سیمانچل میں بارش اورسیلاب کے قہرسے عوام بدحال، مولانااسرارالحق قاسمی نے متاثرہ علاقوں کا ہنگامی جائزہ لیا،ریاستی حکومت سے خصوصی امدادکی اپیل

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 13th August 2017, 10:49 AM | ملکی خبریں |

کشن گنج،12/اگست(ایس او نیوز/پریس ریلیز)سیمانچل کاکشن گنج علاقہ ایک بار پھر زبردست سیلاب کی زدمیں ہے۔لوگوں کو سخت جانی ومالی نقصان کا سامنا کرنا پڑرہاہے،اس صورتِ حال میں صوبائی ومرکزی حکومت کو فوری طورپر متاثرین کی امداد و ریلیف رسانی کے لئے سامنے آنا چاہئے۔علاقے کے ایم پی و معروف عالم دین مولانا اسرارالحق قاسمی نے متاثرہ علاقوں کا دورہ کرنے کے بعداپنے بیان میں یہ بات کہی۔قبل ازاں انھوں نے کشن گنج کے ڈی ایم سے میٹنگ کرکے سیلاب میں پھنسے ہوئے لوگوں کو نکالنے اور محفوظ مقامات تک پہنچانے کا انتظام کرنے کی ہدایت دی،اسی طرح سیلاب میں گھرے ہوئے لوگوں کوباہر نکالنے کے لئے کشتیوں کا نظم کیے جانے اور جو لوگ سیلاب میں پھنس کر جاں بحق ہوگئے ہیں ان کے لئے فوری معاوضے کا اعلان کیے جانے کی بھی ہدایت دی۔مولاناقاسمی نے کہاکہ سیمانچل کے علاقے میں یہ گزشتہ سالوں سے بھی بدترین قدرتی آفت ہے،علاقے کے عوام ایک طرف سیلاب میں پھنسے ہوئے ہیں جبکہ دوسری طرف بارش کی کثرت کی وجہ سے بھی ان کی زندگی دوبھر ہوگئی ہے،ایسے ناگفتہ بہ ماحول میں حکومت کوفوری طورپر توجہ دینا چاہیے اور سیمانچل کے لئے خصوصی امداد اور ریلیف جاری کیاجانا چاہئے۔واضح رہے کہ حال ہی میں نیپال کی جانب سے تیستا ندی میں زبردست مقدارمیں پانی چھوڑدیاگیاہے جس کی وجہ سے پوراسیمانچل سیلاب میں ڈوب چکاہے اور عوام سخت کشمکش کی حالت میں زندگی بسر کرنے پر مجبورہیں،اب تک نہ صرف لوگوں کا لاکھوں کامالی نقصان ہواہے بلکہ کئی اموات بھی ہوچکی ہیں۔کشن گنج کے ایم پی مولانااسرارالحق قاسمی نے سیلاب متاثرہ علاقوں کا ہنگامی جائزہ لے کر امداد وراحت رسانی کے فوری انتظام کیے جانے کی ہدایت دیتے ہوئے ریاستی و مرکزی حکومت سے اپیل کی ہے کہ اس خطرناک صورتِ حال پر قابوپانے کے لئے جلد ازجلد مؤثراقدامات کئے جائیں۔

ایک نظر اس پر بھی

بی جے پی کی نوٹ بندی اور جی ایس ٹی کا اثر گجرات انتخابات کے نتائج میں نظر آئے گا: اکھلیش یادو 

سماجوادی پارٹی کے سربراہ اکھلیش یادو نے کہا ہے کہ نوٹ بندی اور جی ایس ٹی کی وجہ سے تاجروں پر کافی برا اثر پڑا ہے۔ انہوں نے کہا کہ کسان مخالف اور تاجر مخالف پالیسیوں کی وجہ سے بی جے پی کا گراف نیچے آتا جا رہا ہے۔

گجرات میں سات انتخابات میں دو بار ووٹنگ کے فیصدی میں کمی، دونوں بار بی جے پی کو نقصان تو کانگریس کا فائدہ 

گجرات میں ہفتہ کو پہلے مرحلہ میں19ضلعوں میں کی89نشستوں پرتقریباً 68فیصدی ووٹنگ ہوئی اس بار 2012کے اسمبلی انتخابات سے تقریباً 3فیصدی ووٹنگ ہوئی۔ 2012 میں پہلے مرحلے میں19 میں سے15 اضلاع میں ووٹنگ ہوئی تھی۔

خواتین کمیشن نے زائرہ وسیم کے ساتھ ہوئی چھیڑ خانی کو بتایا انتہائی شرمناک فعل 

قومی خواتین کمیشن نے زائرہ وسیم کے ساتھ شرمناک حادثہ قرار دیا ہے ۔زائرہ وسیم نے سوشل میڈیا کے ذریعے وستارا ایئر لائنزکی فلائٹ سے دہلی سے ممبئی جانے والی پرواز میں جس طرح ہراساں کیے جانے کی بات کہی ہے وہ بھارتی تہذیب و ثقافت کے شرم کی بات ہے ۔