جلد ہوگااے آئی اے ڈی ایم کے دونوں طبقوں کا ملن، پنیرسیلوم بن سکتے ہیں نائب وزیراعلیٰ

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 11th August 2017, 1:19 AM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

چنئی:10/اگست(ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا)تمل ناڈو کی سیاست میں ایک بار پھر بڑی تبدیلی آ سکتی ہے۔ سابق وزیر اعلی جے للتا کے انتقال کے بعد دو حصوں میں بٹی انادرمک اب جلدہی ایک پارٹی بن سکتی ہے۔ ذرائع کی مانیں، تو دونوں دھڑے 15 اگست سے پہلے ہی ایک ہو سکتے ہیں، تاہم موجودہ سی ایم ای پلانیسوامی اپنے عہدے پر برقرار رہیں گے، وہیں سابق وزیر اعلی او پنیرسیلوم نائب وزیر اعلی بن سکتے ہیں۔انڈیا ٹوڈے سے بات کرتے ہوئے وزیر ڈی جیایمار نے کہا کہ یہ انضمام 15 اگست سے پہلے ہو سکتا ہے، اگرچہ انہوں نے اس پر زیادہ کچھ بولنے سے انکار کیا۔پلانیسوامی کے گروپ نے ایک تجویز پاس کی ہے جس میں کہا گیا ہے کہ دناکرن کی جو سکریٹری کے طور پر تقرری ہوئی تھی، وہ غیر قانونی ہے۔ انہوں نے الزام لگایا کہ اس دوران ششی کلا کے بارے میں ایک بھی لفظ نہیں کہا گیا تھا۔ پارٹی کارکنان ان کے فیصلے پر منحصر نہیں ہیں۔واضح رہے کہ گزشتہ کافی عرصے سے انادرمک کے این ڈی اے میں شامل ہونے کی قیاس آرائیاں چل رہی ہیں۔ اس سے پہلے خبر آئی تھی کہ وہیں مودی حکومت کے ایک کابینہ وزیر انادرمک کے دونوں گروہوں پلانیسوامی اور پننیرسیلوم کے درمیان ثالثی میں مصروف ہیں۔ ایسا مانا جا رہا ہے کہ اگر یہ بات چیت کامیاب رہتی ہے تو تمل ناڈو کی حکمراں پارٹی این ڈی اے حکومت میں شامل ہو جائے گی۔بتایا جا رہا ہے کہ مودی کابینہ کی توسیع بھی اسی لیے نہیں کی گئی ہے۔ ذرائع کے مطابق اگست میں مودی کابینہ میں توسیع ممکن ہے، جس انادرمک کو بھی کابینہ میں مقام دیا جا سکتا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

علی گڑھ مسلم یونیورسٹی ٹیچرس ایسوسی ایشن کی جانب سے سالانہ ڈنر کا اہتمام;وائس چانسلر پروفیسر طارق منصور سمیت دیگر معززین کی شرکت

علی گڑھ مسلم یونیورسٹی ٹیچرس ایسوسی ایشن کی جانب سے یہاں اے ایم یو اسٹاف کلب میں سالانہ ڈنر کا اہتمام کیا گیا، جس میں بطور مہمان خصوصی وائس چانسلر پروفیسر طارق منصور نے شرکت

سیلاب متاثرین کی راحت رسانی میں کوتاہی ناقابل برداشت،مقامی انتظامیہ کوسخت ہدایات;کشن گنج کے ایم پی مولانااسرارالحق قاسمی کی نگرانی میں سیلاب متاثرین کے درمیان اشیاء خوردنی کی تقسیم

سیلاب کی تباہی سے دوچارکشن گنج،پورنیہ اور سیمانچل کے دیگر اضلاع میں جاں بحق ہونے والے افراد کی تعداد اب تک ڈیڑھ سوسے متجاوزہوچکی ہے

بھٹکل میں نیشنل ہائی وے کی توسیع کو لے کر تنظیم اور دیگر اداروں کی مخالفت میں جئے کرناٹکا سنگھا کا میمورنڈم

بھٹکل شہر سے گزرنے والی قومی شاہراہ کی توسیع کا کام پہلے سے جس طرح طئے شدہ ہے اسی کے مطابق انجام دیاجائے ،رخ بدل کر بائی پاس کی تعمیر نہ کرنےکا مطالبہ لےکر بھٹکل جئے کرناٹکا سنگھ کے کارکنان نے منگل کی شام بھٹکل اسسٹنٹ کمشنر دفتر کے ذریعے اترکنڑا ضلع ڈی سی کو میمورنڈم سونپا۔ ...

گنگولی میں کچرا ٹھکانے لگانے کا مرکز قائم کرنے کے خلاف عوام کا احتجاج

کنداپور تعلقہ کے گنگولی کے قریب باوی کٹہ علاقہ کے پورٹ یارڈ میں پنچایت کی طرف سے کچروں کو ٹھکانے لگانے  کا مرکز قائم کئے جانے کی مخالفت میں مقامی عوام نے سخت احتجاج کیا اور پنچایت آفس کے سامنے ہی دھرنے پر بیٹھ گئے۔ احتجاجیوں کا مطالبہ تھا کہ وہ کسی بھی حال ہی میں متعلقہ جگہ پر ...

بھٹکل: مجلس ِ اصلاح وتنظیم کے زیر اہتمام طالبات کے لئے منعقدہ مضمون نویسی مقابلہ جات کے نتائج

مجلس اصلاح و تنظیم بھٹکل کے زیر اہتمام یوم ِ آزادی کی مناسبت سے ہائی اسکول ، کالج کی طالبات کے مابین اردو، کنڑا اور انگریزی زبانوں میں منعقد کئے گئے مضمون نویسی مقابلہ جات کےتنظیم کی تعلیمی و ثقافتی کمیٹی کی طر ف سے اعلان کیا گیا۔ جس کی تفصیل کچھ اس طرح ہے۔