عراق میں 3 سال سے لاپتہ ہیں 39ہندوستانی، سشما سوراج نے بحفاظت لوٹانے کا دیا بھروسہ

Source: S.O. News Service | Published on 16th July 2017, 9:57 PM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

نئی دہلی،16/جولائی (آئی این ایس انڈیا)عراق کے موصل میں 39ہندوستانی لاپتہ ہو گئے ہیں۔وزیر خارجہ سشما سوراج نے اتوار کو کہا کہ لاپتہ ہندوستانی شہری شاید عراق کی ایک جیل میں قید ہیں۔انہوں نے کہا کہ ذرائع سے اطلاع ملی ہے کہ موصل کے قریب واقع بادش گاؤں میں ایک جیل ہے، امکان ہے کہ ہندوستانی شہری وہیں قید ہیں۔وزیر خارجہ نے بتایا کہ بادش گاؤں میں ان دنوں جنگ جاری ہے، ایسے میں وہاں کا ماحول پرسکون ہونے کے بعد ہی لاپتہ ہندوستانیوں کی تلاش کی جا سکے گی۔پریس کانفرنس سے پہلے سشما سوراج نے وزیر مملکت برائے خارجہ وی کے سنگھ اور ایم جے اکبر کے ساتھ تمام لاپتہ 39ہندوستانیوں کے خاندانوں سے ملاقات کی، لاپتہ ہوئے ہندوستانی شہریوں کا 2014سے ہی کوئی پتہ نہیں ہے۔اہل خانہ کو وزارت خارجہ کے تینوں وزراء سے یقین دہانی کرائی کہ وہ ان کے اپنوں کو محفوظ ہندوستان لانے میں ان کی ہر ممکن مدد کریں گے،لاپتہ ہندوستانیوں میں زیادہ تر پنجاب کے ہیں۔سشما سوراج نے کہاکہ جس دن عراق کے وزیر اعظم نے آئی ایس آئی ایس سے آزادی کا اعلان کیاتھا، اسی دن میں نے وی کے سنگھ کو اربل جانے کے لیے کہاتھا۔وہاں ذرائع نے انہیں بتایا کہ لاپتہ ہندوستانی ممکنہ طور پر بادش کی کسی جیل میں بند ہیں،یہاں پر جنگ ابھی ختم نہیں ہوئی ہے۔وزیر خارجہ نے عراق میں واقع ہندوستانی سفارت خانے اور ہوائی اڈوں پر کام کر رہے ایئر انڈیا کے حکام کو بھی لاپتہ ہندوستانیوں کے بارے میں معلومات جمع کرنے کو کہا ہے۔حالانکہ وزارت خارجہ لاپتہ ہندوستانی شہریوں کے زندہ ہونے کو لے کر پر یقین ہے۔
 

ایک نظر اس پر بھی

مودی کے وارانسی پہنچنے سے پہلے بی ایچ یو کی طالبات کا مظاہرہ،مخالفت میں لڑکیوں نے سر کے بال بھی منڈوائے 

ایک طرف، حکومت بیٹی بچاؤ اور بیٹی پڑھاؤ کی بات کرتی ہے؛ دوسری جانب، پی ایم کے پارلیمانی حلقے وارانسی میں تعلیم حاصل کرنے والی طالبات خود کو محفوظ نہیں محسوس کرتے ہیں۔

سونیا گاندھی کا وزیراعظم پر خواتین تحفظات بل کو لوک سبھا میں منظور کرانے پر زور

صدر کانگریس سونیا گاندھی نے وزیراعظم نریندر مودی کو مکتوب لکھ کر ان پر زور دیا ہے کہ وہ لوک سبھا میں خواتین تحفظات بل کو منظور کروائیں اور ایوان میں بی جے پی کی اکثریت کا فائدہ لیتے ہوئے بل کو بہرحال منظور کردیا جاسکتا ہے۔

بھٹکل میونسپالٹی عمارت پر پتھرائو کے معاملے میں بی جے پی کارکنوں کی گرفتاری پر ناراضگی؛ کل سنیچر صبح نکالی جائے گی ریلی

 بھٹکل ٹائون میونسپالٹی عمارت پر پتھرائو اور توڑپھوڑ کے معاملے میں بی جے پی کارکنوں اور لیڈروں کی گرفتاری پر ناراض بھٹکل بی جے پی  نے کل سنیچر کو شرالی سے بھٹکل تحصیلدار دفتر تک ایک خاموش احتجاجی ریلی نکالنے کا فیصلہ کیا ہے۔

بهٹکل مسلم جماعت قطر کے لئے عہدیداران کا انتخاب؛ مولانا محمد یحیٰ برماور ندوی صدر اور زُبیر خلیفہ سکریٹری منتخب

کل جمعرات 21 ستمبر رات 10 بجے جناب محمد يحیٰ  برماور ندوی صاحب کی رہائش گاہ پر بهٹکل مسلم جماعت قطر کی پہلی انتظامیہ کی میٹنگ منعقد ہوئی جس میں 1439 - 1440 کیلئے  مولانا محمد یحیٰ برماور ندوی صدر اور جناب محمد زبیر خلیفہ سکریٹری منتخب ہوئے۔

مسلم دوست کے ساتھ چائے کی چسکیاں لینے پر بی جے پی لیڈر نے تمانچے رسید کئے

ایک ویڈیو جو وائیرل ہورہا ہے جس میں بی جے پی ویمن وینگ علی گڑ کی لیڈر سنگیتا وارشانی بتایاجارہا ہے کہ ایک لڑکی کو تمانچے رسید کررہے ہیں جس کا تعلق ہندوکمیونٹی سے ہے اور وہ سوال پوچھ رہی ہے لڑکی کے مسلم دوست سے رشتہ کے متعلق۔

بھٹکل میونسپالٹی عمارت پر پتھرائو کا معاملہ؛ گیارہ گرفتار شدگان کو ملی ضمانت

 14 ستمبر کو بھٹکل میونسپالٹی عمارت پر ہوئے پتھرائو اور پولس عملے پر حملے کے بعد پولس نے اب تک جن 15 لوگوں کو گرفتار کیا تھا، اُس میں سے 11 لوگوں کی ضمانت آج جمعرات کو بھٹکل جوڈیشیل میجسٹریٹ فرسٹ کلاس عدالت نے  منظوری دے دی ہے۔

بھٹکل میونسپالٹی عمارت پر توڑ پھوڑ کا معاملہ؛ سنگھ پریوار کے کارکنوں کی گرفتاری کے خلاف انکولہ میں احتجاج۔ بھٹکل چلو ریالی کا اعلان

بھٹکل میں بلدیہ عمارت پر حملے کے بعد توڑ پھوڑ اور سرکای عمارت کو نقصان پہنچانے کے الزام میں جہاں ایک طرف پولیس متعلقہ افراد کو گرفتار کررہی ہے، وہیں پر ضلع کے مختلف مقامات پر اسے ہندو مسلم تفرقہ کا رنگ دیتے ہوئے پولیس پر الزام لگایا جارہا ہے کہ وہ بلاوجہ ہندوؤں کو ہراساں کررہی ...