شیوسینا کا مودی پر حملہ، مسائل کو دبانے پر ہی پھوٹ رہے ہیں مخالفت کے سر

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 27th July 2018, 1:22 AM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

ممبئی:26/جولائی(ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا)مہاراشٹر میں مراٹھا ریزرویشن تحریک کے دوران ہوئے تشدد کا نوٹس لیتے ہوئے شیوسینا نے کہا کہ حکومت کی طرف سے مسائل کو 'دبانے' کے رجحان کی قیمت ریاست کو چکانی پڑی۔ پارٹی نے 'منظر سے غائب رہنے' کے لئے وزیر اعلی کی تنقید بھی کی۔ شیوسینا نے کہا کہ بی جے پی عام طور پر کریڈٹ لینے میں آگے رہتی ہے اور کل ہوئے بند اور تشدد کا کریڈٹ بھی اسے لینا چاہئے۔اس نے کہا کہ پارلی (بیڑ ضلع) میں جب کچھ لوگوں نے مخالفت کرنا شروع کیا تھا اسی وقت اگر وزیر اعلی نے مراٹھا برادری سے بات کی ہوتی تو اس کے بعد کے واقعات نہیں ہوتے ۔ شیوسینا نے پارٹی کے ترجمان اخبار 'سامنا' کے اداریہ میں الزام لگایا ہے کہ بہرحال حکومت کے رجحان کی قیمت ریاست کو چکانی پڑی جو مسائل کو دبانا چاہتی ہے۔ شیوسینا نے کہا کہ مراٹھا مورچہ میں حصہ لینے والی بھیڑ کو کنٹرول کرنا پولیس کے لئے مشکل ہو گیا تھا کیونکہ جذبات کے علاوہ یہ مسئلہ ساکھ بھی ہو گیا تھا اور گزشتہ 24 گھنٹے پولیس بے بس نظر آئی ۔ پارٹی نے کہا کہ ہر مسئلے عام طور پر خود ہی حل کرنے والے وزیر اعلی منظر نامہ سے غائب تھے اور کسی کو بھی نہیں پتہ تھا کہ وہ کہاں ہیں یا کیا کر رہے ہیں۔ 

ایک نظر اس پر بھی

مالیگاؤں 2008ء بم دھماکہ معاملہ، بم دھماکوں میں زخمی ہونے والے دو افراد نے گواہی دی، دفاعی وکلاء عدالت سے غیر حاضر ، جرح اگلے ہفتہ متوقع

مالیگاؤں ۲۰۰۸ء بم دھماکہ معاملے میں سماعت روز بہ روز جاری ہے ، آج اس معاملے میں بم دھماکوں میں زخمی ہونے والے دو افراد کی گواہی عمل میں آئی

مثبت فکر اورتوانائی سے ملک کی ترقی ہوتی ہے:ارون جیٹلی 

مودی حکومت کے ناقدین کو بات بات پر احتجاج کرنے والا بتاتے ہوئے وزیر خزانہ ارون جیٹلی نے جمعرات کو ان پر جھوٹ گھڑنے اور ایک منتخب حکومت کو کمزور کرکے جمہوریت کو برباد کرنے کا الزام لگایا۔ طبی معائنہ کے لیے امریکہ دورہ پر گئے ارون جیٹلی نے ایک فیس بک پوسٹ میں کہا کہ اظہار رائے کی ...

عد لیہ نے مہاراشٹر میں ڈانس بار پر پابندی لگانے والی کئی تجاویزمستردکیں 

سپریم کورٹ نے مہاراشٹر میں ڈانس بار کے لئے لائسنس اور اس کاروبار پر پابندی لگانے والے کچھ تجاویز جمعرات کومنسوخ کردیئے۔ جسٹس اے کے سیکری کی صدارت والے بنچ نے مہاراشٹر کے ہوٹل، ریستوران اور بار ہاؤس میں فحش رقص پر پابندی اورعورتوں کے وقار کی حفاظت سے متعلق قانون 2016 کے کچھ دفعات ...

شرالی میں قومی شاہراہ کی توسیع کو لےکر ہزاروں عوام  شاہراہ روک کیا  احتجاج : مجموعی استعفیٰ کا انتباہ اور الیکشن بائیکاٹ کا اعلان

تعلقہ کے شرالی میں دن بدن قومی شاہراہ کی توسیع کو لےکر معاملہ گرم ہوتا جارہاہے۔ شرالی میں قومی شاہراہ کی توسیع 45میٹر سے کم کرکے 30میٹر کئے جانےکی مخالفت کرتے ہوئے جمعرات کو ہزاروں لوگو ں نے قومی شاہراہ روک کر سخت احتجاج درج کیا۔ اس دوران عوامی مانگوں کو منظوری نہیں دی گئی تو ...

بھٹکل انجمن بی بی اے کی طالبہ مریم حرا کو  کرناٹکا یونیورسٹی سطح پر دوسرا رینک

انجمن انسٹی ٹیوٹ آف مینجمنٹ بھٹکل کی طالبہ مریم حرابنت ارشاد ائیکری ڈاٹا نے کرناٹکا یونیورسٹی دھارواڑ کے زیر اہتمام اپریل 2018میں منعقد ہوئی بی بی اے امتحانات میں پوری یونیورسٹی میں دوسرارینک حاصل کرتے ہوئے انجمن اور شہر کا نام روشن کیا ہے۔