وزیر اعظم کے نام سداپورکے نوجوان کا مراسلہ۔ الیکشن لڑنے کے لئے کم از کم تعلیمی قابلیت لازمی کی جائے

Source: S.O. News Service | Published on 12th March 2018, 8:42 PM | ساحلی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

سداپور 12؍مارچ (ایس او نیوز)شیموگہ کے گورنمنٹ فرسٹ گریڈ کالج میں شعبہ کامرس کے طالب علم محمد ثاقب  نے وزیراعظم نریندرمودی کو خط لکھ کر مطالبہ کیا ہے کہ ملک میں انتخاب لڑنے کے خواہشمند امیدواروں کے لئے کم از کم تعلیمی قابلیت لازمی کرنے والا قانون لاگو کیا جائے۔

سداپور کے رہنے والے محمد ثاقب  نے وزیر اعظم کے نام اپنے مراسلے میں پوچھا ہے کہ’’ ملک میں انتخاب لڑنے کے لئے کم ازکم تعلیمی قابلیت کیوں ضروری نہیں ہے۔ ایک تعلیم یافتہ نوجوان کے طور پر میں ملک کے انتخابی نظام میں تبدیلیاں دیکھنے کا خواہشمندہوں، جس میں تعلیمی قابلیت کا ہونا بھی لازمی رہنا چاہیے۔‘‘

ثاقب کاکہنا ہے کہ ایک آدھ مہینے پہلے ٹی وی کے ایک پروگرام کے دوران یہ دیکھ کر وہ حیران رہ گئے کہ ایک ایم ایل اے کو اس لفظ کا فُل فارم بھی نہیں معلوم تھا۔تب میں نے اپنے آپ سے پوچھا کہ انتخاب لڑنے کے لئے تعلیمی قابلیت کیوں لازمی نہیں ہونی چاہیے۔مجھے یاد پڑتا ہے کہ سال نو کے آغاز  پر وزیرا عظم نریندرمودی نے ’’من کی بات‘‘ نامی پروگرام میں کہا تھا کہ ’’اب وقت آگیا ہے کہ ہم اپنے ملک کو پوزیٹیو انڈیا سے پروگریسیو انڈیا میں تبدیل کریں‘‘۔ شکیب کا ماننا ہے کہ اگر ملک کو ترقی کی راہ پر گامزن کرنا ہے  تو ایک نہیں بلکہ کئی طرح کی تبدیلیاں لانی ہوگی اور ان میں سے ایک اہم تبدیلی کے طور پر ایسا قانون بنانا ہوگا جس کے تحت الیکشن لڑنے کے لئے کم ازکم تعلیمی قابلیت لازمی ہو۔ثاقب  نے بتایا کہ ’’مجھے اور بہت سے موضوعات پر وزیرا عظم سے بات کرنی ہے۔ اگر میرے مراسلے کے اس پہلے سوال کا جواب اگر مجھے مل جاتا ہے تو پھرمیں ان سے اگلے سوالات پوچھوں گا۔‘‘

ایک نظر اس پر بھی

شرورمٹھ کے سوامی کی موت کثرت شراب نوشی اور ناجائز تعلقات کا نتیجہ ؟معاملہ کی تحقیقات اور جانچ کیلئے 7ٹیمیں تشکیل 

اڈپی شرورمٹھ کے سوامی لکشمی ورتیرتھ سوامی جی کی مشتبہ حالات میں ہوئی موت پر انہیں قتل کیے جانے کاشبہ ظاہر کیاگیاتھا جس کے نتیجہ میں اڈپی ضلع ایس پی نے اس معاملہ کی ہر زاویہ سے جانچ کے لیے پولیس کی 7ٹیمیں تشکیل دی گئی ہیں ۔ شرور علاقہ میں یہ افواہیں بھی اڑائی جارہی ہیں کہ سوامی ...

مینگلور: میڈیکل کالج میں سنی مسلم طلبا کو سیٹ محفوظ کرنے کامطالبہ،ریاستی ہائی کورٹ نے عرضی پر فیصلہ محفوظ کرلیا

منگلورو کی کنچور انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنس میں سنی مسلم طالبات کے لئے سیٹوں کے ریزرویشن کے بارے میں ریاستی ہائی کورٹ میں دائر ایک عرضی پر ہائی کورٹ نے اپنا فیصلہ محفوظ کرلیا ہے۔

مچھلیوں کے شوقین ہوشیار؛ مچھلیوں میں ڈالا جارہا ہے موت کی دعوت دینے والا کیمکل : گوا میں پابندی عائد کرتے ہی ساحلی کرناٹکا میں بھی جانچ شروع

 بیرونی ریاستوں سے کیمکل استعمال کردہ مچھلیوں کو روکنے کے لئے ریاست گوا کے وزیر اعلیٰ منوہر پاریکر حکم صادر کرتےہی متحرک ہوئی گوا پولس بدھ کی رات سے  ہی لاریوں کی جانچ پڑتال شروع کی۔ کرناٹکا سمیت ریاست گوا میں داخل ہونےوالی دیگر ریاستوں کی مچھلی لاریوں کو سرحد پر روک کر واپس ...

شرورمٹھ کے سوامی کی موت کثرت شراب نوشی اور ناجائز تعلقات کا نتیجہ ؟معاملہ کی تحقیقات اور جانچ کیلئے 7ٹیمیں تشکیل 

اڈپی شرورمٹھ کے سوامی لکشمی ورتیرتھ سوامی جی کی مشتبہ حالات میں ہوئی موت پر انہیں قتل کیے جانے کاشبہ ظاہر کیاگیاتھا جس کے نتیجہ میں اڈپی ضلع ایس پی نے اس معاملہ کی ہر زاویہ سے جانچ کے لیے پولیس کی 7ٹیمیں تشکیل دی گئی ہیں ۔ شرور علاقہ میں یہ افواہیں بھی اڑائی جارہی ہیں کہ سوامی ...

مینگلور: میڈیکل کالج میں سنی مسلم طلبا کو سیٹ محفوظ کرنے کامطالبہ،ریاستی ہائی کورٹ نے عرضی پر فیصلہ محفوظ کرلیا

منگلورو کی کنچور انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنس میں سنی مسلم طالبات کے لئے سیٹوں کے ریزرویشن کے بارے میں ریاستی ہائی کورٹ میں دائر ایک عرضی پر ہائی کورٹ نے اپنا فیصلہ محفوظ کرلیا ہے۔

کورگ میں ویڈیو بناکر مرکز توجہ بننے والے،عبدالفتح سے کمار سوامی کی ملاقات

کورگ میں موسلادھار بارش اور سیلاب کی صورتحال کے دوران وزیراعلیٰ ایچ ڈی کمار سوامی کو متوجہ کرانے کے لئے سوشیل میڈیا پر آنے والے ویڈیو میں جو بچہ وزیراعلیٰ ایچ ڈی کمار سوامی کو صورتحال پر متوجہ کروارہاتھا، آج کورگ میں وزیراعلیٰ کمار سوامی نے اس بچے عبدالفتح سے ملاقات کی۔

مودی اب چوکیدار نہیں شراکت دار بن گئے:راہل گاندھی

کانگریس صدر راہل گاندھی نے وزیر اعظم نریندر مودی پر ملک کے عوام کے ساتھ وعدہ خلافی کرنے، ہزاروں کروڑ روپے کا قرض معاف کرکے اور پٹرولیم کی قیمتوں میں مسلسل اضافہ کرکے اپنے دوست صنعت کاروں کو فائدہ پہنچانے کا الزام لگاتے ہوئے آج کہا کہ وزیر اعظم اب چوکیدار نہیں شراکت دار بن گئے ...