شتروگھن سنہا کا وزیراعظم مودی پرحملہ ، مودی وہ واحد وزیر اعظم ہوں گے، جن کے دور میں ایک بھی پریس کانفرنس نہیں ہوئی ،نیا وزیر اعظم منتخب کرے ملک

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 14th March 2019, 11:59 PM | ملکی خبریں |

پٹنہ، 14 مارچ(ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا) بی جے پی کے باغی رہنما شتروگھن سنہا نے جمعرات کو وزیر اعظم نریندر مودی پر نشانہ لگاتے ہوئے کہا کہ اب ایک نئے بہتر قیادت کو عہدہ سنبھالنا چاہئے۔پٹنہ صاحب سے بی جے پی کے رہنما سنہا نے ٹوئیٹر کے ذریعے مودی کے پانچ سال کی مدت میں ایک بھی پریس کانفرنس نہ کرنے پر طنز کرتے ہوئے کہاکہ اب لوک سبھا انتخابات کی تاریخوں کا اعلان ہو گیا ہے۔سر اب تو کم از کم ایک پریس کانفرنس کر دیجیے۔ایک بھی آزادانہ اور منصفانہ پریس کانفرنس نہیں کی گئی۔آپ تاریخ پر نظر ڈالیں تو ایسے واحد وزیر اعظم ہیں آپ۔سنہا نے کہا کہ دنیا کے جمہوری تاریخ میں وہ واحد وزیر اعظم ہوں گے، جن کے دور میں ایک بھی سوالات اور جوابات کا سیشن نہیں ہوا ہے۔انہوں نے پوچھا آپ کو نہیں لگتا کہ حکومت تبدیل کرنے اور ایک بہتر قیادت کے عہدہ سنبھالنے کا یہ صحیح وقت ہے۔آپ کو اپنے تمام رنگ ڈھنگ کے ساتھ باہر آنا چاہئے۔اپنی مدت کے آخری ہفتے / ماہ میں آپ نے اتر پردیش، بنارس اور ملک کے دیگر حصوں میں 150 منصوبوں کا اعلان کیا۔سنہا نے اپنے آخری ٹویٹ میں کہا تکنیکی طور پر یہ ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی نہیں بھی ہو، تو بھی یقیناًیہ بہت کم اور بہت دیر سے آیا جملہ لگتا ہے۔’آپ کہیں پر نگاہیں اور کہیں پر نشانہ‘ والے رویہ اور حملہ کرکے بھاگ کھڑے ہونے کے رویے کے باوجود آپ کو نیک خواہشات، جے ہند۔

ایک نظر اس پر بھی

گذشتہ دس سالوں سے جیل میں مقید مسلم نوجوان کو قانونی کی تعلیم جاری رکھنے کی اجازت، جمعیۃ علماء نے قانونی امداد کے ساتھ ساتھ تعلیمی وظیفہ بھی دیا، پہلے مرحلہ کا نتیجہ اطمنان بخش: گلزار اعظمی

ممبئی کی خصوصی مکوکا(این آئی اے) عدالت نے جھوٹے دہشت گردانہ معاملے کا سامنا کررہے ایک مسلم نوجوان کو قانون کی تعلیم جاری رکھنے اور اسے امتحان میں شرکت کرنے کی مشروط اجازت دی۔13-7 ممبئی سلسلہ وار بم دھماکہ معاملے کا سامنا کررہے ملزم ندیم اختر کو ایل ایل بی پہلے سال کے دوسرے مرحلہ ...

مرکز نے سپریم کورٹ سے کہا، رافیل معاہدہ میں پی ایم اوکادخل نہیں، تمام عرضیاں ہوں مسترد

لوک سبھا انتخابات میں اپوزیشن نے رافیل لڑاکا طیارے معاہدے میں بے ضابطگیوں کا الزام لگاتے ہوئے اسے سب سے بڑا مسئلہ بنایا۔کانگریس صدر راہل گاندھی نے اس معاہدے کے لئے براہ راست طور پر وزیر اعظم نریندر مودی کو ذمہ دار بتایا۔

جب تک کجریوال ہیں، دہلی کو مکمل ریاست کا درجہ دینے کی نہیں سوچ سکتے:ہرش وردھن

دہلی کی چاندنی چوک سیٹ سے تقریباََ228000 ووٹوں سے جیت کر دوبارہ ایم پی بنے مرکزی وزیر ڈاکٹر ہرش وردھن نے بات کی۔دہلی کو مکمل ریاست کا درجہ دینے کے معاملے پر انہوں نے کہا کہ جب تک اروند کجریوال وزیر اعلی ہیں، اس وقت تک اس کے بارے میں سوچا بھی نہیں جا سکتا۔