سونو نگم نے بال منڈوا کر چیلنج کو کیا قبول،کہا،کسی مذہب کے خلاف نہیں ہوں

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 20th April 2017, 6:06 AM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

نئی دہلی19اپریل(ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا) مسجد کے باہر لاؤڈ اسپیکرزمعاملہ میں سنگر سونو نگم نے بدھ کو پریس کانفرنس سے خطاب کیا۔ اس کے بعد سونو نے سر بھی منڈوایا۔ بتا دیں کہ مغربی بنگال مائناریٹری یونائیٹڈ کونسل کے وائس پریسیڈنٹ سیدشاہ قادری نے سونو نگم کے خلاف چیلنج کیاتھااور کہا تھا کہ جو شخص سونو نگم کو گنجا کرے گا اور پرانے جوتے کی مالا پہنائے گا،اس کو 10 لاکھ روپے کا انعام دیا جائے گا۔یعنی خودسے ہی سونونگم نے ایک ہی چیلنج کوقبول کیا۔سیدشاہ قادری نے باقی مطالبے پوراکرنے کابھی مطالبہ کردیا۔پریس کانفرنس میں سونونے کہا کہ راستے میں جو جشن ہوتے ہیں، وہ لوگ داداگیری کرتے ہیں، ناچتے ہیں۔ ایسا کرنے سے پولیس کی تکلیف ہوجاتی ہے۔ سونو نگم بولے کہ لوگ مذہب کے نام پر شراب پیتے ہیں، فلمی گانے بجاتے ہیں۔سونو نے اپنے بیان پرکہاکہ آپ کو دانشور سمجھ کر میری بات کو اچھی طرح پیش کرنا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ اپنے بچوں کو اچھا ماحول دیجئے۔اگرمیں کہہ رہا ہوں آپ کو یہ اس طرح کیوں لے رہے ہیں۔ سونونے کہا کہ نہ میں سیکولر ہوں اور نہ ہی میں نے دایاں ونگ ہوں نہ لیفٹ ونگ۔سونو نے کہا کہ میں بغیر پلان کئے کہہ رہا ہوں، کوئی غلطی ہے تو معاف کیجئے گا۔ میں نے ایک سوشل ٹاپک پر بات کر رہا ہوں، اس سے مذہب کا کوئی لینا دینا نہیں ہے۔ سونو نے کہا کہ یہ وہی ہے جس کا ذکر میں کر رہا تھا۔ میں نے عالم کو بلایا ہے۔ یہ کوئی چیلنج نہیں ہے، انہوں نے کہا کہ یہ بال جو دیکھ رہے ہیں میں کاٹ دوں گا۔ انہوں نے کہا کہ نہ میں ہندو ہوں، نہ مسلم، میں سب میں یقین کرتا ہوں۔ وہ بولے کہ میں اجمیر میں بھی گیا تھا، پشکر مندر بھی گیا تھا۔ اگر کسی میں دم ہے تو ایسی باتوں پر بول کر دکھائیں۔انہوں نے کہا کہ کیا میرے مسئلہ اٹھانے میں کہیں غلطی ہو گئی، کیا میری ٹائمنگ غلط ہو گئی؟۔ انہوں نے کہاکہ کیا یہ صحیح وقت نہیں تھا، یوگی کی حکومت آنے سے اس کا کیا تعلق ہے؟ سونونے کہا کہ میں نے یہ مسئلہ پکڑا ہے، باقی مسائل کو تمہیں پکڑنا ہے۔آج تک کے سوال پر سونو بولے کہ مجھے نہیں پتہ کہ مسجد کہاں ہیں، اس میں کوئی بھی حقیقت نہیں ہے کہ میں کسی کو پریشان کر رہا تھا۔سونو نے کہا کہ میں ایک بات واضح کرنا چاہتا ہوں، کچھ لوگوں نے کہا کہ محمد کیوں لکھا، محمد صاحب کیوں نہیں کہا۔ یہ انگلش کامسئلہ ہے۔ شیو کو انگلش میں شیوا، رام کو راما کہا جاتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ جیسے کسی مسلمان کی زبان میں لارڈ یسوع نہیں آرہاہے۔ سونونے کہاکہ اگر یہ کسی نے مسئلہ بنایا ہے، یہ میرا مقصد نہیں تھا کہ نبی کی مذمت کروں۔ ٹوئٹر میں انسان سوچ سمجھ کرچھوٹاچھوٹا لکھتے ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

کاغذات نامزدگی بھرنے کے بعد رام ناتھ کووندنے کہا،جب سے گورنر بنایاتب سے میری کوئی پارٹی نہیں

صدارتی انتخابات کے لئے این ڈی اے کے امیدوار رام ناتھ کووند نے نامزدگی بھر دی ہے۔اس دوران ان کے ساتھ پی ایم مودی، سینئر لیڈر لال کرشن اڈوانی، مرلی منوہر جوشی اور بی جے پی صدر امت شاہ بھی موجود تھے۔

کرناٹک کا دیرینہ خواب شرمندۂ تعبیر بنگلور شہر اسمارٹ سٹی کی فہرست میں شامل

بشمول راجدھانی بنگلور ملک کے 30؍شہروں کو مرکزی حکومت نے اسمارٹ سٹی کے طورپر ترقی دینے کے لئے منتخب کرلیاہے۔ مرکزی وزیر برائے شہری ترقیات وینکیا نائیڈونے آج اس کا اعلان کرتے ہوئے کہاکہ مرکزی اسمارٹ سٹی اسکیم کے تحت ان 30؍شہروں کو ترقی دی جائے گی۔

سری نگر میں ڈی ایس پی محمد ایوب کا قتل، ہنس راج اہیر بولے قصورواروں کو چھوڑا نہیں جائے گا

 سری نگر میں بھیڑ کی طرف سے ڈی ایس پی کو پیٹ پیٹ کر بغیر وجہ قتل کئے جانے پر سرینگر سے دہلی تک غصہ ہے۔وزیر داخلہ ہنس راج اہیر نے بھی اس واقعہ کی مذمت کرتے ہوئے مجرم لوگوں کے خلاف سخت کارروائی کی بات کی ہے۔ہنس راج اہیر کا کہنا ہے کہ جمعرات کاواقعہ بہت افسوسناک ہے

میراکی امیدواری پربوکھلایابی جے پی خیمہ ! یوگی نے کہا، لوگوں کو لڑوانے کے لئے بنایا میرا کمار کو امیدوار؛ کانگریس کاجوابی حملہ،دلت کوامیدواربنانے سے بی جے پی کے گناہ نہیں دھلیں گے

این ڈی اے کے صدارتی امیدوار رام ناتھ کووند نے اپنا نامزدگی بھر دیا ہے۔نامزدگی کے دوران این ڈی اے نے اپنی پوری طاقت دکھائی۔اس دوران کووند کے ساتھ وزیر اعظم نریندر مودی، بی جے پی صدر امت شاہ، بی جے پی کے قدآور لیڈر لال کرشن اڈوانی، مرلی منوہر جوشی بھی موجود رہے،

نئی دہلی قادری مسجدمیں ہزاروں لوگوں نے لگائے بھارت۔فلسطین زندہ باد کے نعرے

شاستری پارک کی سب سے بڑی قادری مسجد میں یوں تو جمعہ کی نماز کے لئے عام طور پر ہزاروں نمازی آتے ہیں لیکن رمضان کے آخری جمعہ کی نماز میں یہ تعداد چار گنا ہو جاتی ہے. نماز کے بعد فلسطین کے حق میں ہوئے احتجاج میں تقریبا دس ہزار لوگ جمع ہو گئے اور بھارت اور فلسطین زندہ باد کے نعرے لگانے ...

مسقط عمان میں پیر کو منائی جائے گی عیدالفطر؛ اسی رات ہوگی بھٹکل مسلم جماعت مسقط کی عید ملن پارٹی

 مسقط کی وزارت مذہبی اُمور کی طرف سے خبر دی گئی ہے کہ عمان میں چاند کہیں پر بھی نظر نہیں آیا ہے، اس لئے اس بار پورے 30 روزے رکھے جائیں گے، میڈیا رپورٹس کے مطابق  عمان میں پیر کو عیدالفطر منائی جائے گی۔

عیدالفطر کی رات کو ہوگی مسقط میں بھٹکل مسلم جماعت کی عید ملن تقریب؛ بچوں کےہوں گے رنگا رنگ اور دلچسپ پروگرام

بھٹکل مسلم جماعت مسقط کی جانب سے گذشتہ سالوں کی طرح امسال بھی شاندار عید ملن تقریب کا انعقاد کیا گیا ہے جس میں بچوں کے رنگا پروگرام ہوں گے۔ عیدملن کی یہ خوبصورت تقریب عیدالفطر کی رات یعنی یکم شوال کو بعد نماز عشاء رامی  ڈریم ریسارٹ، سیب میں رکھی گئی ہے۔

سی بی ایس ای میں بھٹکل کی عائشہ ربیحہ اور ریحانہ مریم کی شاندار کامیابی؛ قطر اور مینگلور میں بھی بھٹکلی طلبہ کا شاندار پرفارمینس

ہر سال کی طرح امسال بھی میٹرک کے  CBSE میں بھٹکل اور اطراف کے طلبہ کے نتائج نہایت اطمینان بخش رہے ہیں اور بالخصوص گلف میں بھٹکلی طلبہ نے بہترین پرفارمینس کا اپنا ریکارڈ بحال رکھا ہے۔

نئی دہلی قادری مسجدمیں ہزاروں لوگوں نے لگائے بھارت۔فلسطین زندہ باد کے نعرے

شاستری پارک کی سب سے بڑی قادری مسجد میں یوں تو جمعہ کی نماز کے لئے عام طور پر ہزاروں نمازی آتے ہیں لیکن رمضان کے آخری جمعہ کی نماز میں یہ تعداد چار گنا ہو جاتی ہے. نماز کے بعد فلسطین کے حق میں ہوئے احتجاج میں تقریبا دس ہزار لوگ جمع ہو گئے اور بھارت اور فلسطین زندہ باد کے نعرے لگانے ...

وینکیا نائیڈو نے کہا، قرض معافی کا مطالبہ کرنا بن گیا ہے فیشن، تنقید کے بعد دی صفائی

مرکزی وزیر شہری ترقیات وینکیا نائیڈو نے کہا کہ قرض معافی کا مطالبہ کرنا اب فیشن بن گیا ہے لیکن یہ حتمی حل نہیں ہے اور مشکل حالات میں اس پر غور ہونا چاہئے۔ان کا یہ بیان ایسے وقت میں آیا ہے جب مہاراشٹر، مدھیہ پردیش، ہریانہ، راجستھان، پنجاب، اتر پردیش اور اڑیسہ میں کسانوں نے اپنے ...

یوپی کے لال ہیں کووند، دلت مخالف ہیں مایاوتی، اُترپردیش کے نائب وزیراعلیٰ کیشو موریا کا نشانہ

اتر پردیش کے نائب وزیراعلیٰ کیشو پرساد موریا نے صدارتی انتخابات کے بہانے بی ایس پی سربراہ مایاوتی پر نشانہ لگایا ہے۔موریا نے کہا کہ مایاوتی دلت مخالف ہیں اور اسی لیے عوام نے ان کی یہ درگت کر دی ہے۔