حکومت بھووی طبقات کی ترقی کیلئے ہرممکن تعاون کرے گی:وزیر اعلیٰ سدارامیا

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 9th October 2017, 10:35 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،8/اکتوبر(ایس او نیوز)ریاستی وزیر اعلیٰ سدارامیا نے کہاکہ حکومت بھووی طبقات کی ہمہ جہت ترقی کے لئے ہرممکن سہولت وتعاون کرے گی اور سیاسی نمائندگی کے لئے کرناٹک پبلک سرویس کمیشن (کے پی ایس سی) میں نامزدگی سمیت مختلف مطالبات پورا کرنے کی ایماندارانہ کوشش کی جائے گی۔ یہاں بھووی ترقیاتی کارپوریشن کا افتتاح کرتے ہوئے وزیراعلیٰ سدارامیا نے اس خیال کا اظہار کیا اور بتایاکہ گزشتہ مرتبہ کئے گئے وعدے کے مطابق بھووی ترقیاتی کارپوریشن قائم کیاگیاہے اور اس طبقہ کے تمام مطالبات پر سنجیدگی سے غور کرتے ہوئے انہیں مرحلہ وار حل کرنے کی ہرممکنہ کوشش کریں گے۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے ریاستی وزیر برائے سماجی بہبود ایچ آنجنیا نے کہاکہ کچلے ہوئے بھووی طبقہ کو سماج کے اہم دھارے میں لانے کے مقصد کے تحت بھووی ترقیاتی کارپوریشن قائم کیاگیاہے جس کے لئے 50؍کروڑ روپئے مختص کئے گئے ہیں جس کے ذریعہ فرقے اور دیگر سہولتوں کے ساتھ خود روزگار کا موقع فراہم کیا جائے گا۔ مذکورہ طبقہ کے افراد اس سے استفادہ کریں۔ سابق وزیر شیوراج تنگڈگی نے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ بھووی طبقہ کو ریزرویشن سمیت مختلف سہولیات فراہم کرنا، میسور علاقہ کے عوامی منتخب نمائندوں کے لئے قابل فخر ہے۔ انہوں نے بتایاکہ پہلے کرشنا راج وڈیر نے ریزرویشن جاری کیاتھا جس کے بعد آنجہانی دیو راج ارس نے اسے جاری رکھا اور اب وزیراعلیٰ سدارامیا مختلف سہولیات فراہم کررہے ہیں۔ انہوں نے وزیراعلیٰ سے مطالبہ کیا کہ ریاست میں پتھر پھوڑنے سے روکا جارہاہے۔ اس لئے متعلقہ علاقوں کے ڈپٹی کمشنرز کو ہدایت دیں کہ پتھر پھوڑنے کی انہیں اجازت دیں اور یہ افراد بغیر کسی رکاوٹوں اور پریشانی کے اپنے پیشہ کو جاری رکھ سکیں۔ آنے والے اسمبلی اور پارلیمانی انتخابات میں مذکورہ طبقہ کانگریس کا بھرپور تعاون کرے گا اور ساتھ کارپوریشن کے لئے 500کروڑ روپئے مختص کرنے کا بھی مطالبہ کیا۔ بھووی ترقیاتی کارپوریشن کے صدر جی وی سیتارام نے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ ریاست کے تمام ضلع ہیڈکوارٹرس میں سدرامیشور بھون کی تعمیر کے ساتھ کسی یونیورسٹی کے لئے وائس چانسلر نامزد کیا جائے۔ بھووی طبقات کے اکثریتی علاقوں میں اقامتی اسکول قائم کئے جائیں اور انہیں سیاسی نمائندگی دی جائے۔ انہوں نے مطالبہ کیاکہ کارپوریشن کو جاری 50؍کروڑ کے گرانٹ میں مزید اضافہ کیاجائے۔ اس موقع پر امڈی سدارامیشور سوامی جی، رکن اسمبلی مانپا وجل، منی رتنا، بی بی ایم پی کمشنر منجوناتھ پرساد، اڈیشنل چیف سکریٹری لکشمی نارائن اور دیگر موجود تھے۔

ایک نظر اس پر بھی

کرناٹکا کی ریاستی حکومت کا ٹو وہیلر بائیک پر ڈبل سواری کو روک لگانے کا فیصلہ؛ کیا یہ فیصلہ عوام کی پریشانیوں میں مزید اضافہ کا سبب بنے گا ؟

کرناٹک حکومت جلدہی ایک فیصلہ کرنے جارہی ہے جسے میں ریاست کے دوپہیوں والے سوار کی زندگی میں تبدیلی آسکتی ہے۔ریاستی حکومت 100سی سی یا اس سے کم انجن کی صلاحیت والے دو پہیوں کی موٹر گاڑیوں پر دو لوگوں کی سواری کرنے پر روک لگانے جارہی ہے ۔

ہبلی :پٹاخوں سے گھر میں لگی آگ ، کئی اشیاء جل کر خاک : کوئی جانی نقصان نہیں

دیوالی کے موقع پر پٹاخوں کو پھوڑنے کو لےکر سرکاری و غیر سرکاری طورپر احتیاطی تدابیر اختیار کرنےکے سلسلےمیں کئی احکامات جاری کئے جاتےہیں اور رہنمائی کی جاتی ہے لیکن اس کے باوجو د ہر سال پٹاخوں سے جانیں تلف ہونے  بچوں کی بینانی متاثر ہونے   پر سماجی ذمہ داران تشویش کا اظہار ...

وزیر اعلیٰ عہدے کے امیدوار کا اعلان نہ ہونے کی کانگریس کی انتخابی امید پر کوئی اثر نہیں ہوگا: جی پرمیشور

کرناٹک ریاستی کانگریس نے آج یہاں کہا کہ اسمبلی انتخابوں سے پہلے ریاست میں وزیر اعلیٰ عہدہ کے امید وار کے نام کا اعلان نہیں کئے جانے سے پارٹی کی امیدوں پر اس کاکوئی اثرنہیں پڑے گا۔