اسمرتی ایرانی نے راہل۔سونیا گاندھی کونشانہ بنایا، کہا۔ کانگریس میں بدعنوانی کی جڑیں گہری ہیں

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 12th September 2018, 11:24 AM | ملکی خبریں |

نئی دہلی12ستمبر (ایس او نیوز؍ آئی این ایس انڈیا ) بی جے پی نے منگل کو کہا کہ کانگریس صدر راہل گاندھی اور ان کی ماں سونیا گاندھی کے سال 2011۔2012 کے ٹیکس کیس کودوبارہ کھولے جانے کے انکم ٹیکس (IT) محکمہ کے فیصلے کے خلاف ان کی درخواستوں سے پتہ چلتا ہے کہ کانگریس میں گہرائی تک بدعنوانی جڑ جمائے ہوئی ہے۔

مرکزی وزیراسمرتی ایرانی نے کہا کہ راہل گاندھی کو بہت سے سوالات کے جواب دینے کی ضرورت ہے۔ ایک دن پہلے ہی دہلی ہائی کورٹ نے ’’نیشنل ہیرالڈ‘‘ اخبار سے متعلق ایک معاملے میں راہل۔سونیا کے ٹیکس کیس کودوبارہ کھولے جانے کوچیلنج کرنے والی ان کی درخواستوں کو مسترد کر دیا تھا۔

ایرانی نے یہاں نامہ نگاروں سے کہاہے کہ راہل گاندھی اور سونیا گاندھی کی اپیل پر کل کے عدالت کے فیصلے سے یہ پتہ چلتا ہے کہ کانگریس پارٹی کے اندر کافی گہرے تک بدعنوانی جڑ جمائے ہوئی ہے۔

آسکرفرنانڈیز سمیت کانگریس کے سب سے سنیئر رہنماؤں کی درخواستوں کے مسترد ہونے سے اب سال 2011۔12ٹیکس ادائیگی کے لیے ان کے ریکارڈ کی دوبارہ تحقیقات کے تناظر میں محکمہ انکم ٹیکس کے لیے راستہ تیارہواہے۔

ایک نظر اس پر بھی

 گجرات:  ٹھاکر کمیونٹی کادقیانوسی قانون،لڑکیوں کے موبائل کے استعما ل پر مکمل پابندی، بھاگ کر شادی کرنے پر اہل خانہ کو بھرنا ہوگا جرمانہ 

گجرات کے بناس کا ٹھا میں ٹھا کر کمیونٹی کی طرف سے 12 دیہات میں عجیب و غریب اور دقیانوسی قوانین بنائے گئے ہیں۔ اس میں ایک اصول ایسا ہے کہ لڑکیاں اپنے پاس موبائل نہیں رکھ پائیں گی۔

 اب تمام علاقائی زبانوں میں ہون گے ڈاک محکمہ کے امتحانات، راجیہ سبھا میں ہنگامہ کے بعد حکومت نے منسوخ کیا پیپر 

ڈاک محکمہ کی گزشتہ ہفتے ہوئے ایک امتحان کا ذریعہ صرف ہندی اور انگریزی رکھنے کی مخالفت میں منگل کو راجیہ سبھا میں کئی جماعتوں کے ارکان کے ہنگامے کی وجہ سے کاروائی کئی بار روکنا پڑی۔

پاکستانی جیل میں قید سابق ہندوستانی افسر کلبھوشن پر بین الاقوامی عدالت کا فیصلہ آج

پاکستان کی جیل میں بند ہندوستانی بحریہ کے سابق فوجی افسر کلبھوشن جادھو کے معاملے میں بدھ کو ہیگ واقع بین الاقوامی عدالت (آئی سی جے) اپنا فیصلہ سنائے گی۔ ’دی ہیگ‘ کے پیس پیلس میں 17 جولائی کو ہندوستانی وقت کے مطابق شام ساڑھے چھ بجے کھلی سماعت ہوگی جس کے بعد چیف جسٹس عبدالقوی ...