سدارامیا ہی دوبارہ وزیر اعلیٰ ہوں گے، کانگریس لیجسلیٹرس کا دعویٰ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 8th February 2018, 12:10 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،7؍فروری(ایس او نیوز) بھارتیہ جنتا پارٹی نے اب ایک نیا معاملہ اٹھایا ہے کہ کرناٹک میں اسمبلی انتخابات قریب ہیں اس کے باوجود کانگریس نے ابھی تک وزیر اعلیٰ کے امیدواروں کا اعلان نہیں کیا ہے ۔ اس کا دو ٹوک جواب دیتے ہوئے ریاستی اسمبلی میں حکمران کانگریس کے چندارکین اسمبلی نے کہا کہ اگلے انتخابات میں پارٹی اقتدار پر لوٹ آئے گی اور وزیر اعلیٰ سدارامیا اس کرسی پر بحال رہیں گے۔ایوان میںیہ معاملہ اس وقت پیش آیا جب کانگریس رکن کے این راجنا نے اپنی تقریر کے دوران یہ دعویٰ کیا کہ بی جے پی کی ریاستی یونٹ کے صدر بی ایس ایڈی یورپا کو اسمبلی انتخابات کے بعد نظر انداز کردیاجائے گا۔راجنا نے کہا کہ ریاست کے تین لیڈروں کے درمیان ایڈی یورپا بھی ایک ہیں جو ووٹوں کو منتقل کرنے کی طاقت رکھتے ہیں دیگر دو سدارامیا اور سابق وزیر اعظم ایچ ڈی دیوے گوڈا ،لیکن ایڈی یورپا کوایل کے اڈوانی کی طرح نظر انداز کردیا جائے گا۔اس پر رد عمل ظاہر کرتے ہوئے اپوزیشن لیڈر جگدیش شٹر نے کہاکہ ایڈی یورپا بی جے پی سے وزیر اعلیٰ کے امیدوار ہیں لیکن سوال یہ ہے کہ کانگریس نے ابھی تک اپنے امیدوار کے نام کا اعلان ہی نہیں کیا۔انہوں نے کہا کہ یہ قبول کرلیا گیا ہیکہ ایڈی یو رپا ہی ہمارے لیڈر ہیں ۔ ہم نے یہ بھی اعلان کردیا ہے کہ وہی ہمارے وزیر اعلیٰ کے امیدوار ہیں ۔ لیکن آپ کا امیدوار کون ہے؟ انہوں نے سوال کیا۔ شٹر نے دعویٰ کیا کہ کانگریس نے ابھی تک اپنے وزیر اعلیٰ کے امیدوار وں کااعلان اس لئے نہیں کیا کہ ڈر ہے کہ پارٹی میں مخالفت شروع نہ ہوجائے ۔ اگر کانگریس نے سدارامیا کے نام کااعلان کیا ،پارٹی پھوٹ کاشکار ہوجائے گی۔انہوں نے مزید کہا کہ کانگریس کے ریاستی صدر ڈاکٹر جی پرمیشور نے حال ہی میں کہا تھا کہ کوئی بھی ایک وزیر اعلیٰ بن سکتا ہے۔ اس پر جواب دیتے ہوئے راجنا نے کہا کہ میں یہ کہتا ہوں کہ سدارامیا ہی اگلے وزیراعلیٰ ہوں گے۔ راجنا کے اس بیان کی کانگریس کے ایک دیگر ایم ایل اے نریندر ا سوامی نے بھی تائید کی اور چند دیگر اراکین اسمبلی نے بھی اپنے ڈیسک تھپ تھپاتے ہوئے حمایت کی۔ اس کے بعد شٹر نے دوبارہ کہا کہ کانگریس کویہ خوف ہے کہ سدارامیا کے نام کااعلان کیا گیاتو پارٹی پھوٹ کاشکار ہوجائے گی اور دعویٰ کیا کہ مجوزہ انتخابات میں بی جے پی ہی اقتدار پر آئے گی۔راجنا نے دوبارہ شدت سے کہا کہ کانگریس ہی اقتدار پر لوٹ آئے گی اور سدارامیا ہی اگلے وزیراعلیٰ ہوں گے۔حالانکہ گجرات انتخابات کے دوران بی جے پی نے بھی وزیر اعلیٰ کے امیدوار کااعلان نہیں کیا تھا۔

ایک نظر اس پر بھی

مڈکیری میں سیلاب سے متاثرہ علاقہ کے دورہ کے وقت ہی زمین کھسک گئی؛ ایم پی اور ایس پی بال بال بچ گئے

ضلع کورگ کے مڈکیری عرف مرکیرہ کے رکن اسمبلی اپاجو رنجن کے  بارش سے متاثرہ علاقوں کا  دورہ کرنے کے موقع پر اچانک زمین کھسکنے کی واردات پیش آئی ہے، بتایا گیاہے کہ ان کے ہمراہ ضلع کورگ کی ایس پی ڈاکٹڑ سومنا پنّیکر بھی موجود تھی۔

ریاست کرناٹک میں جاری موسلادھار بارش کی وجہ سے کئی اضلاع متاثر؛ مڈکیری میں قیامت صغریٰ کا منظر

بادل کے پھٹ پڑنے اور جگہ جگہ پہاڑاور زمینات کے کھسکنے سے کورگ ضلع کی حالت بہت ہی سنگین ہوگئی ہے۔ندیوں میں طغیانی ، تیز رفتار سے بہتا پانی ، کھسکتے پہاڑ و زمین کی وجہ سے کورگ ضلع  میں قیامت صغریٰ کا منظر ہے۔ جان ومال کے بھاری نقصان کو دیکھتے ہوئے راحت کاری کے لئے آرمی اور نیوی کے ...

بارش کے متاثرین کی بھرپور مدد کرنے شیوکمار کا مطالبہ

ریاستی وزیر برائے آبی وسائل ومیڈیکل ایجوکیشن ڈی کے شیوکمار نے کہا ہے کہ ریاست کے کورگ ، ملناڈ اور پڑوسی ریاست کیرلا میں مسلسل بارش کے سبب سیلاب کی جو صورتحال پیدا ہوئی ہے اس سے متاثرہ خاندانوں کی مدد کے لئے ریاستی عوام کو فراخدلی سے قدم بڑھانا چاہئے۔