چنتامنی میں عصمت دری کی پھرواردات؛ نویں جماعت کی طالبہ بنی عصمت دری کا شکار؛دو گرفتار

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 10th January 2017, 2:18 PM | ریاستی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

چنتامنی:10 /جنوری(محمد اسلم/ایس او نیوز) چنتامنی میں عصمت دری کی پھر ایک واردات سامنے آئی ہے اور اس بار نویں جماعت میں زیر تعلیم ایک طالبہ عصمت دری کا شکار ہوئی ہے۔ ذرائع سے ملی اطلاع کے مطابق یہ طالبہ تعلقہ کے کترگوپے کی ساکنہ ہے۔ بتایا گیا ہے کہ  وہ ہر دن لکشمی دیونا کوٹے گاؤں کے سر کاری اسکول کو پیدل چلتے ہوئے اپنے گھر واپس آیا کرتی تھی لیکن گذشتہ 7دسمبر 2016 کواسکول جانے والی طالبہ واپس گھر نہیں لوٹی تو لڑکی کے والد نے 9 دسمبر 2016کو چنتامنی رورل پولیس تھانہ پہنچ کر معاملہ درج کرایا جس میں انہوں نے شبہ ظاہر کیا کہ ان کی بیٹی کو چکبالاپور ضلع سدلگٹہ تعلق کندل گورکی گرام کا ساکن سوریش اور پربھاکرنامی لوگوں نےاغواء کیا ہوگا۔ پولیس نے اس خصوص میں معاملہ درج کرتے ہوئے لڑکی کا پتہ لگانے ایک خصوصی ٹیم تشکیل دی جس کی نگرانی چکبالاپور ضلع سپرٹنڈنٹ آف پولیس چائترا ڈی وائی ایس پی نے کی ۔ 13دسمبر 2016کو پولیس اہلکاروں نے لڑکی کا پتہ لگایا اوراُسے پولیس تھانہ لے جا کر پوچھ تاچھ کی گئی تو طالبہ نے پولیس کو سارا واقعہ بتایا کہ وہ جب اسکول ختم کرکے اپنے گھر پیدل جا رہی تھی تو سریش اور پربھاکرنےاسے پکڑ کر کسی دیہات میں لے گئے تھے جہاں اُسے کمرے میں باندھ کررکھا گیا۔ اور رات بھرسریش اور پربھا کردونوں  نے اس کے ساتھ دست درازی کی۔

اس ضمن میں آج چنتامنی رورل پولیس اہلکاروں نے سریش اور پربھاکردونوں کو سدلگٹہ تعلقہ کندل گورکی گاؤں سے گرفتارکرلیا اوران کے خلاف رورل پولیس تھانہ میں دفعہ 363,366A,376D,343,506,سیکشن 4,8,12  پکسو ایکٹ ۔2012کے تحت معاملہ درج کرلیا۔

خیال رہے کہ دو روز قبل ہی چنتامنی کے کریپلی وینکٹشوا پرائیویٹ اسکول کی ایک چہارم جماعت کی معصوم بچی کے ساتھ بھی عصمت دری کا واقعہ پیش آیا تھا۔ اوراب نویں جماعت کی طالبہ کے ساتھ عصمت دری کا معاملہ سامنے آیا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

قمرالاسلام اور امیرشریعت کے انتقال پر غلام نبی آزاد کے تعزیتی کلمات

سینئر کانگریس رہنما اور راجیہ سبھا کے اپوزیشن لیڈر غلام نبی آزاد نے کرناٹک کی دو قد آور مسلم شخصیتوں امیر شریعت کرناٹک مفتی محمد اشرف علی صاحب اور سابق ریاستی وزیر و اے آئی سی سی سکریٹری ڈاکٹر قمر الاسلام کی رحلت پر اپنے گہرے صدمہ کا اظہار کیا ہے۔

سرکاری اعزازکے ساتھ قمرالاسلام سپردخاک، ہزاروں غمخواروں نے پرنم آنکھوں سے اپنے محبوب لیڈر کو وداع کیا

حیدرآباد کرناٹک علاقہ کے ممتاز قائد الحاج قمرالاسلام رکن اسمبلی وسابق ریاستی وزیر کے جسد خاکی کو آج بعدنماز عصر کلبرگی میں سرکاری اعزاز کے ساتھ سپرد خاک کردیا گیا۔

الحاج قمرالاسلام کی وفات پرمولانااسرارالحق قاسمی کااظہارتعزیت

عالم دین وممبرپالیمنٹ مولانااسرارالحق قاسمی نے کرناٹک کے معروف سیاسی رہنمااورگلبرگہ سے ممبراسمبلی الحاج قمرالاسلام کے انتقال پر اپنے دلی رنج وغم کا اظہار کرتے ہوئے اپنے تعزیتی بیان میں کہاکہ مرحوم ایک سرگرم سیاسی رہنماہونے کے ساتھ مسلمانوں کے ملی مسائل سے بھی دلچسپی رکھتے ...

بھٹکل میونسپالٹی عمارت پر پتھرائو کا معاملہ؛ بی جے پی لیڈرس گوند نائک اور کرشنا نائک سمیت چارگرفتار

 بھٹکل میونسپالٹی عمارت پر پتھرائو ، توڑپھوڑ اور پولس عملہ پر حملہ کے تعلق سے پولس نے ایک بڑی کاروائی کرتے ہوئے بی جے پی لیڈر گوند نائک کو آج  گرفتار کرلیا ہے۔ ذرائع سے ملی اطلاع کے مطابق پولس  ہبلی کے ایک مکان سے تین لوگوں کو گرفتار کرنے میں کامیاب ہوئی ہے، جبکہ ایک سنگھ کا ...

بھٹکل میونسپالٹی عمارت پر پتھرائو کا معاملہ؛ایم پی شوبھا کرندلاجے نے پولس سے کہا؛ بی جے پی کارکنان کی گرفتاری بند کی جائے؛ لیڈران کو گرفتار کرنے کی صورت میں دی دھمکی

بی جے پی لیڈر شوبھا کرندلاجے نے آج منگل کو بھٹکل ٹائون پولس تھانہ پہنچ کر بھٹکل ڈی وائی ایس پی سے نہایت ترش لہجہ میں کہا کہ وہ بی جے پی کارکنان کی گرفتاری کا سلسلہ فوری طور پر بند کرے۔ شوبھا نے کہا کہ پولس نے اب تک 9 لوگوں کو گرفتار کیا ہے، اگر پولس مزید لوگوں کو گرفتار کرتی ہے تو ...

بی جے پی لیڈر شوبھا کرندلاجے کا بھٹکل دورہ ؛ کانگریس پر بھٹکل سے ہندووں کو بھگانے کی کوشش کا الزام؛ مزید گرفتاریوں پربرے نتائج کی دھمکی

ریاست کی کانگریس حکومت کے وزیر اعلیٰ سدرامیا کی سرکار ہندؤوں کو بھٹکل سے بھگانے کی کوشش کئے جانے کا ریاستی بی جے پی کی جنرل سکریٹری اور اُڈپی چک مگلورو حلقہ کی رکن پارلیمان شوبھا کرندلاجے نے الزام لگایا۔

بھٹکل میونسپالٹی عمارت پر پتھراؤ اور توڑپھوڑ کے معاملے میں مزید 2گرفتار : گرفتاریوں کی تعداد بڑھ کر اب 9

بھٹکل میونسپالٹی عمارت پر ہوئے پتھراؤ اور توڑپھوڑ کے معاملے میں پولس نے مزید دو لوگوں کو گرفتارکرلیا ہے، جس کے ساتھ ہی اس معاملہ میں گرفتارشدگان کی تعداد اب 9ہوگئی ہے۔

بھٹکل میونسپالٹی عمارت پرپتھراؤ اور پولس عملے پر حملہ وغیرہ معاملات کو لے کر عوام کے درمیان چل رہی ہیں چہ میگوئیاں؛ کیا سوچتے ہیں عوام ؟

جمعرات کو بلدیہ دفتر پر ہوئے پتھراؤ،ملازمین پر حملہ ، پولس کی طرف سے دائر کردہ مقدمات، اس کے بعد ملزمان کی گرفتاری جیسے معاملات کو لے کر ایک نئی بحث کا آغاز ہوتا دکھائی دے رہاہے۔ اس سلسلے میں مخالف ،موافق سطح پر ثبوت ، دلائل وغیرہ باتوں کو راہ دے رہی ہے۔

عدم تحفظ کا شکار بھٹکل میونسپالٹی ملازمین کا اسسٹنٹ کمشنر سے حفاظتی اقدامات کا مطالبہ؛ چیف آفیسر ہنوز لاپتہ

جمعرات کو میونسپالٹی عمارت پر پتھراؤ کے 4دن مکمل ہوگئے ہیں مگر میونسپالٹی کے ملازمین اب  بھی کام کرنے میں خوف محسوس کررہے ہیں ۔ انہوں نے آج پیر کو بھٹکل اسسٹنٹ کمشنر ایم این منجوناتھ کو میمورنڈم پیش کرتے ہوئے مناسب حفاظتی اقدامات کا مطالبہ کیا ہے۔