زہریلے کھانے کا معاملہ، اعلیٰ سطحی جانچ کرانے سدارمیاکا مطالبہ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 16th December 2018, 8:19 AM | ریاستی خبریں |

میسور، 16دسمبر (ایس او نیوز؍یو این آئی)کرناٹک کے سابق وزیر اعلیٰ اور مخلوط حکومت کے کورابطہ کمیٹی کے صدر سدارمیا نے سُلوادی گاؤں کے مرمَّا مندر میں زہریلا کھانہ کھانے سے 11 عقیدتمندوں کی موت اور 80 افراد کے بیمار ہونے کے معاملے کی اعلیٰ سطحی جانچ کا مطالبہ کیا ہے ۔

مسٹر سدارمیا نے سنیچر کو کے آر اسپتال جاکر بیماروں کا حال پوچھا۔ بعد ازاں صحافیوں کو خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ وہ وزیر اعلیٰ ایچ ڈی کمارا سوامی سے معاملے کی اعلیٰ سطحی جانچ کرانے سے متعلق گفتگو کریں گے ۔ انہوں نے ڈاکٹروں سے مریضوں کی حالت کے بارے میں جانکاری لی۔

مسٹر سدا رمیا نے کہا،‘ حکومت نے ہلاک ہونے والوں کے اہل خانہ کے لیے مالی تعاون کا فیصلہ کر دیا ہے ۔ میں نے بھی اراکین اسمبلی اور وزراء کو بیماروں کوبہتر علاج مہیاکرانے کی ہدایت دی ہے ۔ میں نے چامراج نگر کے ڈپٹی کمشنر سے بھی بات چیت کی ہے ۔ انہوں نے کہا،‘ یہ دردناک حادثہ ہے ۔ اس طرح کے حادثہ کہیں بھی نہیں ہونا چاہیے ۔ اس حادثے کے پیچھے جس کا بھی ہاتھ ہے ، اسے سخت سزا دی جانی چاہیے ’۔ ذاتی رنجش کے سبب کسی کی بھی موت نہیں ہونی چاہیے ۔

ایک نظر اس پر بھی

مفرورمنصورخان کاایک اورویڈیو 24 گھنٹے میں ہندوستان واپسی کاوعدہ!

لوگوں کو کروڑوں روپئے کا دھوکہ دینے والی پونزی کمپنی آئی ایم اے کے بانی وایم ڈی محمد منصور خان کیا واقعی 24 گھنٹوں میں ہندوستان واپس لوٹ آئیں گے؟ جبکہ اس گھپلے کی جانچ کررہی ایس آئی ٹی نے یہ دعویٰ کیا ہے کہ منورخان کا پاسپورٹ انٹرپول کے ذریعہ کالعدم قرار دیا گیا ہے -