جنسی تشدد اپوزیشن کے خلاف بشار حکومت کا انتقامی حربہ ہے: انسانی حقوق کی تنظیم

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 13th March 2018, 12:12 PM | عالمی خبریں |

دبئی 12مارچ (ایس او نیوز؍ آئی این ایس انڈیا )انسانی حقوق کی ایک غیر سرکاری تنظیم ’ڈیولپمنٹ آف وومینس ‘نے شام میں بشار حکومت پر الزام عائد کیا ہے کہ وہ جنسی تشدد کو اپوزیشن کے خلاف انتقامی کارروائی کے طور پر استعمال کر رہی ہے۔ تنظیم نے خبردار کیا ہے کہ خوف و دہشت کی یہ پالیسی ملک پر بشار حکومت کا کنٹرول لاگو ہونے کی صورت میں اس کے غلبے کو مضبوط کرے گی۔تنظیم کے مطابق شامی حکومت حراستی مراکز اور چیک پوائنٹس میں جنسی تشدد پر کاربند ہونے کے علاوہ اپوزیشن کے قبضے سے کسی علاقے کو واپس لینے پر بھی اس کا استعمال کرتی ہے۔تنظیم کی ڈائریکٹر کا کہنا ہے کہ بشار الاسد کی فتح کی صورت میں بھی شام میں تشدد کا سلسلہ جاری رہے گا۔ اس لیے کہ تشدد اور خوف و دہشت یہ ہی دو ذرائع ہیں جن کے ذریعے بشار الاسد اقتدار میں رہ سکتا ہے۔تنظیم نے عالمی برادری سے مطالبہ کیا ہے کہ تمام انسانیت کے دشمن کی حیثیت سے مرتکب جرائم پر بشار الاسد کا احتساب یقینی بنایا جائے۔

ایک نظر اس پر بھی

مسجد اقصیٰ کے تحفظ کے لیے ہماری کوششوں کو سب جانتے ہیں : خالد بن سلمان

واشنگٹن میں سعودی عرب کے سفیر شہزادہ خالد بن سلمان کا کہنا ہے کہ مملکت کے بانی شاہ عبدالعزیز کے دور سے خادم حرمین شاہ سلمان بن عبدالعزیز کے دور تک مسئلہ فلسطین 70 برسوں سے سعودی عرب کی خارجہ پالیسی میں مرکزی معاملہ رہا ہے۔

غزہ کی مشرقی سرحد پر زخمی ایک اور فلسطینی دم توڑ گیا

فلسطین کے علاقے غزہ کی پٹی میں اسرائیلی دہشت گردی کے نتیجے میں زخمی ہونے والا ایک اور فلسطینی شہری شہید ہوگیا جس کے بعد 30 مارچ سے جاری پرتشدد تحریک میں قابض فوج کے حملوں میں شہید ہونے والے فلسطینیوں کی تعداد 122ہوگئی ہے۔