روپے کی گرتی قیمت کو لے کر شیوسینا کا مرکزی حکومت پر نشانہ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 6th September 2018, 12:42 PM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

نئی دہلی6ستمبر ( ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا ) شیوسینا نے روپے کی گرتی قیمت اور پٹرول ڈیزل کی بڑھتی ہوئی قیمتوں کو لے کر مرکزی حکومت کی تیکھی تنقید کی ہے۔ شیوسینا نے کہا کہ ملک بنانا ری پبلکن بننے کی راہ پر ہے۔ پارٹی نے طنز کرتے ہوئے کہا کہ ڈالر کے مقابلے روپیہ سب سے کم سطح تک پہنچ گیا ہے وہیں وزیر اعظم نریندر مودی ملک کی معیشت کے تباہ ہونے کے لیے کانگریس کو ذمہ دار بتا رہے ہیں، جو مکمل طور پر غلط ہے۔ پارٹی نے اپنے ترجمان اخبار سامنا کے اداریہ میں لکھا کہ مرکزی حکومت یہ بھول رہی ہے کہ گزشتہ چار سال سے وہ اقتدار میں ہے۔ اس دوران پٹرول، ڈیزل کی قیمتیں آسمان چھو رہی ہیں۔ پٹرول جلد ہی 100 روپے پر پہنچ جائے گی، بڑی تعداد میں بے روزگار نوجوان سڑکوں پر اتریں گے اور افراتفری ہوگی، یہی وجہ ہے کہ آج کسان دکھی ہیں۔کھانے کی اشیاء ، رسوئی گیس اور سی این جی کی قیمتوں میں بھی مسلسل اضافہ ہو رہا ہے۔ شیوسینا نے کہا کہ ملک کی تصویر دل دہلانے والی ہے اور ہم بنانا ری پبلکن بننے کی راہ پر چل رہے ہیں۔ غور طلب ہے کہ سیاسی اصطلاح میں بنانا ری پبلکن سیاسی طور پر غیر مستحکم ملک کو کہتے ہیں جس کی معیشت کچھ ایک مصنوعات مثلا کیلاوغیرہ کی برآمد پر ٹکی ہوتی ہے۔ اداریہ میں کہا گیا ہے کہ اگر روپے کی قیمت اسی طرح گرتی رہی تو یہ جلد ہی 100 روپے فی امریکی ڈالر کی سطح سے تجاوز کر جائے گا۔ شیوسینا نے کہا کہ جب بی جے پی اپوزیشن میں تھی تو کہا کرتی تھی کہ روپے کی قیمت گرنے سے ملک کی ساکھ بھی گرتی ہے۔پارٹی نے مرکزی حکومت پر طنز کیا کہ اب اگر روپیہ 100 روپے فی امریکی ڈالر کے قریب پہنچ رہا ہے تو کیا یہ کہا جا سکتا ہے کہ ہمارے ملک کی تصویر سدھر رہی ہے؟اداریہ میں کہا گیا کہ پالیسی کمیشن ملک کی معیشت کو تباہ کرنے کا الزام ڈوبے قرض کی وصولی کے لئے اٹھائے گئے اقدامات کے لئے آر بی آئی کے سابق گورنر رگھو رام راجن پر پرڈال رہا ہے؛ لیکن روپے کی قیمت اس سے بہت نیچے پہنچ گئی ہے جو راجن کی مدت کے دوران تھی۔شیوسینا نے دعوی کیا ہے کہ راجن نے حکومت کے نوٹ بندی کے فیصلے کی مخالفت کی تھی۔ وہ اس کے پرچار کے لئے ہزاروں کروڑ روپے خرچ کرنے کے تئیں مرکز کے خلاف تھے۔ اس میں کہا گیا ہے کہ یہ دنیا کی چھٹی سب سے بڑی معیشت کی علامات نہیں ہیں، ملک کی لڑکھڑاتی معیشت کے لئے کانگریس اور رگھو رام راجن کو ذمہ دار ٹھہرانا ایک مذاق ہے۔ ہمیں بتائیے کہ آپ نے کیا کیا؟ لیکن حکومت کے پاس کہنے کے لئے کچھ بھی نہیں ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

سون بھدر معاملے میں انصاف کا مطالبہ، پرینکا گاندھی کو حراست میں رکھنے کی مخالفت میں کانگریس کا پارلیمنٹ کے احاطے میں مظاہرہ

اتر پردیش کے سون بھدر ضلع میں 10 قبائلیوں کے قتل کے معاملے میں انصاف کی طلب اور پرینکا گاندھی واڈرا کو حراست میں رکھے جانے کی مخالفت کرتے ہوئے کانگریس کے ممبران پارلیمنٹ نے پیر کو پارلیمنٹ ہاؤس کے احاطے میں مظاہرہ کیا۔

منگلورو میں ڈینگی سے ٹی وی جرنلسٹ ہلاک 

بی ٹی کے لئے ویڈیو جرنلسٹ کے طور خدمات انجام دینے والے ناگیش پاڈوکی موت کے ساتھ منگلورو میں ڈینگی بخار سے ہونے والی ہلاکتوں میں ایک او ر اضافہ ہواہے۔خیال رہے کہ اس سے قبل ڈینگی بخار میں مبتلا تین افراد کی موت واقع ہوچکی ہے۔

جنوری 19 کو ہوں گےانجمن حامئی مسلمین بھٹکل کے انتخابات؛ اسحاق شاہ بندری الیکشن کمشنر منتخب

قومی تعلیمی ادارہ انجمن حامئی مسلمین بھٹکل کے عام انتخابات اگلے سال 19 جنوری کو ہوں گے جس کے لئے آج سنیچر کو  ہوئی انتظامیہ میٹنگ میں  الیکشن کمشنر کا انتخاب عمل میں آیا ہے۔  اس بات کی تصدیق انجمن کے جنرل سکریٹری جناب صدیق اسماعیل نے کی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ  آج کی میٹنگ میں ...

بھٹکلی جماعت المسلمین مینگلورو کا مستحسن اقدام : بنٹوال میں ہوئے سڑک حادثے میں شدید زخمیوں کی عیادت کرنے اور اُنہیں ہرممکن تعاون دینے جماعت کے وفد کا اسپتال دورہ

بھٹکلی  جماعت المسلمین مینگلور کے ایک وفد نے  مینگلور کے مختلف اسپتالوں کا دورہ کرتے ہو ئے  کل جمعہ کو سڑک حادثے میں ہوئے زخمی بھٹکلی لوگوں کی عیادت کی اور اُن کے رشتہ داروں سے بات چیت کرتے ہوئے جماعت کی جانب سے ہر ممکن تعاون کا یقین دلایا۔

انکولہ میونسپالٹی چیف آفیسر کو ڈی سی نے لیا آڑے ہاتھ۔ کہا؛ اگر تم ایماندار ہوتے تو کٹہرے میں کھڑے نہ ہوتے

انکولہ میونسپالٹی میں ڈھنگ سے کام نہ ہونے کی شکایت ملنے پر  اُترکنڑا کے ڈپٹی کمشنر  ڈاکٹر ہریش کمار انکولہ پہنچ کر  میونسپل چیف آفسر بی پرہلاد کو آڑے ہاتھوں لیا اور کہا کہ اگر تم  ایمانداری سے اپناکام انجام دے رہے ہوتے  تو اس طرح کٹہرے میں کھڑے ہونے کی نوبت نہ آتی ۔ ڈپٹی ...