رافیل معاملہ: وزیر دفاع پر پھر راہل گاندھی کا جوابی حملہ، ایچ اے ایل کو دئیے آرڈر ثابت کریں یا پھر استعفٰٰی دیں

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 6th January 2019, 9:37 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،6؍ جنوری (ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا) رافیل سودے کو لے کرکانگریس کے تیور اور سخت ہوتے جا رہے ہیں۔اتوار کو ایک بار پھر سے کانگریس صدر راہل گاندھی نے رافیل سودے کو لے کر وزیر دفاع نرملا سیتا رمن پر جوابی حملہ کیا اور ہندوستان ایئروناٹکس لمیٹڈ (ایل اے ایل) کو ایک لاکھ کروڑ روپے کی خریداری کا حکم دینے کو لے کر جھوٹ بولنے کا الزام لگایا۔

کانگریس نے اتوار کو وزیر دفاع نرملا سیتا رمن پر ہندوستان ایئروناٹکس لمیٹڈ کو ایک لاکھ کروڑ روپے کی خریداری کا حکم دینے کا جھوٹ بولنے کا الزام لگاتے ہوئے کہا کہ ایچ اے ایل کا کہنا ہے کہ اسے ایک پیسہ بھی نہیں ملا۔کانگریس صدر راہل گاندھی نے اتوار کو ٹویٹ کرتے ہوئے پی ایم نریندر مودی حکومت پر ایک اور حملہ کیا ہے۔انہوں نے ٹویٹ کیا ہے۔جب آپ ایک جھوٹ بولتے ہیں تو اسے چھپانے کے لئے بہت جھوٹ بولنے پڑتے ہیں۔رافیل ڈیل کو لے کر پی ایم مودی کی جھوٹ کو بچانے کے چکر میں وزیر دفاع کو پارلیمنٹ میں جھوٹ بولنا پڑا۔پیر کو وزیر دفاع کو پارلیمنٹ کے سامنے وہ کاغذات پیش کرنے چاہئے، جس میں یہ ذکر ہو کہ حکومت نے ایچ اے ایل کو ایک لاکھ کروڑ روپے کے آرڈر دیئے ہیں یا پھر استعفی دیں۔

وہیں کانگریس صدر راہل گاندھی نے سنیچر کو ہی وزیر اعظم نریندر مودی پر الزام لگایا تھا کہ انہوں نے اپنے سوٹ بوٹ والے دوستوں کی مدد کرنے کے لئے ایچ اے ایل کو کمزور کیا ہے۔اس کے ایک دن بعد پارٹی نے یہ الزام عائد کیا۔اپوزیشن پارٹی نے حکومت پر الزام لگایا ہے کہ اس نے فرانس کے ساتھ رافیل لڑاکا طیارے سودے کے تحت ایچ اے ایل کو ایک آفسیٹ معاہدہ سے محروم کر دیا۔حکومت ان الزامات کو مسترد کر چکی ہے۔ادھر بی جے پی قیادت این ڈی اے حکومت نے کانگریس پر الزام لگایا ہے کہ اس نے اپنے دور حکومت میں ایچ اے ایل کی حمایت نہیں کی اور حکومت اب حفاظت پبلک سیکٹر انٹرپرائز کو مضبوط کر رہی ہے۔

میڈیا کی ایک رپورٹ میں دعوی کیا گیا ہے کہ دفاع کے علاقے سرکاری کمپنی ایچ اے ایل مالیاتی بحران سے دوچار ہے اور اپنے اہلکاروں کو تنخواہ دینے کے لئے فنڈز قرضے لینے پر مجبور ہے۔اس کے بعد گاندھی نے ہفتہ کو حکومت پر نشانہ لگایا تھا۔کانگریس کے اہم ترجمان رندیپ سرجیوالا نے اتوار کو ٹویٹ کیاکہ جھوٹ بولنے والی وزیر دفاع کا جھوٹ بے نقاب ہو گیا۔وزیر دفاع نے دعوی کیا تھا کہ ایچ اے ایل کو ایک لاکھ کروڑ روپے کی خریداری کے آرڈر دیئے گئے ہیں۔ایچ اے ایل کا کہنا ہے کہ اسے ایک پیسہ تک نہیں ملا کیونکہ ایک بھی آرڈر پر دستخط نہیں کئے گئے۔پہلی بار، HAL تنخواہ دینے کے لئے 1000 کروڑ روپے کا قرض لینے پر مجبور ہے۔

سرجیوالا نے اس میڈیا رپورٹ کے حوالے سے یہ بات کہی جس میں کہا گیا تھاکہ ایک لاکھ کروڑ روپے میں سے ایچ اے ایل کو ایک پیسہ بھی نہیں ملا کیونکہ کسی حکم پر دستخط ہی نہیں کیے گئے۔ ایچ اے ایل کے سینئر مینیجر کے حوالے سے میڈیا رپورٹ میں یہ بات کہی گئی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

چوکیدارکا ٹھپہ نہیں چاہتی پرائیویٹ سیکورٹی انڈسٹریز

قریب 80 لاکھ پرائیویٹ سیکورٹی گارڈز والی انڈسٹری وزیر اعظم نریندر مودی کے ’چوکیدار‘ مہم سے بہت حوصلہ افزاء نہیں ہے، البتہ وہ اپنی بہت مشکلات کو لے کر خود مرکزی حکومت سے لڑ رہی ہے۔سیکورٹی سروسز پر 18فیصد جی ایس ٹی کے خلاف برسرپیکار رہی کمپنیاں اب حکومت پر وعدہ خلافی کا الزام لگا ...

بورڈنگ پاس پر مودی کی تصویر پر تنقید کے بعد ایئر انڈیا نے انہیں واپس لیا

ایئر انڈیا نے تنقید کے بعد وزیر اعظم نریندر مودی اور گجرات کے وزیر اعلی وجے روپانی کی تصاویر والے بورڈنگ پاس واپس لینے کا فیصلہ کیا ہے۔ایئر لائنز نے پہلے کہا تھا کہ تصاویر والے بورڈنگ پاس تیسری پارٹی کے اشتہارات کے طور پر جاری کئے گئے اور اگر یہ مثالی ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی ...

دہلی میں خدمات پر کنٹرول کے معاملے پر فیصلے کیلئے وسیع بنچ بنائے عدالت عظمی: آپ حکومت

قومی راجدھانی دہلی میں انتظامی خدمات پر کنٹرول کے معاملے پر جلد فیصلہ لینے کے لیے آپ حکومت نے پیر کو سپریم کورٹ سے ایک وسیع بنچ قائم کرنے کی درخواست کی۔چیف جسٹس رنجن گوگوئی اور جسٹس دیپک گپتا کی بنچ کے سامنے اس معاملے کا ذکر کیا گیا تو بنچ نے آپ حکومت کے وکیل سے کہا کہ اس پر غور ...

عدالت نے منی لانڈرنگ کیس میں گوتم کھیتان اور تین دیگر کو طلب کیا

دہلی کی ایک عدالت نے منی لانڈرنگ کے ایک معاملے میں ای ڈی کی طرف سے چارج شیٹ داخل کئے جانے کے بعد پیر کو وکیل گوتم کھیتان، ان کی بیوی ریتو اور دو کمپنیوں اسمیکس اور ونڈفور کو طلب کیا۔خصوصی جج اروند کمار نے چاروں ملزمان کو چار مئی کو پیش ہونے کے لئے کہا ہے

سبرامنیم سوامی بولے: میں برہمن ہوں، چوکیدار نہیں ہو سکتا

کانگریس کی جانب سے 'چوکیدار چور ہے" کا نعرہ اچھالے جانے کے جواب میں بھارتیہ جنتا پارٹی نے " میں بھی چوکیدار ہوں' کیمپین شروع کیا۔ اس کے بعد وزیر اعظم نریندر مودی سمیت بی جے پی کے تقریبا سبھی لیڈران نے مائیکرو بلاگنگ سائٹ ٹویٹر پر اپنے نام کے آگے 'چوکیدار' لفظ لگایا لیا۔