2 جی معاملے میں سی بی آئی،ای ڈی کو سرپیم کورٹ سے پھٹکار، چھ ماہ کے اندر تحقیقات کا حکم

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 12th March 2018, 8:51 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،12؍ مارچ (ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا) سپریم کورٹ نے مرکزی تفتیشی بیورو اور ای ڈی کو ہدایت دی کہ ٹو جی اسپیکٹرم معاملے اور اس سے متعلق دوسرے معاملات کی تفتیش چھ ماہ کے اندر مکمل کی جائے۔جسٹس ارون مشرا اور جسٹس نوین سنہا کی دو رکنی بنچ نے مرکز کو ٹو جی سپیکٹرم کیس اور ایئرسیل ۔میکسک سودے سمیت اس سے منسلک معاملات کی جانچ کی پیش رفت رپورٹ دو ہفتوں کے اندر پیش کرنے کی ہدایت دی۔بنچ نے اس معاملے کی سماعت کے دوران تبصرہ کیا کہ یہ تحقیقات کافی وقت سے چل رہی ہے اور ملک کے عوام کو اس طرح کے حساس معاملے میں زیادہ وقت تک اندھیرے میں نہیں رکھا جا سکتا۔عدالت عظمی نے سینئر وکیل آنند گروور کو ٹو جی معاملات میں خصوصی لوک پراسیکیوٹر کی ذمہ داری سے بھی آزاد کر دیا۔اس کے ساتھ ہی عدالت نے اضافی سالسیٹر جنرل تشار مہتا کو ٹو جی اسپیکٹرم معاملات کے لیے مخصوص پبلک پراسیکیوٹر مقرر کرنے کے مرکز کے فیصلے کو بھی منظوری دے دی۔ عدالت نے اسی معاملے میں ایک غیر سرکاری تنظیم کی طرف سے دائر پٹیشن بھی مسترد کر دی۔

ایک نظر اس پر بھی

جی ایس ٹی انٹیلی جنس کے ڈائریکٹوریٹ جنرل کے گروگرام زونل یونٹ دو تاجروں کو گرفتار کیا

جی ایس ٹی انیٹلی جنس کے ڈائریکٹوریٹ جنرل کے گروگرام زونل یونٹ نے سامان کی حقیقی سپلائی کے بغیر ان پٹ ٹیکس کریڈٹ( آئی ٹی سی) انوائسیز دھوکہ دہی سے جاری کرنے کے معاملے میں دو تاجروں وکاس گوئل اور راجوسنگھ کو گرفتار کیا ہے۔

بھساول ۔ناسک ٹاڈا مقدمہ: سرکاری گواہ نے پولس کی جانب سے لالچ دیئے جانے کا اعتراف کیا

۲۴؍ سال پرانے بھساول۔ناسک ٹاڈا مقدمہ میں گذشتہ کل تیسر ے سرکاری گواہ کی گواہی عمل میں آئی جس کے دوران اس نے جمعیۃ علماء مہاراشٹر (ارشد مدنی) کی جانب سے مقرر کردہ دفاعی وکیل شریف شیخ کی جرح کی دوران اعتراف کیا

کئی مہینوں تک 5 ویں کلاس کی طالبہ کی عصمت دری؛ پرنسپل اور ٹیچر کررہے تھے ریپ، حاملہ ہونے پر ہوا انکشاف؛ پولس کے بھی اُڑ گئے ہوش

پٹنہ پولس نے ایک نجی اسکول کے پرنسپل اور ایک ٹیچر کو ایک گیارہ سالہ لڑکی کی کئی مہینوں سے عصمت دری کرنے کے الزام میں گرفتار کرلیا ہے جن کے تعلق سے بتایا گیا ہے کہ پرنسپل اور ٹیچر پانچویں کلاس کی طالبہ کو  بلیک میل کرتے ہوئے بار بار اُس کا ریپ کررہے تھے۔

تین طلاق پر حکومت کی آرڈیننس قابل مذمت مسلمانوں کو محکوم بنانے کی کوشش ۔ ایس ڈی پی آئی

سوشیل ڈیموکریٹک پارٹی آف انڈیا (SDPI)نے مرکزی کابینہ کی جانب سے تین طلاق پر آر ڈیننس کومنظوری دیئے جانے کی سخت مذمت کرتے ہوئے اسے ملک کے مسلمانوں کو محکوم بنانے کی ناکام کوشش قرار دیا ہے۔آرڈیننس کے نفاذ سے تین طلاق ایک غیر ضمانتی جرم مانا جائے گا اور کم از کم تین سال کی جیل کی سزا ...

رافیل جنگی طیارہ سودے کو لے کر راہول گاندھی نے کیا وزیر دفاع سے استعفیٰ کا مطالبہ

کانگریس صدر راہل گاندھی نے وزیر دفاع نرملا سیتا رمن پر رافیل جنگی طیارہ سودے کو لے کر لگا تار جھو ٹ بولنے کا الزام لگاتے ہوئے کہا ہے کہ ان کے جھوٹ کی پول کھلتی جا رہی ہے اس لئے اب وہ اپنے عہدے سے استعفیٰ دے دیں۔