹس اپ، فیس بک اور ٹیوٹر پر کڑی نگاہ۔اسکرین شاٹ کے ذریعے گروپوں کی نشاندہی۔ سخت قانونی کارروائی کا انتباہ۔ دکانیں،اسکول، کالجس،پٹرول بنک تمام بازار معمول پر لوٹے گا اترکنڑا ڈپٹی کمشنر ایس ایس نکول کا بیان

ا ب مدھیہ پردیش میں وکاس:تعلیم کی حالت خستہ، درست طریقہ سے حر ف آشنابھی نہیں طلبہ

مدھیہ پردیش میں پانچویں سے آٹھویں گریڈ تک کے 80 فیصد سے زیادہ طالب علم درست طریقے سے عبارت خوانی پر بھی قادر نہیں ہیں ،70 فیصد سے زیادہ طالب علم 1 سے 9 تک گنتی بھی نہیں جانتے ۔ ریاست میں تعلیم کی بدحالی کا انکشاف حالیہ دنوں اسمبلی میں پیش کی گئی کیگ رپورٹ سے ہوا ہے۔