سدارامیا ہی دوبارہ وزیر اعلیٰ ہوں گے، کانگریس لیجسلیٹرس کا دعویٰ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 8th February 2018, 12:10 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،7؍فروری(ایس او نیوز) بھارتیہ جنتا پارٹی نے اب ایک نیا معاملہ اٹھایا ہے کہ کرناٹک میں اسمبلی انتخابات قریب ہیں اس کے باوجود کانگریس نے ابھی تک وزیر اعلیٰ کے امیدواروں کا اعلان نہیں کیا ہے ۔ اس کا دو ٹوک جواب دیتے ہوئے ریاستی اسمبلی میں حکمران کانگریس کے چندارکین اسمبلی نے کہا کہ اگلے انتخابات میں پارٹی اقتدار پر لوٹ آئے گی اور وزیر اعلیٰ سدارامیا اس کرسی پر بحال رہیں گے۔ایوان میںیہ معاملہ اس وقت پیش آیا جب کانگریس رکن کے این راجنا نے اپنی تقریر کے دوران یہ دعویٰ کیا کہ بی جے پی کی ریاستی یونٹ کے صدر بی ایس ایڈی یورپا کو اسمبلی انتخابات کے بعد نظر انداز کردیاجائے گا۔راجنا نے کہا کہ ریاست کے تین لیڈروں کے درمیان ایڈی یورپا بھی ایک ہیں جو ووٹوں کو منتقل کرنے کی طاقت رکھتے ہیں دیگر دو سدارامیا اور سابق وزیر اعظم ایچ ڈی دیوے گوڈا ،لیکن ایڈی یورپا کوایل کے اڈوانی کی طرح نظر انداز کردیا جائے گا۔اس پر رد عمل ظاہر کرتے ہوئے اپوزیشن لیڈر جگدیش شٹر نے کہاکہ ایڈی یورپا بی جے پی سے وزیر اعلیٰ کے امیدوار ہیں لیکن سوال یہ ہے کہ کانگریس نے ابھی تک اپنے امیدوار کے نام کا اعلان ہی نہیں کیا۔انہوں نے کہا کہ یہ قبول کرلیا گیا ہیکہ ایڈی یو رپا ہی ہمارے لیڈر ہیں ۔ ہم نے یہ بھی اعلان کردیا ہے کہ وہی ہمارے وزیر اعلیٰ کے امیدوار ہیں ۔ لیکن آپ کا امیدوار کون ہے؟ انہوں نے سوال کیا۔ شٹر نے دعویٰ کیا کہ کانگریس نے ابھی تک اپنے وزیر اعلیٰ کے امیدوار وں کااعلان اس لئے نہیں کیا کہ ڈر ہے کہ پارٹی میں مخالفت شروع نہ ہوجائے ۔ اگر کانگریس نے سدارامیا کے نام کااعلان کیا ،پارٹی پھوٹ کاشکار ہوجائے گی۔انہوں نے مزید کہا کہ کانگریس کے ریاستی صدر ڈاکٹر جی پرمیشور نے حال ہی میں کہا تھا کہ کوئی بھی ایک وزیر اعلیٰ بن سکتا ہے۔ اس پر جواب دیتے ہوئے راجنا نے کہا کہ میں یہ کہتا ہوں کہ سدارامیا ہی اگلے وزیراعلیٰ ہوں گے۔ راجنا کے اس بیان کی کانگریس کے ایک دیگر ایم ایل اے نریندر ا سوامی نے بھی تائید کی اور چند دیگر اراکین اسمبلی نے بھی اپنے ڈیسک تھپ تھپاتے ہوئے حمایت کی۔ اس کے بعد شٹر نے دوبارہ کہا کہ کانگریس کویہ خوف ہے کہ سدارامیا کے نام کااعلان کیا گیاتو پارٹی پھوٹ کاشکار ہوجائے گی اور دعویٰ کیا کہ مجوزہ انتخابات میں بی جے پی ہی اقتدار پر آئے گی۔راجنا نے دوبارہ شدت سے کہا کہ کانگریس ہی اقتدار پر لوٹ آئے گی اور سدارامیا ہی اگلے وزیراعلیٰ ہوں گے۔حالانکہ گجرات انتخابات کے دوران بی جے پی نے بھی وزیر اعلیٰ کے امیدوار کااعلان نہیں کیا تھا۔

ایک نظر اس پر بھی

کرناٹک کی کانگریس حکومت پر نشانہ لگانے پر سدرامیا نے کیا پلٹ وار؛ کہا مودی میں وزیراعظم بننے کی صلاحیت ہی نہیں

کرناٹک کی کانگریس حکومت پر نشانہ سادھنے پر پلٹ وار کرتے ہوئے ریاست کے وزیر اعلیٰ سدرامیا نے وزیراعظم نریندر مودی کو جھوٹ کا پلندہ   قرار دیتے ہوئے    کہا  کہ نریندر مودی   میں وزیراعظم بننے کی صلاحیت ہی نہیں ہے

کانگریس لیڈر کی بی بی ایم پی دفتر کو آگ لگادینے کی دھمکی؛سی سی ٹی وی میں قیدہوا پورا منظر؛ سدارامیا نے دکھایا پارٹی سے باہر کا راستہ

کانگریس لیڈر نارائن سوامی کے  بی بی ایم پی دفتر میں گھس کر پٹرول چھڑکنے اوردفتر کو آگ لگادینے کی دھمکی کی وڈیو نیوز چینلوں میں نشر ہونے کے بعد فوری حرکت کرتے ہوئے سدرامیا نے نارائن سوامی کو   کانگریس پارٹی سے باہر کا راستہ دکھادیا ہے۔

این اے حارث نے فرزند کی حرکت پر اسمبلی میں کی معذرت خواہی

رکن اسمبلی این اے حارث کے فرزند نلپاڈ محمد کی طرف سے کل پیر کو ایک طالب العلم کو زودوکوب کرنے کا معاملہ سامنے آنے کے بعد آج این اے حارث نے ریاستی اسمبلی میں معذرت طلب کی اور کہا کہ ان کے بیٹے کی حرکت کی وجہ سے  اُنہیں جس طرح ندامت اُٹھانی پڑی، وہ وقت کسی باپ پر نہ آئے۔

بی جے پی صدر امت شاہ کا کرناٹک دورہ؛ کرناٹک سے کانگریس کو اُکھاڑ پھینکنے کا کیا دعویٰ

کرناٹک کے دورہ پر آئے  بی جے پی کے قومی صدر امت شاہ نے کانگریس پر حملہ بولتے ہوئے کہا کہ کرناٹک حکومت لوگوں کی اُمیدوں پر پورا اُترنے میں بری طرح ناکام ہوگئی ہے۔جس کی بنا پر  آئندہ انتخابات میں یہاں بی جے پی کو شاندار جیت حاصل ہوگی۔ وہ یہاں مینگلور کے قریب سولیا میں منگل ...