جے ڈی یوممبران پارلیمنٹ نے نائب صدر سے ملاقات کی، پارلیمانی پارٹی کے لیڈر کے عہدے سے شرد یادو کو ہٹانے کے لیے سونپا خط،آرسی پی سنگھ نئے لیڈر

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 13th August 2017, 11:34 AM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،12؍اگست(ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا) جے ڈی یوکے بہار میں بی جے پی کے ساتھ مل کر حکومت بنانے کے بعد جس طرح سے شرد یادو بغاوت کے راستے چل رہے ہیں اس سے صاف پتہ چل رہاہے کہ ان کے خلاف کسی بھی وقت کارروائی کی جا سکتی ہے۔ اسی کڑی میں آج جے ڈی یو کے سات راجیہ سبھا، دو لوک سبھا ممبران پارلیمنٹ اور قومی جنرل سکریٹری سنجے جھا نے صبح دس بجے نائب صدر ایم وینکیا نائیڈو سے ملاقات کر کے پارٹی کی جانب سے سونپا ہے جس میں شرد یادو کی جگہ راجیہ سبھا میں آرسی پی سنگھ کو لیڈر بنائے جانے کی بات ہے۔ اس طرح شرد یادو کی راجیہ سبھا میں لیڈر کے عہدے سے چھٹی کر دی گئی ہے۔ آپ کو بتا دیں کہ راجیہ سبھا میں جے ڈی یو کے دس ممبران پارلیمنٹ ہیں ان میں علی انور معطل کئے جا چکے ہیں۔ کیرالہ کے پی وریندر کمار بی جے پی سے اتحاد کرنے کے نتیش کمار کے فیصلے سے خود کو الگ کر چکے ہیں۔غور طلب ہے کہ شرد یادو اس وقت نتیش کے این ڈی اے میں شامل ہونے کے فیصلے کے خلاف بہار میں سفر کر رہے ہیں اور ریلیوں میں نتیش کے فیصلے کو دھوکہ بتانے سے نہیں گزر نہیں کررہے ہیں۔ اگرچہ جے ڈی یو کی جانب سے انہیں19 اگست کو قومی مجلس عاملہ کی میٹنگ میں بلایا گیا ہے تاکہ وہ اپنا موقف رکھ سکیں۔ اگروہ قومی مجلس عاملہ میں نہیں آتے ہیں توپارلیمانی پارٹی کے اجلاس میں ان کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔

ایک نظر اس پر بھی

وزیر اعلیٰ نتیش کمارکا کشن گنج کے سیلاب زدہ علاقوں کا دورہ;ایم پی مولانااسرارالحق قاسمی نے میمورنڈم سونپ کر سیلاب متاثرین کی فوری بازآبادکاری کامطالبہ کیا

بہار کے وزیر اعلیٰ نتیش کمار نے آج کشن گنج کے سیلاب زدہ علاقوں کا دورہ کرکے سیلاب متاثرین سے ملاقات کی اورراحت وامداد کے کاموں کا جائزہ لیا۔اس موقع پر علاقے کے ایم مولانا اسرارالحق

حادثات سے دکھی پربھونے کہا;ریلوے کے لئے خون اور پسینہ ایک کیا، استعفی پرمودی نے انتظارکرنے کوکہا

گزشتہ پانچ دنوں میں اتر پردیش میں دو ٹرینوں کے حادثات کی اخلاقی ذمہ داری لے کر ریلوے وزیر سریش پربھو استعفی دینے کی پیشکش کی ہے،اگرچہ ان کا استعفی ابھی تک قبول نہیں ہوا تھا۔

حکومت ہماری خاموشی کو بزدلی نہ سمجھے: سید عالمگیر اشرف;رائے پور میں بورڈ کی ہنگامی میٹنگ طلب، ملک بھر میں جاری کیا پیغام،مذہب میں دخل اندازی نا قابل برداشت

مرکزی حکومت کی مسلسل مذہب میں غیر قانونی دخل اندازی حکومت کے لئے اچھا نہیں ہے۔ اپنی ناکامیوں اورمجرموں کو شہ دینے کی مجراانہ سازشوں پر پردہ ڈالنے کے لئے ملک کے