ضلع اُترکنڑا کے ڈانڈیلی میں ہوراٹا سمیتی کے صدر اور سنئیر وکیل اجیت نائیک کا وحشیانہ قتل

Source: S.O. News Service | Published on 27th July 2018, 11:35 PM | ساحلی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

بھٹکل 27/جولائی (ایس او نیوز) ضلع اُترکنڑا کے ڈانڈیلی میں ایک معروف وکیل  پر دھاردار ہتھیار سے حملہ کرنے کے نتیجے میں  وکیل کی موقع پر ہی  موت واقع   ہونے کی واردات آج جمعہ کی شب قریب سوا نو بجے پیش آئی ہے۔ حملہ کی اطلاع  پھیلتے ہی ڈانڈیلی میں حالات  کشیدہ ہوگئے ہیں اور عوام کی کافی بڑی تعداد اسپتال کے باہر جمع ہوگئی ہے ۔ بتایا گیا ہے کہ  حالات کو قابو میں رکھنے کے لئے پولس کا بھی سخت انتظام کیا گیا ہے۔

مرنے والے کی شناخت اجیت نائیک (57) کی حیثیت سے کی گئی ہے جو ڈا نڈیلی کو تعلقہ تشکیل دینے والی مہم چلانے والی کمیٹی  ڈانڈیلی  ہوراٹا سمیتی کے صدرہونے کے ساتھ ساتھ معروف وکیل اور بار اسوسی ایشن کے بھی صدر تھے، وہ ڈانڈیلی میونسپالٹی کے بھی سابق صدر رہ چکے تھے۔  ذرائع کے مطابق  انہوں نے اپنے پیچھے بیوہ اور دو بیٹوں کو چھوڑا ہے۔

ذرائع نے بتایا کہ وہ آج جمعہ رات قریب سوا  نو بجے   اپنے آفس کا کام ختم کرکے گھر جانے کےلئے کار پر سوار ہوہی رہے تھے کہ ایک نقاب پوش  شرپسند نے تلوار سے اُن پر حملہ کردیا اور انہیں  لہولہان کرتے ہوئے قتل کردیا۔ بتایا گیاہے کہ حملہ میں سر اور کان  دونوں طرف گہرے زخم آئے  اور  وہ خون میں لت پت ہوکر نیچے گرپڑے ، یہاں دل دہلادینے والا منظر تھا۔  موقع پر موجود لوگوں نے فوری  اُنہیں مقامی اسپتال پہنچایا مگر کوئی فائدہ نہیں ہوا۔ ذرائع سے معلوم ہوا  کہ حملہ اتنا زبردست تھا کہ وہ موقع پر ہی ہلاک ہوگئے۔

تلوار سے حملہ کرنے کی خبر جنگل کی آگ کی طرح  پورے شہر میں پھیل گئی اور لوگ بڑی تعداد میں اسپتال کے باہر جمع ہو گئے۔اطلاع ملتے ہی   ڈی وائی ایس پی موہن پرساد، سی پی آئی انیس مجاورسمیت  دیگر پولس اہلکاروں نے موقع پرپہنچ کر حالات کا جائزہ لیا اور اسپتال پہنچ کر بھی لاش کا معائنہ کیا۔

بتایا جارہا ہے کہ دانڈیلی  کی تاریخ میں ایسی وحشیانہ قتل کی یہ پہلی واردات ہے۔اس موقع پر اسپتال کے باہر جمع عوام نے پولس سے مطالبہ کیا کہ وہ  ملزم کو فوری گرفتار کرے، عوام نے متنبہ کیا کہ  فوری گرفتار نہ کرنے کی صورت میں عوام احتجاج پر اُتریں گے۔ حالات پر قابو پانے کے لئے پولس کا یہاںسخت  بندوبست کیا گیا ہے۔ 

دانڈیلی پولس نے قتل کا معاملہ درج کرتے ہوئے  چھان بین شروع کردی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

منگلورو وینلاک اسپتال کے روبرو پرائیویٹ میڈیکل کالج کے طلبا ڈاکٹروں کااحتجاج : تعلیمی وظیفہ کی  ادائیگی کی مانگ

سرکاری اسپتالوں میں کلینکل سہولیات پانے والے  پرائیویٹ میڈیکل کالج کے سرکاری کوٹہ کے گھریلو ڈاکٹر اور پوسٹ گریجویٹ  ڈاکٹرس کو گزشتہ 8مہینوں سے تعلیمی وظیفہ ادا نہیں کیاگیا ہے ، تعلیمی وظیفہ کی مانگ کرتے ہوئے طلبا ڈاکٹروں نے شہر کے وینلاک اسپتال کے روبرو احتجاج کیا۔

سورتکل میں ٹول گیٹ فیس وصولی  لائسنس کی تجدیدکاری کے خلاف غیر معینہ مدت کا دھرنا

ریاستی حکومت کی پیش کش کے باوجود  نیشنل ہائی وے اتھارٹی کی طرف سے  سورتکل کے غیر قانونی ٹول گیٹ کے  فیس وصولی لائسنس کی تجدید کئے جانے کی مخالفت کرتے ہوئے آج سے ٹول گیٹ مخالف ہوراٹ سمیتی کی قیادت میں سورتکل جنکشن پر دن رات کا غیر معینہ مدت کا دھرنا شروع کیاگیا

کاروار میں سرکاری انجینئرنگ کالج پرنسپال کی غفلت۔ بی ای سیکنڈ کو نہیں ملی لیاٹرل اینٹری۔ طلبہ کا خسارہ

سرکاری انجینئرنگ کالج کے پرنسپال کی غفلت کی وجہ سے بی ای سال دوم میں طلبہ کو داخلے کے لئے لیاٹرل اینٹری کی جو سہولت ہے وہ دستیاب نہیں ہوسکی ہے۔ لیاٹرل اینٹری سسٹم کے ذریعے ڈپلومہ پورا کرنے والے طلبہ براہ راست انجینئرنگ کے سال دوم میں ایک امتحان کے ذریعے داخلہ لے سکتے ہیں۔

ضلع شمالی کینرا میں جے ڈی ایس کا وجود نہیں ہے۔ آئندہ لوک سبھا میں کانگریس کا ہی امیدوار ہوگا۔ دیشپانڈے کا بیان

ریوینیو اور ضلع انچارج وزیر آر وی دیشپانڈے نے کہا ہے کہ ضلع شمالی کینرا میں جنتا دل ایس کا کوئی وجود نہیں ہے، بلکہ کانگریس پارٹی ضلع میں پوری طرح مستحکم ہے۔ اس لئے آئندہ لوک سبھا انتخاب میںیہاں سے کانگریس کا امیدوار ہی میدان میں اتارا جائے گا۔

کمٹہ: پجاری وشویشورا بھٹ کے قتل کی سازش پہلے بھی رچی گئی تھی؛ پولس کی تحقیقات جاری

حال ہی میں کمٹہ مندر کے پجاری وشویشورا بھٹ کے قتل سے متعلق تحقیقات کے دوران یہ بات سامنے آئی ہے کہ اپنے خون کے رشتے دار پر بھروسہ ہی ان کے قتل کا سبب بنا ہے، کیونکہ انہیں نئی خریدی گئی زمین کی شدھی کرنے کی پوجا انجام دینے کے بہانے مرور کی طرف بلاکر لے جانے والا کوئی اجنبی نہیں ...

بھٹکل میں طبی سہولیات کا ایک جائزہ؛ تنظیم میڈیا ورکشاپ میں طلبا کی طرف سے پیش کردہ ایک رپورٹ

مجلس اصلاح و تنظیم بھٹکل کی جانب سے منعقدہ پانچ روزہ میڈیا ورکشاپ میں جو طلبا شریک ہوئے تھے، اُس میں تین تین اور چار چار طلبا پر مشتمل الگ الگ ٹیموں کو شہر بھٹکل کے مختلف مسائل کا جائزہ لینے اور اپنی رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت دی گئی تھی، اس میں سے ایک  ٹیم جس میں  حبیب اللہ محتشم ...