دستور کو تبدیل کرنے والی بات کہنے والے آننت کمار ہیگڈے کے حلقہ میں ہی پہنچ کر گرجے فلم ایکٹر پرکاش رائے؛ کہا ہماری خاموشی ہمیں مار ڈالے گی

Source: S.O. News Service | Published on 14th January 2018, 3:16 PM | ساحلی خبریں | ریاستی خبریں |

سرسی 14/جنوری (ایس او نیوز) مرکزی وزیر آننت کمار ہیگڈے کے ہی حلقہ میں پہنچ کر اُن کے دستور کو تبدیل کرنے والے بیان کی سخت مذمت کرتے ہوئے فلم ایکٹر پرکاش رائے نے گرج کر کہا کہ دیش کو لگی ایک بڑی بیماری کا علاج کرنا ہے تو دستور کا احترام کرنے والے سبھی لوگوں کو متحد ہوکر اس بیماری کو دور کرنا ہوگا۔ ’بھائی چارگی کو فروغ دینے کے مقصد سے منعقدہ  ’ہمارا دستور ہمارا فخر ‘کے موضوع پر سرسی کے راگھویندرا مٹھ میں سنیچر صبح  کو منعقدہ ریاستی اجلاس کا افتتاح کرنے کے بعد معروف دانشور اور فلم اداکار پرکاش رائے خطاب کررہے تھے۔ 

انہوں نے کہا کہ اس وقت دیش کو ایک بہت بڑی بیماری لگ گئی ہے۔ اور جس کسی کو بھی اس ملک کے دستور پر فخر ہے ، اسے چاہیے کہ اس مرض کو ختم کرنے کی جدوجہد کرے۔انہوں نے کہا کہ ہمارے لئے تاریخ پر بات کرنے کے  لئے وقت نہیں ہے ،لیکن مستقبل کے بارے میں گفتگو کرنے اور سوچنے کے بھر پور مواقع موجود ہیں۔ اس لئے ہمیں مستقبل کے بارے میں جرأت مندی کے ساتھ بات کرنی چاہیے۔ورنہ ہماری خاموشی ہمیں مار ڈالے گی۔

پرکاش رائے کے مطابق’’ زعفرانی بریگیڈ کا رنگ اب پوری طرح کھل کر سامنے آگیا ہے۔ یہ لوگ جو لاشوں پر سیاست کررہے ہیں وہ میرے دیش کے اصلی ہندو نہیں ہیں۔ان کا رنگ بھی زعفرانی نہیں ، بلکہ وہ کوئی اور ہی رنگ ہے۔

آننت کمار ہیگڈے کے حالیہ بیانات کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے پرکاش رائے نے کہا کہ ضلع کے ایم پی اننت کمار ہیگڈے کرکٹ کھیلنے کے لئے میدان میں اُتر تے ہیں اور  فٹ بال کھیل کھیلتے ہیں، ایسا کرنے کی صورت  میں گیند اُن کے چہرے کو بگاڑنا طئے  ہے ۔ پرکاش رائے نے کہا کہ آننت کمار ہیگڈےجو  من میں آیا بول دیتے ہیں ۔ انہیں  ملک کے دستور کا کوئی علم نہیں ہے اور وہ اس طرح کی بیان بازی سے سیاسی فائدہ اٹھانے کی کوشش کررہے ہیں۔‘‘

انہوں نے کہا کہ عوام کی معصومیت اور خاموشی کا فائدہ اٹھا کرسیاسی پارٹیاں الیکشن ختم ہونے تک امن اور بھائی چارگی کے ماحول کو بگاڑنے کی کوشش میں لگ گئی ہیں۔عوام کو چاہیے کہ ایسی پارٹیوں کی کھل کر مخالفت کریں۔ہمیں یہ ثابت کرنا ہوگا کہ اس طرح کی سیاست سے صرف دکھ نہیں ہوتا بلکہ ہمیں غصہ بھی آتا ہے۔پرکاش نے پوچھا کہ اس سرزمین پر ایک طبقے کا جینا حرام کرنے والے کیا ہندو ہوسکتے ہیں؟احتجاجی مظاہرے کرکے ٹائروں کو آگ لگادینا کیا ہندو توا ہو سکتاہے؟

پرکاش رائے  کا کہنا تھا کہ زعفرانی رنگ دیکھ کر سوامی ویویکا نند کی یاد آتی ہے۔ لیکن آج کل کچھ بددماغ لوگ زعفرانی رنگ میں رنگے نظر آتے ہیں اور ایسے ہی لوگوں سے سیاست مذہبی منافرت میں بدل جاتی ہے۔جو اصلی ہندو ہیں وہ کبھی بھی فرقہ وارانہ بھائی چارگی کو برباد کرنے کی کوشش نہیں کریں گے۔

پرکاش رائے نے خطاب کے ا بتدا میں کہا کہ جیسے ہی وہ پروگرام میں شریک ہونے کے لئے  پہنچے، مقامی پولس نے  اُنہیں  مشورہ دیتے ہوئے کہا کہ میں یہاں اشتعال انگیز خطاب نہ کروں۔  پرکاش رائے نے کہا کہ میں اشتعال انگیز تقریر کرنے والوں میں سے نہیں ہوں، ایسی تقریر کرنے والے اسی مقام (سرسی) میں موجود ہیں۔

سیمینار سے قبل ایک ریلی نکالی گئی تھی۔گجرات سے تشریف فرما حقوق انسانی کے کارکن میک وان مارٹن نےسرسی اولڈ بس اسٹائنڈ کے بالمقابل بڈکی بیل میں مہاتما گاندھی کے مجسمے کو پھولوں کی مالا پہنانے کے بعد ریلی کو ہری جھنڈی دکھائی تھی، ریلی مختلف راستوں سے ہوکر سرسی کے  رگھویندرا مٹھ پہنچی تھی

پروگرام میں خطاب کرتے ہوئے میک وان مارٹن نے سپریم کورٹ کے چار ججوں کے میڈیا کے سامنے پہنچ کر دستور کو بچانے کی بات  پر سخت تشویش کا اظہار  کیا۔ انہوں نے کہا کہ  ملک کی آزادی کے 70 سال بعد اب ملک کی جمہوریت خطرہ میں ہے، ایسا پہلی بار ہوا ہے کہ ججوں کو میڈیا کے سامنے آکر عدلیہ میں ہورہی  من مانی کا انکشاف کرنا پڑا ہے،ا س سے ملک کے عدلیہ پر منڈلانے والے خطرات کو دیکھا جاسکتا ہے۔

اس موقع پرمفکر اور مصنف رحمت تریکیرے نے صدارتی خطاب کرتے ہوئے کہا کہ مختلف فرقوں کے درمیان آپسی تصادم بڑھتا جا رہا ہے اور انسانیت کا جذبہ گھٹتا جارہا ہے۔اقتدار پر آنے کے لئے انسانی رشتوں میں آگ لگانے کا کام ہورہا ہے۔عقل اور ہوش رکھنے والے ہر انسان کو اس پر توجہ دینا ضروری ہے۔ سپریم کورٹ کے جج صاحبان نے ہی بیان دیا ہے کہ جمہوریت خطرے میں ہے۔جب ایسے لوگ سامنے ہوں جن کا یہ نظریہ ہوکہ اگر ایک لاش گرتی ہے تو ہم جیت سکتے ہیں، تو ایسی صورت میں جمہوریت کے بارے میں بات کرنا ضروری ہوجاتا ہے۔

سمینار میں کئی دیگر دانشور حضرات، سماجی کارکن اور سنئیر صحافیوں نے بھی خطاب کرتے ہوئے ملک کے دستور کو بچانے  اور ملک میں بھائی چارگی کا عام کرنے کے تعلق سے اپنے اپنے خیالات کا اظہار کیا۔

پورا پروگرام ساحل آن لائن پر لائیو ٹیلی کاسٹ کیا گیا تھا، جس کی ریکارڈنگ ذیل میں دی جارہی ہے:

 

ایک نظر اس پر بھی

کل جمعرات کو مرڈیشور میں منایا جائے گا عالمی یوم یوگا

کل جمعرات 21 جون کو  تعلقہ کے مرڈیشور آر این شٹی  ریسڈینٹیل  میں عالمی یوم یوگا منایا جائے گا اس بات کی اطلاع مرڈیشور یوگا سمیتی کے صدر  منجپا نائک نے دی ہے۔ اخبار نویسوں سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے بتایا کہ  پروگرام صبح چھ بجے شروع ہوکر 7:30 تک جاری رہے گا۔

کمٹہ میں بس نے دی راہ گیر کو ٹکر؛ شدید طور پر زخمی راہ گیر منی پال لے جانے کے دوران ہلاک

سرکاری کے ایس آر ٹی سی بس نے ایک راہ گیر کو ٹکر ماردی جس کے نتیجے میں راہ گیر شدید زخمی ہوگیا، جسے مقامی اسپتال میں ابتدائی طبی امداد کے بعد منی پال روانہ کیا گیا ہے۔ حادثہ  تعلقہ کے بیٹکولی دیہات میں  بدھ کی صبح پیش آیا۔

کاروار چیک پوسٹ پر محکمہ محصول نے مارا ایک لاری پر چھاپہ؛ 1.19 لاکھ مالیت کی گوا کی شراب برآمد

یہاں جوئیڈا کے قریب  گوا۔ انموڈ  سرحد پر واقع پولس چیک پوسٹ پر آج بدھ صبح محکمہ  محصولات (ایکسائز)  کے آفسران نے ایک لاری پر چھاپہ مارا اور اُس میں سے ایک لاکھ سے زائد مالیت کی گوا کی شراب برآمد کی جسے دوسرے سامانوں کےدرمیان چھپا کر  غیرقانونی طور پر  حیدرآباد لے جانے کی ...

اُڈپی میں بائک کو ٹکر دے کر فرار ہونے والے ٹمپو ڈرائیور پرچار سال بعد عدالت نے عائد کیا 2500 روپیہ جرمانہ

اُڈپی چیفسیویل جج اینڈ چیف میجسٹریٹ  فرسٹ کلاس عدالت نے  ایک ٹمپو ڈرائیور پر بائک کو  ٹکر دے کر فرار ہونے کے جرم میں 2500 روپیہ جرمانہ عائد کیا ہے اور رقم نہ بھرنے کی صورت میں اُسے چھ ماہ کی جیل کی سزا سنائی ہے۔

اُڈپی میں مویشیوں کے بیوپاری حُسین ابّا کے قتل کے معاملے میں گرفتار تین ملزموں کو ملی ضمانت؛ آٹھ کی ضمانت نامنظور

مویشیوں کے بیوپاری حُسین ابا کے قتل کے معاملے میں گرفتار دو لوگوں  پولس ہیڈ کونسٹیبل  موہن کوتوال اور بجرنگ دل لیڈر پرساد کونڈاڈی کی ضمانت عرضی کو    اُڈپی سیشن کورٹ نے  منظور کرلیا ہے اسی طرح ایک اورفرار شدہ بجرنگ دل کارکن  توکارام  کی  پیشگی ضمانت بھی منطور کرلی ہے۔

گلبرگہ میں پچاس لاکھ روپئے لاگت کے شادی محل کی جگہ پرتعمیر ہوا صرف ایک ڈھانچہ ؛آر ٹی آئی کارکن نے اُٹھایا معاملہ

  کرناٹکا انفارمیشن کمیشن بنگلور کی ہدایت پر معروف آر ٹی آئی کارکن اور  اے پی سی آر کے ریاستی کوآرڈی نیٹر شیخ شفیع احمد نے تعلقہ آفسر اسماعیل صاب کے ساتھ  جب ایک شادی محل کا جائزہ لینے پہنچے تو اُنہیں حیرت کا ایک جھٹکا لگا کیونکہ وہاں کوئی محل موجود نہیں تھا بلکہ  ایک ...

بیلگام کے ایک اسکول میں مڈ ڈے میل کھانے سے 60 بچے بیمار؛ اسپتال میں والدین نے کیا ٹیچروں کا گھیرائو

ضلع بیلگام کے رام دُرگ تعلقہ کے  لکنائکن کوپّا کے ایک پرائمری اسکول میں دوپہر کا کھانا کھانے کے بعد اسکول کے 60 بچے بیمار پڑ گئے جنہیں فوری طور پر قریبی اسپتال لے جایا گیا ہے۔  واردات بدھ کی دوپہر کو پیش آئی ہے۔ 

اُڈپی میں مویشیوں کے بیوپاری حُسین ابّا کے قتل کے معاملے میں گرفتار تین ملزموں کو ملی ضمانت؛ آٹھ کی ضمانت نامنظور

مویشیوں کے بیوپاری حُسین ابا کے قتل کے معاملے میں گرفتار دو لوگوں  پولس ہیڈ کونسٹیبل  موہن کوتوال اور بجرنگ دل لیڈر پرساد کونڈاڈی کی ضمانت عرضی کو    اُڈپی سیشن کورٹ نے  منظور کرلیا ہے اسی طرح ایک اورفرار شدہ بجرنگ دل کارکن  توکارام  کی  پیشگی ضمانت بھی منطور کرلی ہے۔

گوری لنکیش کی طرح دیگر ادیبوں کے قتل کی سازش کا انکشاف 4روشن خیال مفکروں کو سکیورٹی فراہمی زیر غور

ریاستی حکومت روشن خیال مفکرین کو سیکورٹی فراہم کرنے پر سنجیدگی سے غور کر رہی ہے۔ ہندو مخالف نظریات کے حامل دانشوروں کی ہٹ لسٹ تیا ر کرتے ہوئے موت کی نیند سلائے جانے کی سازش کا انکشاف ہونے کے بعد روشن خیال مفکرین میں شامل گنان پیٹھ ایوارڈ یافتہ گریش کرناڈ، معروف قلمکاراور ...

پی یو سی سالِ دوم سائنس طلباء کے لیے مفت کوچنگ

ڈسٹرکٹ کوآرڈینیٹر اے سی سی پی ایل آرگنائزیشن بیدر کے پریس نوٹ کے بموجب بیدر ضلع کے مسلم طلباء جو پی یو سی سالِ دوم سائنس طلباء کو جولائی 2018ء تا جنوری2019تک اے سی سی پی ایل کی جانب سے مفت کوچنگ دی جائے گی۔