شموگہ میں دکانوں پر پتھرائو کے بعد حالات کشیدہ؛ پولس نے سنبھالا مورچہ ، حالات پر کیا قابو

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 2nd September 2018, 2:09 AM | ریاستی خبریں |

شموگہ یکم ستمبر (ایس او نیوز) شہر کے گاندھی بازار، کستوربا روڈ پر  واقع ایک  چپلوں کی دکان میں  کسی لڑکی کے ساتھ  چھیڑ چھاڑ کرنے کا الزام عائد کرتے ہوئے  کچھ ہندو شدت پسند تنظیموں کے نوجوانوں نے دکانوں پر پتھرائو شروع کردیا، جس کے نتیجے میں کچھ دیر کے لئے حالات کشیدہ ہوگئے، مگر فوری طور پر پولس نے مورچہ سنبھالتے ہوئے حالات پر قابو پالیا۔

بتایا گیا ہے کہ ایک لڑکی کسی دکان سے چپل  خرید رہی تھی کہ اس دوران دکاندار  نے مبینہ طور پر لڑکی کے ساتھ کچھ چھیڑ چھاڑ کی، ناراض لڑکی نے فوراً اپنے  متعلقین کو واقعے کی جانکاری دی ۔ اطلاع ملتے ہی  درجنوں  ہندو شدت  پسند تنظیموں کے کارکنوں نے کستوربا روڈ پہنچ کر دکانوں پر پتھرائو شروع کردیا جس سے  افراتفری مچ گئی اور لوگوں میں خوف وہراس کی لہر دوڑنے لگی۔

واقعے کی اطلاع ملتے ہی پولس کی زائد فورس متعلقہ علاقہ میں  پہنچ گئی اور  آتے ہی  لاٹھیوں کا سہارا لیتے ہوئے  مظاہرین کو منتشر کردیا۔ بعد میں حساس مقامات مانے جانے والے  شموگہ کے علاقوں میں پولس کی زائد فورس تعینات کردی گئی۔

لڑکی کو چھیڑنے کے تعلق سے ہندو شدت پسند تنظیموں کے کارکنوں نے پولس سے مطالبہ کیا کہ وہ خاطیوں کے خلاف سخت قانونی کاروائی کرے۔

اخبارنویسوں سے گفتگو کرتے ہوئے  شموگہ ایس پی ابھینو کھرے نے  بتایا کہ حالات پر فوری طور پر قابو پالیا گیا ہے اور ضلع کے عوام کو ڈرنے کی ضرورت نہیں ہے، انہوں نے کہا کہ معمولی واقعہ پیش آیا تھا اور پولس نے لڑکی کو اور دوسرے لڑکوں کو بھی گھر بھیج دیا ہے اور  حالات پر قابو پالیا گیا ہے۔ ایس پی نے کہا کہ شہر میں حالات بالکل پُرامن ہیں، کچھ بھی نہیں ہوا ہے، انہوں نے عوام الناس سے درخواست کی کہ وہ سوشیل میڈیا کے ذریعے غلط اور بے بنیاد خبریں نہ پھیلائیں۔ 

ایک نظر اس پر بھی

آئی ایم اے سرمایہ کاری گھوٹالے کے سرغنہ منصور خان کوایس آئی ٹی نے کیا گرفتار؛ چھان بین کے لئے کیا انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ کے حوالے

حلال کمائی کے نام پر بھاری منافع کا لالچ دے کرہزاروں لوگوں سے کروڑوں روپے سرمایہ کاری میں لگوانے کے بعد اچانک فرار ہوجانے والے آئی ایم اے کے سرغنہ منصور خان کوپولیس کی خصوصی تحقیقاتی ٹیم (ایس آئی ٹی)نے نئی دہلی کے ایئر پورٹ پر رات 1.30بجے گرفتار کرلیا۔

مینگلور کے قریب بنٹوال میں بھیانک سڑک حادثہ؛ بھٹکل کے ایک ہی خاندان کے چار افراد ہلاک، سات زخمی؛ مرنے والوں میں دلہا بھی شامل

مینگلور کے قریب بنٹوال میں  آج جمعہ صبح   پیش آئے ایک بھیانک سڑک حادثے میں بھٹکل کے ایک ہی خاندان کے چار افراد ہلاک ہوگئے جبکہ سات دیگر شدید زخمی ہوگئے ۔ مرنے والوں میں  دلہا بھی شامل ہے جبکہ دلہن  کی حالت نازک بتائی گئی ہے۔  حادثہ اُس وقت پیش آیا جب ایک کار، جس پر یہ سبھی ...

باغی اراکین اسمبلی ایوان کی کارروائی میں حاضر ہونے کے پابند نہیں:سپریم کورٹ عدالت کے فیصلہ سے مخلوط حکومت کو جھٹکا -کانگریس عدالت سے دوبارہ رجوع کرے گی

کرناٹک کے باغی اراکین اسمبلی کے استعفوں سے متعلق سپریم کورٹ نے آج جو فیصلہ سنایا ہے وہ ”آڑی دیوار پر چراغ رکھنے“ کے مصداق ہے- کیونکہ اس سے نہ کرناٹک کا سیاسی بحران ختم ہوگا اورنہ ہی مخلوط حکومت کو بچانے میں کچھ مدد ملے گی-