بھٹکل کے ہونّے گدّے میں سمندری کٹاؤ؛ عوام میں خوف وہراس

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 18th July 2018, 12:11 AM | ساحلی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

بھٹکل17؍جولائی (ایس او نیوز)بھٹکل اور اطراف میں گزشتہ ڈیڑھ مہینے سے برس رہی مسلسل بارش کی وجہ سے سمندری لہروں کے اچھال میں بہت زیادہ تیزی آگئی ہے اورخاص طور پر ہیبلے گرام کے ہونّے گدّے علاقے میں سمندری کٹاؤ بڑھ رہا ہے۔ اس کی وجہ سے ساحلی کنارے پر رہنے والے لوگ بہت ہی زیادہ خوف زدہ اور پریشان ہوگئے ہیں۔

اس علاقے میں ہرسال برسات کے موسم میں سمندری کٹاؤ کی صورت میں اس طرح کا مسئلہ کھڑاہوجاتا ہے۔مگر مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ اس بار اس کی شدت کچھ زیادہ ہی ہوگئی ہے۔ گزشتہ سال سرکاری محکمہ کی جانب سے لاکھوں روپے خرچ  کرکے  سمندری لہروں کو روکنے کے لئے دیوار تعمیر کی گئی تھی، لیکن کچھ مقامات پر سمندر کی لہریں اس دیوار سے بھی اونچی اٹھ رہی ہیں اور رہائشی علاقے میں داخل ہورہی ہیں۔لہروں کا بہاؤ اور اس کی تیزی ایسی ہے کہ سمندری  کنارے کے پاس بنی سڑک بھی یہاں وہاں سے ٹوٹ پھوٹ کر رہ گئی ہے۔ اور ا س کا بیشتر حصہ سمندر میں بہہ گیا ہے۔

مقامی عوام کا کہنا ہے کہ سمندری لہروں کو روکنے والی دیوار کو مزید مضبوط اور مستحکم بنایاجائے اور یہاں کے باشندوں کے تحفظ کے لئے مناسب اقدامات کیے جائیں۔ بھٹکل تحصیلدار وی این باڈکر نے متاثرہ علاقے کا دورہ کرکے حالات کا جائزہ لینے کے بعد اخبار نویسوں کو بتایا کہ انہوں نے متعلقہ محکمہ اور افسران کو صورتحال کی پوری رپورٹ بھیج دی ہے۔آئندہ دنوں میں یہاں سمندری کٹاؤ روکنے کے لئے ضروری اقدامات کیے جائیں گے۔

ایک نظر اس پر بھی

سابق وزیراعظم دیوے گوڈا کا بھٹکل دورہ؛ کہا، جمہوریت خطرے میں ہے، اُسے بچانے کے لئے ہر شہری کو آگے آنا ہوگا

اس بار کے انتخابات سب سے زیادہ اہم اس لئے  ہے کہ مودی کے زیر اقتدار ملک کی جمہوریت کو خطرہ لاحق ہوگیا ہے۔جب سے مودی ملک کے وزیراعظم  بنے ہیں ملک کے سرکاری جمہوری اداروں میں  دخل اندازی سے  عدالت تک محفوظ نہیں ہے، ریزروبینک آف انڈیا  ہو ، انفورسمنٹ ڈائرکٹوریٹ ہو، سی بی آئی ...

ہلیال میں جے ڈی ایس لیڈر کے گھر پر انتخابی افسران کا چھاپہ ۔تلاشی کے بعد خالی ہاتھ واپس لوٹے افسران؛ کیا بی جےپی کو شکست کا خوف ہے؟

پارلیمانی انتخابات کے پیش نظر چیک پوسٹس پر تلاشی مہم کے علاوہ ہلیال شہر کے گوداموں، شراب کی دکانوں، موٹر گاڑیوں کی بھی مسلسل تلاشیاں لے رہے ہیں۔

لوک سبھا انتخابات؛ اُترکنڑا میں کیا آنند، آننت کو پچھاڑ پائیں گے ؟ نامدھاری، اقلیت، مراٹھا اور پچھڑی ذات کے ووٹ نہایت فیصلہ کن

اُترکنڑا میں لوک سبھا انتخابات  کے دن جیسے جیسے قریب آتے جارہے ہیں   نامدھاری، مراٹھا، پچھڑی ذات  اور اقلیت ایک دوسرے کے قریب تر آنے کے آثار نظر آرہے ہیں،  اگر ایسا ہوا تو  اس بار کے انتخابات  نہایت فیصلہ کن ثابت ہوسکتےہیں بشرطیکہ اقلیتی ووٹرس  پورے جوش و خروش کے ساتھ  ...

بھٹکل میں بی کے ہری پرساد کا بی جے پی اور مودی پر راست حملہ، کہا؛ پسماندہ طبقات کومزید کمزور کرنے کی سازش رچی جارہی ہے

بی جے پی بھلے ہی اپنے آپ کو اقلیت مخالف پارٹی کے طور پر پیش کرتی ہو، مگر  دیکھا جائے تو یہ پارٹی حقیقتاً پسماندہ طبقات، دلت اور ادیواسیوں کو  مزید  کمزور کرنے کی سازش میں لگی ہوئی ہے اور صرف ایک طبقہ کو برسراقتدار پر لانے میں کوشاں ہے۔ یہ بات  آل انڈیا کانگریس کمیٹی (اے آئی ...

ہلیال میں جے ڈی ایس لیڈر کے گھر پر انتخابی افسران کا چھاپہ ۔تلاشی کے بعد خالی ہاتھ واپس لوٹے افسران؛ کیا بی جےپی کو شکست کا خوف ہے؟

پارلیمانی انتخابات کے پیش نظر چیک پوسٹس پر تلاشی مہم کے علاوہ ہلیال شہر کے گوداموں، شراب کی دکانوں، موٹر گاڑیوں کی بھی مسلسل تلاشیاں لے رہے ہیں۔